Share
 
Comments
ہماچل بھارت کی پہلی ریاست بن گئی ہے جس نے اپنی پوری اہل آبادی کو کورونا ویکسین کی کم از کم ایک خوراک دے دی ہے
ہماچل اس بات کا ثبوت ہے کہ کس طرح ملک کا دیہی معاشرہ دنیا کی سب سے بڑی اور تیز ترین ٹیکہ کاری مہم کو بااختیار بنا رہا ہے: وزیر اعظم
ڈرون کے نئے قوانین صحت اور زراعت جیسے کئی شعبوں میں مدد کریں گے: وزیر اعظم
خواتین سیلف ہیلپ گروپس کے لیے آنے والا خصوصی آن لائن پلیٹ فارم ہماری بہنوں کو ملک اور بیرون ملک اپنی مصنوعات فروخت کرنے میں مدد دے گا: وزیراعظم
ہماچل کی مٹی کو کیمیکل سے پاک بنائیں ، ہماچل کے کسانوں اور باغبانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ 'امرت کال' کے دوران ہماچل کو نامیاتی کاشتکاری کی طرف واپس لے جائیں

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ہماچل پردیش میں صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکنوں اور کووڈ ویکسینیشن پروگرام کے مستفیدین کے ساتھ بات چیت کی۔ اس موقع پرمعززگورنر، معزز وزیراعلی ، مرکزی وزیرجناب جے پی نڈا، مرکزی وزیر جناب انوراگ سنگھ ٹھاکر، اراکین پارلیمان ، اراکین اسمبلی، پنچایتوں کے رہنماؤں کے ساتھ ساتھ دیگرشخصیات بھی اس موقع پر موجود تھیں۔

بات چیت کے دوران، سول اسپتال کے ڈاکٹرراہل ، ڈودرہ کوار شملہ سے بات کرتے ہوئے ، وزیر اعظم نے ویکسین کے ضیاع کو کم کرنے پر ٹیم کی تعریف کی اور مشکل ترین علاقے میں خدمات انجام دینے کے بارے میں ان کے تجربے پر تبادلہ خیال کیا۔حکومت کی  مف ٹیکہ کاری مہم  سے فائدہ اٹھانے والے(ٹیکہ لگانے والے)شری دیال سنگھ کے تھوناگ، منڈی سے بات کرتے ہوئے، وزیر اعظم نے ویکسینیشن کی سہولیات اور ویکسینیشن سے متعلق افواہوں سے کیسے نمٹا جائے اس کے بارے میں دریافت کی۔ ٹیکہ لگانے والے اور خود کو کووڈ سے بچانے والے شخص نے وزیراعظم کی قیادت پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ وزیر اعظم نے ہماچل ٹیم کی کوششوں کی تعریف کی۔ کلو سے تعلق رکھنے والی آشا ورکر نرما دیوی کے ساتھ ، وزیر اعظم نے ویکسینیشن مہم کے بارے میں ان کے تجربے کے بارے میں دریافت کیا۔ وزیر اعظم نے ویکسینیشن مہم میں مقامی روایات کے استعمال کے بارے میں بھی بات کی۔ انہوں نے ٹیم کے تیار کردہ تبادلہ خیال کے نئے طریقوں اور بہتر تال میل اور تعاون کی ستائش کی۔ انہوں نے دریافت کیا کہ ٹیم نے ویکسین کے انتظامات کے لیے طویل فاصلہ کیسے طے کیا؟

