Share
 
Comments
بھارت روس کے ساتھ اپنی شراکت داری کو اعلیٰ ترین ترجیح دیتا ہے: وزیر اعظم مودی صدر پوتن کے ساتھ مشترکہ پریس ملاقات میں
بھارت اور روس نے دہشت گردی کی لعنت اور موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لئے تعاون کو مستحکم بنانے پر اتفاق کیا۔
آنے والے وقت میں بھارت اور روس تجارت اور سرمایہ کاری کے روابط کو مضبوط بنائیں گے اور سمندر سے خلاء تک تعاون کو وسعت دیں گے: وزیر اعظم مودی

عالیجناب

روسی وفاق کے صدر اور میرے قریبی دوست ولادیمیر ولادیمیرووچ،

دونوں ممالک کے معزز نمائندگان نمسکار،

دوبری دین

انیسویں سالانہ سربراہ کانفرنس کے لئے بھارت میں صدر پتن اور ان کے وفد کا خیرمقد کرتے ہوئے مجھے بڑے مسرت ہورہی ہے۔

ہم ایک ایسے ملک کے صدر کی حیثیت سے آپ کا خیر مقدم کررہے ہیں جس کے ساتھ ہمارے بے مثال تعلقات ہیں۔ ان تعلقات کے لئے آپ نے اپنا بیش بہا تعاون دیا ہے۔

صدر پتن کے ذریعہ سوچی میں منعقدہ غیر رسمی ملاقات کی یادیں میرے ذہن یں تازہ ہیں۔ اس خاص ملاقات سے ہم دونوں کو کھل کر وسیع تبادلہ خیال کرنے کا موقع حاصل ہوا تھا۔

جناب صدر ،

روس کے ساتھ اپنے تعلقات کو بھارت اولین ترجیح دیتا ہے۔ تیزی سے بدلتی ہوئی اس دنیا میں ہمارے تعلقات اور زیادہ افادیت کے حامل ہوگئے ہیں۔ 19 سربراہ کانفرنسوں کے لگاتارانعقاد کے سلسلے سے ہمارے خصوصی اور انفرادیت پر مبنی کلیدی شراکت داری کو لگاتار نئی توانائی اور سمت حاصل ہوئی ہے۔ عالمی معاملوں پر ہمارے تعاون کو نئے معنی اور مقاصد بھی حاصل ہوئے ہیں۔ ہمارے تعاون کو آپ کے سفر سے کلیدی سمت حاصل ہوئی ہے۔ آج ہم نے ایسے اہم فیصلے لئے ہیں جوعرصہ دراز میں ہمارے تعلقات کو اور زیادہ طاقت ور بنائیں گے۔

انسانی وسائل ترقیات سے لیکر قدرت اور توانائی وسائل تک، تجارت سے لیکر سرمایہ کاری تک ، نیوکلیائی توانائی کے پرامن تعاون سے لیکر سمشی توانائی تک ، ٹکنالوجی سے لیکر ٹائیگر کنزوریشن تک، آرکٹک سے لیکر مشرق بعید تک اور سمندر سے لیکر خلا تک بھارت اور روس کے تعلقات کا اور بھی وسیع تر فروغ ہوگا۔ یہ توسیع ہمارے تعاون کو ماضی کے کچھ محدود دائروں کے پار لے جائے گی۔ ساتھ ہی ہمارے تعلقات کی اہم بنیاد یں اور مضبوط ہوں گی۔

