وزیر اعظم نے 18,100 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت کے متعدد قومی شاہراہ پروجیکٹوں کا افتتاح اور سنگ بنیاد رکھا
دریائے گنگا پر چھ لین کے پل کا سنگ بنیاد رکھا، بہار میں 3 ریلوے پروجیکٹوں کا افتتاح کیا
بہار میں نمامی گنگے کے تحت تقریبا 2،190 کروڑ روپے کی لاگت سے تیار کردہ 12 پروجیکٹوں کا افتتاح کیا
پٹنہ میں یونٹی مال کا سنگ بنیاد رکھا
’’فخر بہار جناب کرپوری ٹھاکر کو بھارت رتن دینا پورے بہار کا اعزاز ہے‘‘
’’ہماری حکومت ملک کے ہر غریب، آدیواسی، دلت اور محروم شخص کی صلاحیتوں کو بڑھانے میں لگی ہوئی ہے‘‘
’’بہار کی ترقی، بہار میں امن، نظم و نسق کی حکمرانی، اور بہار میں بہنوں اور بیٹیوں کے حقوق دینا – یہ مودی کی گارنٹی ہے‘‘
وزیراعظم جناب نریندر مودی نے آج بہار کے اورنگ آباد میں 21,400 کروڑ روپئے کی لاگت سے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا۔ آج کے ترقیاتی پروجیکٹوں میں سڑک، ریلوے اور نمامی گنگے کے شعبے شامل ہیں۔ وزیر اعظم نے فوٹو گیلری کا واک تھرو بھی کیا۔

وزیراعظم جناب نریندر مودی نے آج بہار کے اورنگ آباد میں 21,400 کروڑ روپئے کی لاگت سے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا۔ آج کے ترقیاتی پروجیکٹوں میں سڑک، ریلوے اور نمامی گنگے کے شعبے شامل ہیں۔ وزیر اعظم نے فوٹو گیلری کا واک تھرو بھی کیا۔

مجمع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ اورنگ آباد کی سرزمین پر آج بہار کی ترقی کا ایک نیا باب لکھا جا رہا ہے جس نے بہار وبھوتی شری انوگرہ نارائن جیسی کئی مجاہدین آزادی اور عظیم شخصیات کو جنم دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ تقریبا 21500 کروڑ روپئے کے پروجیکٹوں کا افتتاح کیا جارہا ہے یا ان کا سنگ بنیاد رکھا جارہا ہے جن میں سڑک اور ریل کے شعبے شامل ہیں جو جدید بہار کی جھلک پیش کرتے ہیں۔ پٹنہ رنگ روڈ کے ٹامس-دربھنگہ فور لین کوریڈور، داناپور-بیہٹہ فور لین ایلیویٹیڈ روڈ اور شیرپور-دیگھوارا فیز کا سنگ بنیاد رکھنے کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ موجودہ حکومت کی پہچان ہے کہ وہ ان پروجیکٹوں کو بھی وقت پر مکمل کرے اور قوم کے نام وقف کرے۔ وزیر اعظم نے آرا بائی پاس ریل لائن اور نمامی گنگے پروگرام کے تحت بارہ پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھنے پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ مودی کی گارنٹی ہے۔ وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ بہار کے عوام، خاص طور پر اورنگ آباد کے شہری وارانسی کولکاتا ایکسپریس وے کا بے صبری سے انتظار کر رہے ہیں کیونکہ اس سے یوپی اور کولکاتا کے سفر کا وقت چند گھنٹوں تک کم ہوجائے گا۔ وزیر اعظم نے موجودہ حکومت کے کام کرنے کے انداز کو اجاگر کیا اور آج کے ترقیاتی پروجیکٹوں کے لیے بہار کے عوام کو مبارکباد دی۔

 

