Share
 
Comments
India and Bangladesh must progress together for the prosperity of the region: PM Modi
Under Bangabandhu Mujibur Rahman’s leadership, common people of Bangladesh across the social spectrum came together and became ‘Muktibahini’: PM Modi
I must have been 20-22 years old when my colleagues and I did Satyagraha for Bangladesh’s freedom: PM Modi

نئی دلّی ، 26 مارچ / وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے بنگلہ دیش کے اپنے دو روزہ دورے کے موقع پر معزز مہمان کے طور پر بنگلہ دیش کے صدر ہز ایکسی لینسی جناب محمد عبد الحامد ، بنگلہ دیش کی وزیر اعظم ہر ایکسی لینسی شیخ حسینہ ، شیخ مجیب الرحمٰن کی چھوٹی بیٹی شیخ ریحانہ ، مجیب برس کی قومی تقریبات کمیٹی کے چیف کوآرڈینیٹر ڈاکٹر کمال عبد الناصر چودھری اور دیگر معززین کے ساتھ بنگلہ دیش کی آزادی کی گولڈن جوبلی تقریبات میں شرکت کی ۔ یہ تقریب تاج گاؤں کے نیشنل پریڈ اسکوائر میں منعقد ہوئی ۔ اس میں بنگلہ دیش کے بابائے قوم بنگ بندھو شیخ مجیب الرحمٰن کی یومِ پیدائش کی صد سالہ تقریب بھی منعقد ہوئی ۔

 

تقریب کا آغاز مقدس کتابوں کے اقتباسات پڑھے جانے سے ہوا ، جن میں قرآن کریم ، بھگود گیتا ، تری پیٹک اور انجیرِ مقدس شامل تھیں۔ اس موقع پر ایک ویڈیو دکھایا گیا ، جس کا عنوان تھا ، ‘‘ دا ایٹرنل مجیب ’’ ۔ اس کے بعد ، بنگلہ دیش کی آزادی کی گولڈن جوبلی کی یاد میں ایک لوگو کی نقاب کشائی کی گئی ہے ۔ اِس خاص موقع پر ایک مخصوص گیت بھی پیش کیا گیا ۔ ‘‘ دا ایٹرنل مجیب ’’ کے موضوع پر ایک اینیمیشن ویڈیو بھی دکھایا گیا ۔ بنگلہ دیش کی مسلح افواج کی طرف سے ایک خصوصی پروگرام پیش کیا گیا ، جس میں بنگلہ دیش کی قومی تعمیر میں مسلح افواج کے رول کو اجاگر کیا گیا ۔

 

ڈاکٹر کمال عبد الناصر چودھری نے استقبالیہ خطبہ پیش کیا ۔ انہوں نے وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی موجودگی کا اعتراف کیا اور بھارتی مسلح فوجوں کے رول کا ذکر کیا ، جنہوں نے 1971 ء کی بنگلہ دیش کی آزادی کی لڑائی میں براہ راست حصہ لیا تھا ۔ مختلف سربراہانِ مملکت و حکومت نیز سرکردہ شخصیات کے پیغامات پڑھ کر سنائے گئے ۔

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے 2020 ء کا گاندھی امن انعام ، جو شیخ مجیب الرحمٰن کو بعد از مرگ دیا گیا ہے ، اُن کی چھوٹی بیٹی شیخ ریحانہ کو دیا ، جن کے ساتھ وزیر اعظم شیخ حسینہ بھی تھیں ۔ یہ ایوارڈ شیخ مجیب الرحمٰن کے ، اُس سرکردہ رول کے اعتراف میں دیا گیا ہے ، جو انہوں نے عدم تشدد اور دیگر گاندھیائی طریقوں سے سماجی ، اقتصادی اور سیاسی تبدیلی میں ادا کیا ہے ۔

  وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے اپنی تقریر میں تمام معزز شخصیات کا شکریہ ادا کیا ۔ اس موقع کی اہمیت کو اجاگر کیا اور دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات کے مختلف پہلوؤں کا ذکر کیا ۔ جناب نریندر مودی کی تقریر کے بعد شیخ حسینہ نے وزیر اعظم جناب نریندر مودی کو ‘ ایٹرنل مجیب مومینٹو ’ پیش کیا ۔.

          بنگلہ دیش کے صدر جناب محمد عبد الحامد نے اپنی تقریر میں وزیر اعظم اور بھارت کے عوام کا شکریہ  ادا کیا  اور بھارت  نے 1971 ء کی جنگ میں  ، جو رول ادا کیا  تھا اور کوششیں کی تھیں ، اُن کی تعریف کی ۔

 

وزیر اعظم شیخ حسینہ نے اپنی تقریر میں ، اِس تقریب میں کووڈ – 19 وبائی بیماری کے باوجود ذاتی طور پر شرکت کرنے پر وزیر اعظم جناب نریندر مودی کا تہہ دِل سے شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے بھارت سرکار کی ، اُس حمایت کی تعریف کی ، جو اُس نے ہر وقت بنگلہ دیش کو فراہم کی ہے۔

پروگرام کی اصل تقریب کے بعد ایک ثقافتی پروگرام منعقد کیا گیا ۔ ہندوستانی کلاسیکی موسیقی کے سرکردہ ماہر پنڈت اجے چکرورتی نے مہمانوں کو ایک خاص راگ کے ذریعے مسحور کر دیا ۔ انہوں نے یہ راگ بنگ بندھو کو معنون کیا ۔ اے آر رحمٰن کے نغموں نے لوگوں کے دِل جیت لئے ۔ کلچرل پروگرام کا اختتام موسیقی ، رقص اور تھیٹر کےپیشکش سے ہوا ۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Modi Govt's #7YearsOfSeva
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
India's FY22 GDP expected to grow by 8.7%: MOFSL

Media Coverage

India's FY22 GDP expected to grow by 8.7%: MOFSL
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM congratulates His Excellency Ebrahim Raisi on his election as President of Iran
June 20, 2021
Share
 
Comments

The Prime Minister, Shri Narendra Modi has congratulated His Excellency Ebrahim Raisi on his election as President of the Islamic Republic of Iran.

In a tweet, the Prime Minister said, "Congratulations to His Excellency Ebrahim Raisi on his election as President of the Islamic Republic of Iran. I look forward to working with him to further strengthen the warm ties between India and Iran."