Share
 
Comments
India is ready to protect humanity with not one but two 'Made in India' coronavirus vaccines: PM Modi
When India took stand against terrorism, the world too got the courage to face this challenge: PM
Whenever anyone doubted Indians and India's unity, they were proven wrong: PM Modi
Today, the whole world trusts India: PM Modi

نئی دہلی،09 جنوری ، 2021 /وزیراعظم جناب نریندر مودی نے آج پرواسی بھارتیہ دوس کنوینشن کا افتتاح کیا ۔ اس موقعے پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم نے بیرون ملک بھارتیوں کو اپنے اپنے ملکوں میں کورونا عالمی وبا کے دوران ان کے رول کے لیے سراہا۔ انہوں نے کہا کہ سربراہان مملکت کے ساتھ اپنے مذاکرات کے دوران ہمیشہ بیرون ملک بھارتیوں پر فخر محسوس کیا ہے جب کبھی سربراہان نے اپنے ملکوں میں ڈاکٹر، نیم طبی عملے اور عام شہریوں کے طور پر ان کے تعاون کی تعریف کی۔ بیرون ملک بھارتیوں کا کووڈ کے خلاف بھارت کی لڑائی میں تعاون کا بھی ذکر کیا۔

وائی ٹو کے بحران سے نمٹنے میں بھارت کے رول کا ذکر کرتے ہوئے اور بھارتی دوا ساز صنعت کی طرف سے اسٹرائڈز بنائے جانے پر وزیراعظم نے کہا کہ بھارت کی صلاحیتوں سے ہمیشہ انسانیت کو فائدہ ہوا ہے۔ بھارت عالمی چیلنجوں سے نمٹنے میں ہمیشہ پیش پیش رہا ہے۔ نوآبادیاتی نظام اور دہشت گردی کے خلاف بھارت کی لڑائی سے دنیا کو ان لعنتوں کا مقابلہ کرنے میں استحکام ملا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ بھارت میں دنیا کے اعتماد اس کے کھانوں ، فیشن، کنبے کی اقدار اور تجارتی اقدار کا سہرا بیرون ملک بھارتیوں کو جاتا ہے۔ بیرون ملک بھارتیوں کے رویے سے بھارتی طور طریقوں ، اقدار اور اس سب کچھ سے جس کی وجہ سے تجسس ایک روایت میں بدل گیا ایک دلچسپی پیدا ہوئی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ جیساکہ بھارت آتم نربھر بھارت کے نشانے کی طرف بڑھ رہا ہے، بیرون ملک بھارتیوں کا بھی اس میں ایک بڑا رول ہے کیونکہ بھارتی میں تیار کی گئی چیزوں کا ان کی طرف سے استعمال کیے جانے سے بھارتی مصنوعات میں مزید اعتماد پیدا ہوگا۔

وزیر اعظم نے بیرون ملک بھارتی برادری سے وبا کے خلاف جنگ میں بھارت کی صلاحیت کے بارے میں بھی تفصیل سے بات کی۔ انہوں نے کہا ، "اس وائرس کے خلاف بین الاقوامی سطح پر جمہوری یکجہتی کی کوئی اور مثال نہیں ہے۔" پی پی ای کٹس ، ماسک ، وینٹی لیٹر یا ٹیسٹنگ کٹس جیسی اہم چیزوں کے لئے درآمدات پر انحصار کرنے کے باوجود ، بھارت نے ان میں سے بہت سے سامان کی برآمد شروع کردی کیونکہ اس نے خود کفیل ہونے کے لیے اپنے اندر صلاحیتیں پیدا ۔ آج بھارت ان ملکوں میں شامل ہے جن میں شرح اموات سب سے کم ہے اور صحت یابی کی شرح سب سے تیز ہے۔ دنیا کی فارمیسی کی حیثیت سے ، بھارت دنیا کی مدد کر رہا ہے اور پوری دنیا بھارت کی طرف دیکھ رہی ہے ، کیونکہ ملک دو دیسی ویکسین کے ذریعہ دنیا کی سب سے بڑی ویکسی نیشن مہم شروع کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

 

وزیر اعظم نے براہ راست فائدے کی منتقلی (ڈی بی ٹی) کے بینک کھاتوں میں سرکاری امداد کی براہ راست منتقلی کے ذریعے ملک سے بدعنوانی پر قابو پانے میں ہونے والی پیش رفت کا خاکہ پیش کیا، جس کے ذریعے وبائی دور کے دوران ضرورت مندوں کو ملی مدد کو متفقہ طور پر ساری دنیا نے سراہا۔ اسی طرح غریبوں کی ترقی اور قابل تجدید توانائی کے فوائد حاصل کرکے ملکی ساکھ میں اضافہ ہوا ہے۔