وزیراعظم نے جن نائک کرپوری ٹھاکر کو خراج عقیدت پیش کیا جنہیں حال ہی میں حکومت کے ذریعے بھارت رتن سے نوازا گیا ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ یہ ایوارڈ پورے بہار کا اعزاز ہے۔ انھوں نے ایودھیا دھام میں شری رام مندر میں پران پٹشٹھ کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ ماتا سیتا کی سرزمین پر یہ بہت خوشی کی بات ہے۔ انھوں نے بہار کے لوگوں کی طرف سے پران پرتیشٹھا میں بڑے جوش و خروش اور خوشی سے شرکت کا ذکر کیا۔

ریاست میں ڈبل انجن حکومت کی بحالی کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ آج بہار جوش اور خود اعتمادی سے بھرا ہوا ہے۔ وزیر اعظم نے بہار میں خاندانی سیاست کے پسماندگی پر بھی تبصرہ کیا۔

صرف ایک دن میں ترقیاتی منصوبوں کے پیمانے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ ڈبل انجن والی حکومت کے تحت تبدیلی کی رفتار کا اشارہ ہے۔ انھوں نے کہا کہ سڑک پروجیکٹ پٹنہ، نالندہ، جہان آباد، گیا، ویشالی، سمستی پور اور دربھنگہ جیسے شہروں کی تصویر بدل دیں گے۔ اسی طرح بودھگیا، وشنو پد، راجگیر، نالندہ، ویشالی اور پاواپوری میں سیاحوں کی دلچسپی کے مقامات ہیں۔ آنے والے دربھنگہ ہوائی اڈے اور بیہٹہ ہوائی اڈوں کو بھی اس سڑک کے بنیادی ڈھانچے سے جوڑا جائے گا۔

 

بہار میں سیاحت کے شعبے کے امکانات میں تبدیلی پر روشنی ڈالتے ہوئے وزیر اعظم نے وندے بھارت اور امرت بھارت جیسی جدید ٹرینوں کو ہری جھنڈی دکھانے اور امرت بھارت اسٹیشنوں کی ترقی کا ذکر کیا۔ جناب مودی نے شہریوں میں بڑھتے ہوئے عدم تحفظ کے دنوں پر بھی نظر ڈالی جس کی وجہ سے نوجوانوں کی نقل مکانی ہو رہی ہے اور آج کے دور کو اجاگر کیا جہاں نوجوانوں کو ہنر مندی کی ترقی کے پروگراموں کے تحت تربیت دی جا رہی ہے۔ وزیر اعظم مودی نے بہار سے دستکاری کو فروغ دینے کے لیے تقریبا 200 کروڑ روپے کی لاگت سے ایکتا مال کا سنگ بنیاد رکھنے کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ یہ ریاست کے لیے ایک نئی سمت اور مثبت سوچ کی نشاندہی کرتا ہے۔ ہم بہار کو پرانے زمانے میں واپس نہیں جانے دیں گے۔ یہ میری گارنٹی ہے ۔

وزیر اعظم نے غریبوں، دلتوں، پسماندہ طبقات، آدیواسیوں اور محروموں پر حکومت کی توجہ کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بہار تب ترقی کرے گا جب بہار کے غریب ترقی کریں گے۔ انھوں نے بتایا کہ تقریبا 9 کروڑ مستحقین کو پی ایم غریب کلیان انا یوجنا کا فائدہ مل رہا ہے۔ اجولا گیس کنکشن سے بہار میں ایک کروڑ خواتین کو فائدہ ہوا ہے۔ پی ایم کسان سمان ندھی سے 90 لاکھ کسان مستفید ہوئے ہیں جن کے کھاتوں میں 22,000 کروڑ روپے منتقل کیے گئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ 5 سال پہلے تک صرف 2 فیصد گھروں کو پائپ سے پانی مل رہا تھا جبکہ 90 فیصد سے زیادہ گھروں میں اب نل سے پانی آرہا ہے۔ بہار میں 80 لاکھ آیوشمان کارڈ ہولڈر ہیں اور بہار اور جھارکھنڈ کے 4 اضلاع میں ایک لاکھ ہیکٹر کو آبپاشی کی سہولت فراہم کرتے ہوئے نارتھ کوئل ریزروائر یوجنا جلد ہی مکمل ہوجائے گی۔