محترمہ نرملا دیوی ، ہمیر پور کے ساتھ ، وزیر اعظم نے بزرگ شہریوں کے تجربات پر تبادلہ خیال کیا جنہوں نے ویکسین کی مناسب فراہمی پر وزیر اعظم کا شکریہ ادا کیا اور مہم کی جم کر ستائش کی۔ وزیر اعظم نے ہماچل میں چلنے والی صحت سکیموں کی تعریف کی۔ اونا کی کرمو دیوی جی کو 22500 افراد کو ویکسین لگانے کا اعزاز حاصل ہے۔ وزیر اعظم نے ان کے اس جذبے  اور شاندار کام کی تعریف کی کیونکہ وہ پیروں میں فریکچر کے باوجود مسلسل کام کرتی رہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ کرمو دیوی جیسے لوگوں کی کوششوں کی وجہ سے دنیا کا سب سے بڑا ویکسینیشن پروگرام جاری ہے۔ جناب نوانگ اپشک ، لاہول اور اسپتی کے ساتھ بات چیت کے دوران وزیر اعظم نے دریافت کیا کہ وہ لوگوں کو ویکسین لینے کے لیے قائل کرنے کے لیے ایک روحانی پیشوا کی حیثیت سے کس طرح اپنی پوزیشن(اپنے رتبے) کا استعمال کرتے ہیں۔ جناب مودی نے علاقے میں زندگی پر اٹل سرنگ کے اثرات کے بارے میں بھی بات کی۔ جناب  اپشک نے سفر کے وقت کو کم کرنے اور بہتر رابطے کے بارے میں وزیراعظم کو آگاہ کیا۔ وزیر اعظم نے بدھ مت کے قائدین کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے لاہول اسپتی کو ویکسینیشن مہم میں سب سے آگے لانے میں کلیدی کردار ادا کی۔ بات چیت کے دوران وزیر اعظم نے بہت ہی ذاتی اور غیر رسمی نوعیت کی باتیں بھی کیں۔

وزیر اعظم نے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماچل پردیش 100 سالوں میں سب سے بڑی وبا کے خلاف جنگ میں چیمپئن بن کر ابھرا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہماچل ہندوستان کی پہلی ریاست بن گئی ہے جس نے اپنی پوری اہل آبادی کو کورونا ویکسین کی کم از کم ایک خوراک دے دی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اس کامیابی نے آتم وشواس (خود اعتمادی) اور آتمنربھرتا(خود کفالت) کی اہمیت کو واضح کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت میں ٹیکہ کاری مہم کی کامیابی اس کے شہریوں کے جذبے اور محنت کا نتیجہ ہے۔ بھارت 1.25 کروڑ کی ریکارڈ رفتار سے ویکسینیشن کر رہا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ بھارت میں ایک دن میں ویکسینیشن کی تعداد کئی ممالک کی آبادی سے زیادہ ہے۔ وزیر اعظم نے ویکسینیشن مہم میں ڈاکٹروں ، آشا ورکرز ، آنگن واڑی ورکرز ، طبی عملے ، اساتذہ اور خواتین کی شراکت کی تعریف کی۔ وزیراعظم نے یاد دلایا کہ انہوں نے یوم آزادی کے موقع پر 'سب کا پریاس' کی بات کی ، انہوں نے کہا کہ یہ کامیابی اسی کا مظہر اور بین ثبوت ہے۔ انہوں نے ہماچل کو دیوتاؤں کی سرزمین بھی قرار ددیا  اور اس سلسلے میں تبادلہ خیال کے نئے طریقوں اور بہتر تال میل اور تعاون کے منفرد ماڈل کی تعریف کی۔

وزیر اعظم نے خوشی کا اظہار کیا کہ لاہول سپتی جیسے دور دراز ضلع میں بھی ہماچل 100 فیصد پہلی خوراک دینے میں سرفہرست رہا ہے۔ یہ وہ علاقہ ہے جو اٹل سرنگ کی تعمیر سے قبل مہینوں تک ملک کے باقی حصوں سے کٹ جاتا تھا۔ انہوں نے ہماچل کے لوگوں کی تعریف کی کہ وہ کسی بھی افواہ یا غلط معلومات کو ویکسینیشن کی کوششوں میں رکاوٹ نہ بننے دیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہماچل اس بات کا ثبوت ہے کہ کس طرح ملک کا دیہی معاشرہ دنیا کی سب سے بڑی اور تیز ترین ویکسینیشن مہم کو بااختیار بنا رہا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ سیاحت کو مضبوط روابط کا براہ راست فائدہ بھی مل رہا ہے ، پھل اور سبزیاں پیدا کرنے والے کسان اور باغبان بھی اسے حاصل کر رہے ہیں۔ دیہات میں انٹرنیٹ کنیکٹی ویٹی کے استعمال سے ہماچل کے نوجوان اپنی ہنرمندی کے ذریعہ اپنی پیش بہا ثقافت اور سیاحت کے نئے امکانات کو ملک اور بیرون ملک تک لے جا سکتے ہیں۔