بھارت کی ترقی کے سفر میں روس ہمیشہ سے ہمارے ساتھ رہا ہے۔ ہمارا خلا میں اگلا ہدف بھارت کے گگن یان میں بھارتی خلاباز کو بھیجنا ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ آپ نے اس مشن میں روس کے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ نوجوانوں میں ہمارے ملک کے مستقبل کو یکسر بدل دینے کی صلاحیت ہے۔ مجھے اس بات کی خوشی ہے کہ بھارت اور روس کے باصلاحیت بچے مشترکہ طور سے اپنے اختراعی نظریات کا مظاہرہ آج دوپہر بعد کریں گے۔ یہ نظریات انہوں نے مل جل کر وضع کئے ہیں۔ ہم بھارت کے فلیگ شپ پروگراموں اور کاروبار کے وسیع مواقع میں روس کی شراکت داری کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ مجھے اس بات کی بھی خوشی ہے کہ اب سے کچھ وقت بعد ہم بھارت۔ روس کاروباری کانفرنس میں شریک ہوں گے۔ اس میں دونوں ممالک کے قریب 200 سرکردہ اقتصادی صنعت کار حصہ لے رہے ہیں۔ بھارت اور روس باہمی مفاد کے تمام بین الاقوامی معاملوں میں قریبی تعاون کرتے رہے ہیں۔ صدر پتن اور میں نے ان پر بھی تفصیل سے گفت و شنید کی ہے۔ بھارت اور روس تیزی سے بدلتی ہوئی دنیا میں ملٹی پولیریٹی(کثیر رخی) اور ملٹی لیٹرزم (کثیر سطحی نظام)کو مستحکم کرنے پر متفق ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جد و جہد، افغانستان اور بھارت۔ بحرالکاہل میں پیش آنے والے واقعات کا سلسلہ، موسمیاتی تبدیلی، ایس سی او، برکس جیسے علاقائی اداروں اور تنظیموں اور جی ۔20 اور آسیان جیسے کثیر سطحی اداروں اور تنظیموں میں تعاون کرنے میں ہمارے دونوں ممالک کے مشترکہ مفادات مضمر ہیں۔ ہم بین الاقوامی اداروں میں اپنے مفید تعاون اور باہمی تال میل کو جاری رکھنے پرمتفق ہوئے ہیں۔ میں صدر پتن کے ذریعہ روس کے مشرق بعید کی ترقی کے لئے اٹھائے گئے اقدامات سے کافی متاثر ہوا ہوں۔ بھارت اس شعبے میں تعاون کے لئے مستعد ہے۔ آج لئے گئے فیصلوں سے ہمارے تعاون میں اضافہ ہوگا اور چنوتیوں سے بھری دنیا میں امن اور استحکام کی بحالی میں مدد ملے گی۔

بھائیو، بہنو!

بھارت اور روس کے مابین تعلقات کی طاقت کا مخرج عوام الناس کے مابین ایک دوسرے کے تئیں خیر سگالی اور دوستی میں مضمر ہے۔ ہم نے آج ایسی کئی کوششوں پر غور کیا ہے جن سے عوام سے عوام کے مابین تعلقات بہتر ہوں اور دونوں ممالک کے عوام کی خصوصاً نوجوانوں کی ایک دوسرے کے بارے میں جانکاری اور باہمی تفہیم میں اضافہ ہو۔ اس سے بھارت۔ روس کے تعلقات کے مستقبل کی ایک نئی بنیاد کی تعمیر ہوگی۔

دوستو!

میں یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ بھارت۔ روس دوستی اپنے آپ میں ایک منفرد حیثیت رکھتی ہے۔ مجھے یقین ہے کہ اس مخصوص رشتے کے لئے صدر پتن کی وابستگی سے ان تعلقات کو اور بھی توانائی حاصل ہوگی اور ہمارے مابین گہرے اعتماد اور دوستی کا راستہ ہموار اور مستحکم ہوگا اور ہماری خصوصی و کلیدی شراکت داری کو نئی بلندیاں حاصل ہوں گی۔

شکریہ

Modi Govt's #7YearsOfSeva
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
PM Modi's Global Approval Rating 66%; Beats Biden, Merkel, Trudeau, Macron

Media Coverage

PM Modi's Global Approval Rating 66%; Beats Biden, Merkel, Trudeau, Macron
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM launches ‘Customized Crash Course programme for Covid 19 Frontline workers’
June 18, 2021
Share
 