 

وزیر اعظم نے ان ضمانتوں کو پورا کرنے اور حکومت کی تیسری مدت میں واسکٹ بہار بنانے کے لیے کام کرنے کا اعتماد ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ بہار کی ترقی ، امن ، نظم و نسق کی حکمرانی اور بہار میں بہنوں اور بیٹیوں کے حقوق – یہ مودی کی گارنٹی ہے۔ وزیر اعظم کی درخواست پر بھیڑ نے آج کے ترقیاتی تہوار کا جشن منانے کے لیے اپنے موبائل کی فلیش لائٹ آن کردی۔

اس موقع پر بہار کے گورنر جناب راجندر وی آرلےکر اور بہار کے وزیر اعلی ٰ جناب نتیش کمار، بہار کے نائب وزرائے اعلیٰ جناب سمراٹ چودھری اور جناب وجے کمار سنہا کے علاوہ ممبران پارلیمنٹ، قانون ساز اسمبلیوں اور بہار حکومت کے وزراء بھی موجود تھے۔

پس منظر

وزیر اعظم نے 18,100 کروڑ روپئے سے زیادہ مالیت کے متعدد قومی شاہراہ پروجیکٹوں کا افتتاح اور سنگ بنیاد رکھا۔ جن پروجیکٹوں کا افتتاح کیا جائے گا ان میں این ایچ 227 کے پکے پشتے جے نگر-ناراہیہ سیکشن کے ساتھ 63.4 کلومیٹر طویل دو لین ؛ این ایچ 131 جی پر کنہولی سے رام نگر تک پٹنہ رنگ روڈ کا چھ لین کا سیکشن؛ کشن گنج شہر میں موجودہ فلائی اوور کے متوازی 3.2 کلومیٹر لمبا دوسرا فلائی اوور؛ 47 کلومیٹر طویل بختیار پور-راجولی کو چار لین بنانا؛ اور این ایچ -319 کے 55 کلومیٹر لمبے آرا - پریا سیکشن کو چار لین بنانا شامل ہیں۔

 

وزیر اعظم نے چھ قومی شاہراہ پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا جس میں آماس سے گاؤں شیورام پور تک 55 کلومیٹر طویل چار لین رسائی کنٹرول گرین فیلڈ قومی شاہراہ کی تعمیر بھی شامل ہے۔ شیورام پور سے رام نگر تک 54 کلومیٹر طویل گرین فیلڈ نیشنل ہائی وے۔ گاؤں کلیان پور سے گاؤں بل بھدرپور تک 47 کلومیٹر طویل چار لین کی رسائی کنٹرولڈ گرین فیلڈ نیشنل ہائی وے؛ بال بھدرپور سے بیلا نواڈا تک 42 کلومیٹر طویل چار لین طویل گرین فیلڈ نیشنل ہائی وے؛ دانا پور سے بہٹہ سیکشن تک 25 کلومیٹر طویل چار لین ایلیویٹیڈ کوریڈور۔ اور بیہٹہ - کوئلوار سیکشن کے موجودہ دو لین کو چار لین کیریج وے میں اپ گریڈ کرنا۔ ان سڑکوں کے منصوبوں سے رابطے بہتر ہوں گے، سفر کے وقت میں کمی آئے گی، سیاحت کو فروغ ملے گا اور خطے کی سماجی و اقتصادی ترقی میں مدد ملے گی۔