وزیراعظم نے اشارہ دیا کہ آج کا بھارت کا خلائی پروگرام ٹیکنیکل اسٹارٹ اپ اقتصادی نظام اور اس کی خاصیتیں بھارت کی خواندگی کا کرنوں پرانے پیغام کی شکل بدل رہی ہیں۔ انہوں نے بیرون ملک بھارتیوں کو دعوتی دی کہ تعلیم سے لے کر صنعت تک کے میدانوں میں حالیہ مہینوں میں جو اصلاحات کی گئی ہیں ان کا فائدہ اٹھائیں۔ انہوں نے پیداوار سے متعلق سبسڈیز کی اسکیم کا خاص طور پر ذکر کیا جس کا مقصد اس سلسلے میں مینوفیکچرنگ کو مقبول بنانا ہے۔

وزیراعظم نے بیرون ملک بھارتی برادری کو ان کی مادر وطن سے ہر طرح کی مدد کا یقین دلایا۔ انہوں نے وندے بھارت مشن کا ذکر کیا جس میں 45 لاکھ سے زیادہ بھارتی افراد کو کورونا کے دوران بچایا گیا تھا۔ انہوں نے بیرون ملک بھارتیوں کے روزگار کو بچانے کے لیے سفارتی کوششوں کے بارے میں بھی جانکاری دی۔ خلیج اور دیگر علاقوں سے واپس آنے کے لیے روزگار کی مدد کے مقصد سے ہنر مند کارکنوں کی آمد کے اعداد و شمار سے متعلق بھی اقدامات کیے گیے ہیں۔ انہوں نے بہتر کنکٹیویٹی اور پرواسی بھارتی افراد کے ساتھ مواصلات کے لیے عالمی پرواسی رشتہ پورٹل کے بارے میں بھی بات کی۔

وزیراعظم نے جمہوریہ سورینام کے صدر عزت مآب جناب چندریکا پرساد سنتوکھی کا بھی ان کی قیادت اور کلیدی خطبے پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے ان سے جلد ملاقات کی امید ظاہر کی۔ جناب مودی نے پرواسی بھارتی سمان اور کوئز مقابلے کے فاتحین کو بھی مبارکباد دی۔

وزیراعظم نے بیرون ملک بھارتی افراد سے کہا کہ وہ ملک کی آزادی کی 75ویں سالگرہ کی تقریبات میں شرکت کریں۔ انہوں نے بیرون ملک بھارتی برادری کے ارکان اور پوری دنیا میں بھارتی مشنوں میں لوگوں سے کہا کہ وہ ایک ایسا پورٹل ، ایک ڈیجیٹل پلیٹ فارم تیار کریں جس پر پرواسی بھارتیوں کے بھارت کی جدوجہد آزادی میں تعاون کو دستاویزی شکل میں پیش کیا جائے۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
How India is building ties with nations that share Buddhist heritage

Media Coverage

How India is building ties with nations that share Buddhist heritage
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM interacts with CEOs and Experts of Global Oil and Gas Sector
October 20, 2021
Share
 
Comments
Our goal is to make India Aatmanirbhar in the oil & gas sector: PM
PM invites CEOs to partner with India in exploration and development of the oil & gas sector in India
Industry leaders praise steps taken by the government towards improving energy access, energy affordability and energy security

Prime Minister Shri Narendra Modi interacted with the CEOs and Experts of the global oil and gas sector earlier today, via video conferencing.

Prime Minister discussed in detail the reforms undertaken in the oil and gas sector in the last seven years, including the ones in exploration and licensing policy, gas marketing, policies on coal bed methane, coal gasification, and the recent reform in Indian Gas Exchange, adding that such reforms will continue with the goal to make India ‘Aatmanirbhar in the oil & gas sector’.

Talking about the oil sector, he said that the focus has shifted from ‘revenue’ to ‘production’ maximization. He also spoke about the need to enhance  storage facilities for crude oil.  He further talked about the rapidly growing natural gas demand in the country. He talked about the current and potential gas infrastructure development including pipelines, city gas distribution and LNG regasification terminals.

Prime Minister recounted that since 2016, the suggestions provided in these meetings have been immensely useful in understanding the challenges faced by the oil and gas sector. He said that India is a land of openness, optimism and opportunities and is brimming with new ideas, perspectives and innovation. He invited the CEOs and experts to partner with India in exploration and development of the oil and gas sector in India. 

The interaction was attended by industry leaders from across the world, including Dr. Igor Sechin, Chairman & CEO, Rosneft; Mr. Amin Nasser, President & CEO, Saudi Aramco; Mr. Bernard Looney, CEO, British Petroleum; Dr. Daniel Yergin, Vice Chairman, IHS Markit; Mr. Olivier Le Peuch, CEO, Schlumberger Limited; Mr. Mukesh Ambani, Chairman & Managing Director, Reliance Industries Limited; Mr Anil Agarwal, Chairman, Vedanta Limited, among others.

They praised several recent achievements of the government towards improving energy access, energy affordability and energy security. They appreciated the leadership of the Prime Minister towards the transition to cleaner energy in India, through visionary and ambitious goals. They said that India is adapting fast to newer forms of clean energy technology, and can play a significant role in shaping global energy supply chains. They talked about ensuring sustainable and equitable energy transition, and also gave their inputs and suggestions about further promotion of clean growth and sustainability.