نئی دہلی میں انٹیگریٹڈ کمپلیکس ‘‘کرمایوگی بھون’’ کے فیز I کا سنگ بنیاد رکھا
‘‘روزگار میلہ قوم کی تعمیر میں ہماری یووا شکتی کے تعاون کو بڑھانے میں ایک اہم کردار ادا کرتا ہے’’
‘‘حکومت ہند میں بھرتی کا عمل اب مکمل طور پر شفاف ہو گیا ہے’’
‘‘ہماری کوشش نوجوانوں کو حکومت ہند سے جوڑنے اور انہیں قومی تعمیر میں شراکت دار بنانے کی رہی ہے’’
‘‘ہندوستانی ریلوے اس دہائی کے آخر تک مکمل طور پر تبدیل ہونے والا ہے’’
‘‘اچھی مربوط کاری کا ملک کی ترقی پر براہ راست اثر پڑتا ہے’’
‘‘نیم فوجی دستوں کے انتخاب کے عمل میں اصلاحات سے ہر علاقے کے نوجوانوں کو یکساں مواقع ملیں گے’’

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ نئے بھرتی ہونے والوں میں 1 لاکھ سے زیادہ تقرری نامے تقسیم کئے۔ انہوں نے نئی دہلی میں انٹیگریٹڈ کمپلیکس ‘‘کرمایوگی بھون’’ کے فیز I کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔ یہ کمپلیکس مشن کرمایوگی کے مختلف اداروں کے درمیان تعاون اور ہم آہنگی کو فروغ دے گا۔

اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ 1 لاکھ سے زائد بھرتی ہونے والوں کو تقرری نامے دیے جا رہے ہیں اور اس موقع پر انہیں اور ان کے اہل خانہ کو مبارکباد دی۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت ہند میں نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کی مہم زور و شور سے جاری ہے۔ اس بات کی نشاندہی کرتے ہوئے کہ ملازمت کے نوٹیفکیشن اور تقرری ناموں کی تقسیم کے درمیان طویل عرصہ گزرنے سے رشوت ستانی میں اضافہ ہوا، وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت نے بھرتی کے عمل کو مقررہ مدت کے تحت مکمل کرتے ہوئے پورے عمل کو شفاف بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ہر نوجوان کو اپنی صلاحیتوں کے اظہار کے یکساں مواقع میسر آئے ہیں۔ ‘‘آج، ہر نوجوان کا ماننا ہے کہ وہ محنت اور مہارت سے اپنی ملازمت کی پوزیشن کو مستحکم کر سکتے ہیں’’، پی ایم مودی نے کہا کہ حکومت نوجوانوں کو ملک کی ترقی میں شراکت دار بنانے کی کوشش کرتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ موجودہ حکومت نے گزشتہ 10 برسوں میں گزشتہ حکومتوں کے مقابلے میں 1.5 گنا زیادہ نوجوانوں کو نوکریاں دی ہیں۔ وزیر اعظم نے نئی دہلی میں انٹیگریٹڈ کمپلیکس ‘کرمایوگی بھون’ کے فیز I کا سنگ بنیاد رکھنے کےحوالے سےبھی گفتگو کی اور کہا کہ اس سے صلاحیت سازی کی طرف حکومت کی پیشرفت کو تقویت ملے گی۔

 

حکومت کی کوششوں سے نئے سیکٹرز کھولنے اور نوجوانوں کے لیے روزگار اور خود روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے بارے میں بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نے بجٹ میں چھتوں پر نصب کئے جانے والے 1 کروڑ سولر پلانٹس کے اعلان کا ذکر کیا جس سے خاندانوں کے بجلی کے بل میں کمی آئے گی اور وہ گرڈ کو بجلی فراہم کر کے پیسے کما سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس اسکیم سے لاکھوں نئی ملازمتیں بھی پیدا ہوں گی۔

اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ہندوستان تقریباً 1.25 لاکھ اسٹارٹ اپس کے ساتھ دنیا کا تیسرا سب سے بڑا اسٹارٹ اپ ماحولیاتی نظام وا لا ملک ہے، پی ایم مودی نے خوشی کا اظہار کیا کہ ان میں سے بہت سے اسٹارٹ اپ ٹائر 2 یا ٹائر 3 شہروں سے ہیں۔ چونکہ یہ اسٹارٹ اپ روزگار کے نئے مواقع پیدا کر رہے ہیں، تازہ ترین بجٹ میں اسٹارٹ اپس کے لیے ٹیکس چھوٹ کو جاری رکھنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ وزیر اعظم نے ایک لاکھ کروڑ کے فنڈ کا بھی ذکر کیا جس کا بجٹ میں تحقیق اور اختراع کو فروغ دینے کے لیے اعلان کیا گیا ہے۔