Comments
One lakh youth will be trained under the initiative in 2-3 months: PM
6 customized courses launched from 111 centres in 26 states
Virus is present and possibility of mutation is there, we need to stay prepared: PM
Corona period has proved importance of skill, re-skill and up-skill: PM
The pandemic has tested the strength of every country, institution, society, family and person of the world: PM
People below 45 years of age will get the same treatment for vaccination as for people above 45 years of age from June 21st: PM
PM Lauds ASHA workers, ANM, Anganwadi and health workers deployed in the dispensaries in the villages

The Prime Minister, Shri Narendra Modi launched ‘Customized Crash Course programme for Covid 19 Frontline workers’ today via video conferencing. The training programme would be conducted in 111 training centres spread over 26 states. About one lakh frontline workers will be trained in this initiative. The Union Minister of Skill Development and Entrepreneurship Dr Mahendra Nath Pandey, and many other Union Ministers, Ministers from States, experts and other stakeholders were also present on the occasion.

Addressing the event, the Prime Minister said that this launch is an important next step in the fight against Corona. The Prime Minister cautioned that the virus is present and possibility of mutation is also there. The second wave of the pandemic illustrated the kind of challenges that the virus may present to us. The Country needs to stay prepared to meet the challenges and training more than one lakh frontline warriors is a step in that direction, said the Prime Minister.

The Prime Minister reminded us that the pandemic has tested the strength of every country, institution, society, family and person of the world. At the same time, this alerted us to expand our capabilities as science, government, society, institution or individuals. India took up this challenge and status of PPE kits, testing and other medical infrastructure related to covid care and treatment bears testimony to the efforts. Shri Modi pointed out that far-flung hospitals are being provided with ventilators and oxygen concentrators. More than 1500 oxygen plants are being established at war footing. Amidst all these efforts, skilled manpower is critical. For this and to support the current force of corona warriors one lakh youth is being trained. This training should be over in two-three months, said the Prime Minister.

The Prime Minister informed that the top experts of the country have designed these six courses, launched today, as per demands of the states and union territories . The training will be imparted to Covid warriors in six customised job roles namely Home Care Support, Basic Care Support, Advanced Care Support, Emergency Care Support, Sample Collection Support, and Medical Equipment Support. This will include fresh skilling as well as upskilling of those who have some training in this type of work. This campaign will give fresh energy to the health sector frontline force and will also provide job opportunities to our youth.

The Prime Minister said that the Corona period has proved how important the mantra of skill, re-skill and up-skill. The Prime Minister said the Skill India Mission was started separately for the first time in the country, a Skill Development Ministry was created and the Prime Minister's Skill Development Centers were opened across the country. Today Skill India Mission is helping millions of this country’s youth every year in providing training according to the needs of the day. Since last year the Ministry of Skill Development has trained lakhs of health workers across the country, even amidst the pandemic.

The Prime Minister said given the size of our population, it is necessary to keep increasing the number of doctors, nurses and paramedics in the health sector. Work has been done with a focused approach over the last 7 years to start new AIIMS, new medical colleges and new nursing colleges. Similarly, reforms are being encouraged in medical education and related institutions. The seriousness and the pace at which the work on preparing the health professionals is going on now is unprecedented.

The Prime Minister said that health professionals like ASHA workers, ANM, Anganwadi and health workers deployed in the dispensaries in the villages are one of the strong pillars of our health sector and are often left out of the discussion. They are playing an important role in preventing infection to support the world's largest vaccination campaign. The Prime Minister lauded these health workers for their work during all the adversities for the safety of each and every countryman. He said their role is huge in preventing the spread of infection in villages in remote areas and in hilly and tribal areas.

The Prime Minister said many guidelines have been issued related to the campaign which is to start from 21st June. People below 45 years of age will get the same treatment for vaccination as for people above 45 years of age from June 21st. The Union Government is committed to give free vaccines to every citizen while following corona protocol.

The Prime Minister wished the trainees and said he believed that their new skills will be used in saving the lives of the countrymen.