وزیر اعظم نے دریائے گنگا پر چھ لین کے پل کا سنگ بنیاد بھی رکھا جسے پٹنہ رنگ روڈ کے ایک حصے کے طور پر تیار کیا جائے گا۔ یہ پل ملک کے سب سے لمبے دریائی پلوں میں سے ایک ہوگا۔ یہ پروجیکٹ پٹنہ شہر کے ذریعے ٹریفک کو کم کرے گا اور بہار کے شمالی اور جنوبی حصوں کے درمیان تیز اور بہتر رابطہ فراہم کرے گا ، جس سے پورے خطے کی سماجی و اقتصادی ترقی کو فروغ ملے گا۔

 

وزیر اعظم نے بہار میں نمامی گنگے کے تحت 12 پروجیکٹوں کا افتتاح کیا جو تقریبا 2190 کروڑ روپے کی لاگت سے تیار کیے گئے ہیں۔ ان منصوبوں میں سید پور اور پہاڑی میں سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ شامل ہیں۔ سید پور، بیور، پہاڑی زون آئی وی اے کے لیے سیوریج نیٹ ورک۔ کرمالی چک میں سیور نیٹ ورک کے ساتھ سیوریج سسٹم؛ پہاڑی زون 5 میں سیوریج اسکیم۔ بار، چھپرا، نوگچھیا، سلطان گنج اور سون پور شہر میں روک تھام، ڈائورژن اور سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ۔ یہ پروجیکٹ گندے پانی کو گنگا ندی میں چھوڑنے سے پہلے کئی مقامات پر صاف کرنے کو یقینی بناتے ہیں، جس سے ندی کی صفائی ہوتی ہے اور علاقے کے لوگوں کو فائدہ ہوتا ہے۔

وزیراعظم نے پٹنہ میں یونٹی مال کا سنگ بنیاد رکھا۔ 200 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت سے تعمیر ہونے والے اس پروجیکٹ کا تصور ایک جدید ترین سہولت کے طور پر کیا گیا ہے، جس میں بین الاقوامی ڈیزائن کے طریقوں، ٹکنالوجی، آرام اور جمالیات کو شامل کیا گیا ہے۔ یہ مال ریاستوں ، مرکز کے زیر انتظام علاقوں اور اضلاع کو مخصوص جگہیں فراہم کرے گا ، جس سے وہ اپنی منفرد مصنوعات اور دستکاری کی نمائش کرسکیں گے۔ ریاستوں / مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے لیے 36 بڑے اسٹال اور بہار کے ہر ضلع کے لیے 38 چھوٹے اسٹال ہوں گے۔ یونٹی مال بہار اور بھارت کی مقامی مینوفیکچرنگ اور ون ڈسٹرکٹ ون پروڈکٹس، جغرافیائی انڈیکیٹرز (جی آئی) مصنوعات اور دستکاری کی مصنوعات کو فروغ دے گا۔ اس پروجیکٹ سے روزگار کے مواقع پیدا کرنے، بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور ریاست سے برآمدات کے لحاظ سے اہم سماجی و اقتصادی فائدہ ہوگا۔

وزیر اعظم نے بہار میں تین ریلوے پروجیکٹوں کو بھی قوم کے نام وقف کیا جس میں پاٹلی پترا سے پہلزا ریلوے لائن کو دوہرا کرنے کا منصوبہ ؛ بندھوا – پیمار کے درمیان 26 کلومیٹر لمبی نئی ریل لائن؛ اور گیا میں ایک میمو شیڈ بھی شامل ہیں۔ وزیر اعظم نے آرا بائی پاس ریل لائن کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔ ریل منصوبوں سے ریل رابطے میں بہتری آئے گی، لائن کی گنجائش اور ٹرینوں کی نقل و حرکت میں بہتری آئے گی اور خطے میں صنعتی ترقی کو فروغ ملے گا۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
India digital public infrastructure is charting the journey towards becoming $1-tn digital economy by 2027-28

Media Coverage

India digital public infrastructure is charting the journey towards becoming $1-tn digital economy by 2027-28
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
سوشل میڈیا کارنر،20 جولائی 2024
July 20, 2024

India Appreciates the Nation’s Remarkable Rise as Global Economic Powerhouse