یہ بتاتے ہوئے کہ ریلوے میں بھی آج روزگار میلے کے ذریعے بھرتی ہو رہی ہے، وزیر اعظم نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ جب سفر کی بات آتی ہے تو ریلوے عام لوگوں کی پہلی پسند ہے۔ جناب مودی نے اس حقیقت کی طرف توجہ مبذول کروائی کہ ہندوستان میں ریلوے ایک بڑے پیمانے پر تبدیلی سے گزر رہا ہے اور یہ سیکٹر اگلی دہائی میں مکمل تبدیلی کا مشاہدہ کرے گا۔ انہوں نے یاد دلایا کہ 2014 سے پہلے ریلوے پر زیادہ توجہ نہیں دی گئی تھی اور انہوں نے ریل لائنوں کی برقی کاری اوران کی تعداد دوگنا کرنے کے ساتھ ساتھ نئی ٹرینوں کو جھنڈی دکھا کر روانہ کرنے اورمسافروں کے لیے سہولیات میں اضافہ کا ذکر کیا۔ لیکن 2014 کے بعد، وزیر اعظم نے بتایا کہ ریلوے کے جدید اور اپ گریڈیشن پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے پورے ٹرین کے سفر کے تجربے کو نئے سرے سے ایجاد کرنے کی مہم شروع کی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ وندے بھارت ایکسپریس جیسی 40,000 جدید بوگیاں تیار کی جائیں گی اور انہیں اس سال کے بجٹ کے تحت عام ٹرینوں میں شامل کیا جائے گا، اس طرح مسافروں کی سہولت اور راحت میں اضافہ ہوگا۔

.

کنیکٹیویٹی کے دور رس اثرات کو اجاگر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے نئی منڈیوں، سیاحت کی توسیع، نئے کاروبار اور بہتر رابطے کی وجہ سے لاکھوں ملازمتیں پیدا کرنے کا ذکر کیا۔ "ترقی کو تیز کرنے کے لیے بنیادی ڈھانچے میں سرمایہ کاری کو بڑھایا جا رہا ہے‘‘، وزیر اعظم نے کہا کہ حالیہ بجٹ میں بنیادی ڈھانچے میں سرمایہ کاری کے لیے 11 لاکھ کروڑ روپے رکھے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نئے ریل، سڑک، ہوائی اڈے، اور آبی گزرگاہوں کے منصوبے روزگار کے نئے مواقع پیدا کریں گے۔

اس بات کاذکر کرتے ہوئے کہ نئی تقرریوں میں سے بہت سی نیم فوجی دستوں میں کی جارہی ہیں، وزیر اعظم نے نیم فوجی دستوں کے انتخاب کے عمل میں اصلاحات پر توجہ دی اور بتایا کہ اس جنوری سے ہندی اور انگریزی کے علاوہ 13 ہندوستانی زبانوں میں امتحان لیا جائے گا۔ اس سے ہر ایک کو لاکھوں امیدواروں کو یکساں موقع ملے گا۔ انہوں نے سرحدی اور انتہا پسندی سے متاثرہ اضلاع کے کوٹہ میں اضافے کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔

وزیر اعظم نے وکست بھارت کے سفر میں سرکاری اہلکاروں کے کردار پر روشنی ڈالی۔ وزیر اعظم نے کہا، "1 لاکھ سے زیادہ کرمیوگی جو آج شامل ہو رہے ہیں، اس سفر کو ایک نئی توانائی اور رفتار دیں گے۔" انہوں نے ان سے کہا کہ وہ  اپناہر دن قوم کی تعمیر کے لیے وقف کریں۔ انہوں نے انہیں کرمیوگی بھارت پورٹل کے بارے میں بتایا جس میں 800 سے زیادہ کورسز اور 30 لاکھ صارفین ہیں اور ان سے کہا کہ وہ اس کا پورا فائدہ اٹھائیں۔

پس منظر

ملک بھر میں 47 مقامات پر روزگار میلہ کا انعقاد کیا گیا۔ بھرتیاں مرکزی حکومت کے محکموں اور ریاستی حکومتوں/مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں کی  جارہی ہیں جو اس پہل کی حمایت کر رہے ہیں۔نئے  بھرتی  ہونے والےافراد مختلف وزارتوں/محکموں یعنی ۔ محکمہ محصولات، وزارت داخلہ، محکمہ اعلیٰ تعلیم، محکمہ جوہری توانائی، وزارت دفاع، محکمہ مالیاتی خدمات، وزارت صحت اور خاندانی بہبود، قبائلی امور کی وزارت اور ریلوے کی وزارت میں مختلف عہدوں پرفائز ہوکر حکومت میں شامل ہوں گے۔

 