حال ہی میں عام لوگوں کے لیے جاری  کیے گئے ڈرونز کے قوانین کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ قوانین صحت اور زراعت جیسے کئی شعبوں میں مددگار ثابت ہوں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس سے نئے امکانات کے دروازے کھلیں گے۔ وزیراعظم نے اپنے یوم آزادی کے اعلانات کا حوالہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اب خواتین سیلف ہیلپ گروپس کے لیے ایک خصوصی آن لائن پلیٹ فارم بنانے جا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس میڈیم کے ذریعے ہماری بہنیں ملک اور دنیا میں اپنی مصنوعات فروخت کرسکیں گی۔ وہ سیب ، سنترے ، کینو ، مشروم ، ٹماٹر جیسی بہت سی مصنوعات کو ملک کے ہر کونے اورحصے تک پہنچا سکیں گی۔

آزادی کا امرت مہوتسو کے موقع پر ، وزیر اعظم نے ہماچل کے کسانوں اور باغبانوں پر زور دیا کہ وہ اگلے 25 سالوں میں ہماچل میں کاشتکاری کو نامیاتی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ آہستہ آہستہ ہمیں اپنی مٹی کو کیمیکل سے پاک کرنا ہوگا۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن
Why Amit Shah believes this is Amrit Kaal for co-ops

Media Coverage

Why Amit Shah believes this is Amrit Kaal for co-ops
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to visit Karnataka on 6th February
February 04, 2023
Share
 
Comments
PM to inaugurate India Energy Week 2023 in Bengaluru
Moving ahead on the ethanol blending roadmap, PM to launch E20 fuel
PM to flag off Green Mobility Rally to create public awareness for green fuels
PM to launch the uniforms under ‘Unbottled’ initiative of Indian Oil - each uniform to support recycling of around 28 used PET bottles
PM to dedicate the twin-cooktop model of the IndianOil’s Indoor Solar Cooking System - a revolutionary indoor solar cooking solution that works on both solar and auxiliary energy sources simultaneously
In yet another step towards Aatmanirbharta in defence sector, PM to dedicate to the nation the HAL Helicopter Factory in Tumakuru
PM to lay foundation stones of Tumakuru Industrial Township and of two Jal Jeevan Mission projects in Tumakuru

Prime Minister Shri Narendra Modi will visit Karnataka on 6th February, 2023. At around 11:30 AM, Prime Minister will inaugurate India Energy Week 2023 at Bengaluru. Thereafter, at around 3:30 PM, he will dedicate to the nation the HAL helicopter factory at Tumakuru and also lay the foundation stone of various development initiatives.

India Energy Week 2023

Prime Minister will inaugurate the India Energy Week (IEW) 2023 in Bengaluru. Being held from 6th to 8th February, IEW is aimed to showcase India's rising prowess as an energy transition powerhouse. The event will bring together leaders from the traditional and non-traditional energy industry, governments, and academia to discuss the challenges and opportunities that a responsible energy transition presents. It will see the presence of more than 30 Ministers from across the world. Over 30,000 delegates, 1,000 exhibitors and 500 speakers will gather to discuss the challenges and opportunities of India's energy future. During the programme, Prime Minister will participate in a roundtable interaction with global oil & gas CEOs. He will also launch multiple initiatives in the field of green energy.

The ethanol blending programme has been a key focus areas of the government to achieve Aatmanirbharta in the field of energy. Due to the sustained efforts of the government, ethanol production capacity has seen a six times increase since 2013-14. The achievements in the course of last eight years under under Ethanol Blending Programe & Biofuels Programe have not only augmented India’s energy security but have also resulted in a host of other benefits including reduction of 318 Lakh Metric Tonnes of CO2 emissions and foreign exchange savings of around Rs 54,000 crore. As a result, there has been payment of around Rs 81,800 crore towards ethanol supplies during 2014 to 2022 and transfer of more than Rs 49,000 crore to farmers.

In line with the ethanol blending roadmap, Prime Minister will launch E20 fuel at 84 retail outlets of Oil Marketing Companies in 11 States/UTs. E20 is a blend of 20% ethanol with petrol. The government aims to achieve a complete 20% blending of ethanol by 2025, and oil marketing companies are setting up 2G-3G ethanol plants that will facilitate the progress.

Prime Minister will also flag off the Green Mobility Rally. The rally will witness participation of vehicles running on green energy sources and will help create public awareness for the green fuels.

Prime Minister will launch the uniforms under ‘Unbottled’ initiative of Indian Oil. Guided by the vision of the Prime Minister to phase out single-use plastic, IndianOil has adopted uniforms for retail customer attendants and LPG delivery personnel made from recycled polyester (rPET) & cotton. Each set of uniform of IndianOil’s customer attendant shall support recycling of around 28 used PET bottles. IndianOil is taking this initiative further through ‘Unbottled’ - a brand for sustainable garments, launched for merchandise made from recycled polyester. Under this brand, IndianOil targets to meet the requirement of uniforms for the customer attendants of other Oil Marketing Companies, non-combat uniforms for Army, uniforms/ dresses for Institutions & sales to retail customers.

Prime Minister will also dedicate the twin-cooktop model of the IndianOil’s Indoor Solar Cooking System and flag-off its commercial roll-out. IndianOil had earlier developed an innovative and patented Indoor Solar Cooking System with single cooktop. On the basis of feedback received, twin-cooktop Indoor Solar Cooking system has been designed offering more flexibility and ease to the users. It is a revolutionary indoor solar cooking solution that works on both solar and auxiliary energy sources simultaneously, making it a reliable cooking solution for India.

PM in Tumakuru

In yet another step towards Aatmanirbharta in the defence sector, Prime Minister will dedicate to the nation the HAL Helicopter Factory in Tumakuru. Its foundation stone was also laid by the Prime Minister in 2016. It is a dedicated new greenfield helicopter factory which will enhance capacity and ecosystem to build helicopters.

This helicopter factory is Asia’s largest helicopter manufacturing facility and will initially produce the Light Utility Helicopters (LUH). LUH is an indigenously designed and developed 3-ton class, single engine multipurpose utility helicopter with unique feature of high manoeuvrability.

The factory will be expanded to manufacture other helicopters such as Light Combat Helicopter (LCH) and Indian Multirole Helicopter (IMRH) as well as for repair and overhaul of LCH, LUH, Civil ALH and IMRH in the future. The factory also has the potential for exporting the Civil LUHs in future.

This facility will enable India to meet its entire requirement of helicopters indigenously and will attain the distinction of enabling self-reliance in helicopter design, development and manufacture in India.

The factory will have a manufacturing set up of Industry 4.0 standards. Over the next 20 years, HAL is planning to produce more than 1000 helicopters in the class of 3-15 tonnes from Tumakuru. This will result in providing employment for around 6000 people in the region.

Prime Minister will lay the foundation stone of Tumakuru Industrial Township. Under the National Industrial Corridor Development Programme, development of the Industrial Township spread across 8484 acre in three phases in Tumakuru has been taken up as part of Chennai Bengaluru Industrial Corridor.

Prime Minister will lay the foundation stones of two Jal Jeevan Mission projects at Tiptur and Chikkanayakanahalli in Tumakuru. The Tiptur Multi-Village Drinking Water Supply Project will be built at a cost of over Rs 430 crores. The Multi-village water supply scheme to 147 habitations of Chikkanayakanahlli taluk will be built at a cost of around Rs 115 crores. The projects will facilitate provision of clean drinking water for the people of the region.