روزگار میلہ ملک میں روزگار کی فراہمی کو اولین ترجیح دینے کے وزیر اعظم کے عزم کی تکمیل کی طرف ایک قدم ہے۔ روزگار میلے سے روزگار کے مزید مواقع پیدا کرنے اور نوجوانوں کو بااختیار بنانے اور قومی ترقی میں براہ راست شرکت کے لیے فائدہ مند مواقع فراہم  کئے جانے کی امید ہے۔

نئے شامل کیے گئے افراد کوآئی گوٹ کرم یوگی پورٹل پر ایک آن لائن ماڈیول، کرم یوگی پرارمبھ کے ذریعے خود کو تربیت دینے کا موقع بھی ملے گا جہاں 880 سے زیادہ ای لرننگ کورسز ‘کہیں بھی کسی بھی ڈیوائس’ سیکھنے کے فارمیٹ کے لیے دستیاب کرائے گئے ہیں۔

 

Click here to read full text speech

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
Getting excellent feedback, clear people across India voting for NDA, says PM Modi

Media Coverage

Getting excellent feedback, clear people across India voting for NDA, says PM Modi
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
Overwhelming support for the NDA at PM Modi's rally in Nanded, Maharashtra
April 20, 2024
For decades, Congress stalled the development of Vidarbha & Marathwada: PM Modi
The land of Nanded reflects the purity of India's Sikh Gurus: PM Modi
The I.N.D.I alliance only believe in vote-bank politics: PM Modi

Ahead of the Lok Sabha elections, PM Modi addressed a public meeting in Nanded, Maharashtra amid overwhelming support by the people of BJP-NDA. He bowed down to prominent personalities including Guru Gobind Singh Ji, Nanaji Deshmukh, and Babasaheb Ambedkar.

Speaking on the initial phase of voting for the Lok Sabha elections, PM Modi said, “We have the popular support of the First-time voters with us.” He added, “I.N.D.I alliance have come together to save and protect their corruption and the people have thoroughly rejected them in the 1st phase of polling.” He added that the Congress Shehzada now has no choice but to contest from Wayanad, but like he left Amethi he may also leave Wayanad. He said that the country is voting for BJP-NDA for a ‘Viksit Bharat’.

Lamenting the Congress for stalling the development of the people, PM Modi said, “Congress is the wall between the development of Dalits, Poor & deprived.” He added that Congress even today opposes any developmental work that our government intends to carry out. He said that one can never expect them to resolve any issues and people cannot expect robust developmental prospects from them.

Highlighting the dire state and fragile conditions of Marathwada and Vidarbha, PM Modi said, “For decades, Congress stalled the development of Vidarbha & Marathwada.” He “It is the policies of the Congress that both Marathwada and Vidarbha are water-deficient, its farmers are poor and there are no prospects for industrial growth.” He said that our government has enabled 'Nal se Jal' to 80% of households in Nanded. He said that our constant endeavor has been to facilitate the empowerment of our farmers through record rise in MSPs, income support through PM-KISAN, and the promotion of ‘Sree Anna’.

Highlighting the infra impetus in Nanded in the last decade, PM Modi said, “To treat every wound given by Congress is Modi's guarantee.” He added “The ‘Shaktipeeth highway’ and ‘Latur Rail Coach Factory’ is our commitment to a robust infra.” He said that we aim to foster the development of the Marathwada region in the next 5 years.

Elaborating on the relationship between the Sikh Gurus and Nanded, PM Modi said, “The land of Nanded reflects the purity of India's Sikh Gurus.” He added that we are guided by the principles of Guru Gobind Singh Ji. “Over the years we have celebrated the 550th birth anniversary of Guru Nanak Dev Ji, the 400th birth anniversary of Guru Teg Bahadur Ji, and the 350th birth anniversary of Guru Gobind Singh Ji,” said PM Modi. He said that the Congress has always opposed the Sikh community and is taking revenge for 1984. He said that it is due to this that they oppose the CAA that aims to bring the Sikh brothers and sisters to India, granting them citizenship. He said that it was our government that brought back the Guru Granth Sahib from Afghanistan and facilitated the Kartarpur corridor. He said that various other decisions like the abrogation of Article 370 and the abolition of Triple Talaq have greatly benefitted our Muslim sisters and brothers.

Taking a dig at the I.N.D.I alliance, PM Modi said “The I.N.D.I alliance only believe in vote-bank politics.” He added that for this they have left no stone unturned to criticize and disrespect ‘Sanatana’. He said that it is the same I.N.D.I alliance that boycotted the Pran-Pratishtha of Shri Ram.

In conclusion, PM Modi said that we all must strive to ensure that India becomes a ‘Viksit Bharat’, and for that, it is the need of the hour to vote for the BJP-NDA. He thanked the people of Nanded for their overwhelming support and expressed confidence in a Modi 3.0.