سناتن محض ایک لفظ نہیں ہے، یہ ہمیشہ سے نیا اور ہمیشہ تبدیل ہونے والا ہے اس میں شروع سے ہی خود کو ماضی سے بہتر بنانے کی شدید خواہش موجود رہی ہے اور اس لیے یہ لازوال اور ابدی ہے
’’ کسی بھی قوم کے سفر کی ، اس کے معاشرے کے سفر سے عکاسی ہوتی ہے‘‘
’’ہم صدیوں پہلے کی گئی قربانیوں کا اثر موجود نسل میں دیکھ رہے ہیں ‘‘
’’ سالوں کے دوران ہم نے کچھ کا احیاء کیا ہے‘‘
’’ سماجی یکجہتی ، ماحولیات اور قدرتی طریقے سے کی جانے والی کاشتکاری بھی ملک کے امرت عہدکے ساتھ منسلک ہیں‘‘

سبھی کو ہری اوم، جے اُمیا ماں، جے لکشمی نرائن!

یہ میرے  کچھی پٹیل کچھ کا ہی نہیں بلکہ اب پورے بھارت کا فخر ہے۔ کیونکہ میں بھارت کے کسی بھی کونے میں جاتا ہوں تو وہاں میرے سماج کے لوگ دیکھنے کو ملتے ہیں۔ اس لیے تو کہا جاتا ہے، کچھڑو کھیلے کھلک میں جو مہاساگر میں مچھ، جے تے ہدّو کچھّی وسے اُتّے ریاڈی کچھ۔

پروگرام میں موجود شاردا پیٹھ کے جگد گرو محترم شنکراچاریہ سوامی سدانند سرسوتی جی، گجرات کے وزیر اعلیٰ جناب بھوپیندر بھائی پٹیل، مرکز میں کابینہ میں میرے ساتھی پرشوتم بھائی روپالا، اکھل بھارتیہ کچھ کڑوا پاٹی دار سماج کے صدر جناب ابجی بھائی وشرام بھائی کاناڑیں، دیگر افسران، اور ملک و بیرونِ ملک سے جڑے میرے سبھی بھائیو اور بہنو!

آپ سبھی کو سناتنی شتابدی مہوتسو کی ڈھیر ساری نیک خواہشات۔ آج میرے لیے سونے پر سہاگا ہے، میرے لیے یہ پہلا موقع ہے، جب مجھے جگد گرو شنکراچاریہ سوامی سدانند سرسوتی جی کی موجودگی میں ان کے شنکراچاریہ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد کسی پروگرام میں آنے کا موقع حاصل ہوا ہے۔ ان کی محبت ہمیشہ مجھ پر رہی ہے، ہم سب پر رہی ہے تو آج مجھے انہیں پرنام کرنے کا موقع حاصل ہوا ہے۔

ساتھیو،

سماج کی خدمت کے 100 برس ، نوجوانوں کے ونگ کا پچاسواں برس اور خواتین کے وِنگ کا پچیسواں برس، آپ نے یہ جو تریوینی سنگم بنایا ہے، یہ اپنے آپ میں بہت ہی خوش کن اتفاق ہے۔ جب کسی سماج کے نوجوان، اس سماج کی مائیں- بہنیں، اپنے سماج کی ذمہ داری اپنے کندھوں پر لیتے ہیں، تو مان لینا اس کی کامیابی اور خوشحالی یقینی ہو جاتی ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ شری اکھل بھارتیہ کچھ کڑوا پاٹی دار سماج کے نوجوان اور خواتین ونگ کی یہ وفاداری اس مہوتسو کے طور پر آج چاروں طرف نظر آرہی ہے۔ آپ نے اپنے کنبے کے رکن کے طور پر مجھے سناتنی شتابدی مہوتسو کا حصہ بنایا، میں اس کے لیے آپ سبھی کا شکرگزار ہوں۔ سناتن محض ایک لفظ نہیں ہے، یہ ہمیشہ نیا ہے، متغیر ہے، اس میں گزرے ہوئے وقت سے، خود کو مزید بہتر بنانے کی ایک فطری خواہش ہے اور اس لیے سناتن لافانی ہے۔

ساتھیو،

کسی بھی قوم کا سفر اس کے سماج کے سفر کا ہی عکاس ہوتا ہے۔ پاٹی دار سماج کی سینکڑوں برسوں کی تاریخ ، 100 برسوں کا شری اکھل بھارتیہ کچھ کڑوا سماج کا سفر، اور مستقبل کے لیے ویژن، یہ ایک طرح سے بھارت اور گجرات کو جاننے- دیکھنے کا ایک وسیلہ بھی ہے۔ سینکڑوں برس اس سماج پر غیر ملکی حملہ آوروں نے کیا کیا ظلم نہیں کیے! تاہم، پھر بھی سماج کے اسلاف نے اپنی شناخت نہیں مٹنے دی، اپنے عقیدے کو ٹوٹنے نہیں دیا۔ صدیوں قبل کی قربانیوں کا اثر ہم آج اس کامیاب سماج کی موجودہ پیڑھی کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔ آج کچھ کڑوا پاٹی دار سماج کے لوگ ملک و بیرونِ ملک اپنی کامیابی کا پرچم لہرا رہے ہیں۔ وہ جہاں بھی ہیں، اپنی محنت اور صلاحیت سے آگے بڑھ رہے ہیں۔ ٹمبر ہو، پلائی ووڈ ہو، ہارڈویئر، ماربل، بلڈنگ مٹیرئیل، ہر شعبے میں آپ لوگ چھائے ہوئے ہیں۔ اور مجھے خوشی ہے کہ ان سب کے ساتھ ہی آپ نے نسل در نس، سال بہ سال اپنی روایات کی اقدار میں  اور عزت میں اضافہ کیا ہے۔ اس سماج نے اپنے موجودہ دور کو بنایا، اپنے مستقبل کی بنیاد رکھی۔

ساتھیو،

سیاسی زندگی میں، میں نے آپ سب کے درمیان ایک طویل عرصہ گزارا ہے، آپ سبھی سے بہت کچھ سیکھا ہے۔ گجرات کا وزیر اعلیٰ رہتے ہوئے آپ کے ساتھ کئی موضوعات پر کام کرنے کا موقع ملا ہے۔ خواہ کچھ میں آئے زلزلے کا مشکل دور ہو، یا اس کے بعد راحت، بچاؤ اور تعمیر نو کی طویل کوششیں ہوں، یہ سماج کی طاقت ہی تھی، جس سے مجھے ہمیشہ ایک خوداعتمادی حاصل ہوتی تھی۔ خصوصاً، جب میں کچھ کے دنوں کے بارے میں سوچتا ہوں تو کتنا ہی کچھ پرانا یاد آنے لگتا ہے۔ ایک وقت تھا، جب کچھ ملک کے پسماندہ ترین اضلاع میں سے ایک تھا۔ پانی کی قلت، بھک مری، مویشیوں کی موت، نقل مکانی، بدحالی، یہی کچھ کی پہچان تھی۔ کسی افسر کا تبادلہ کچھ ہوتا تھا، تو اسے پنشمنٹ پوسٹنگ یعنی بطور سزا تعیناتی مانا جاتا تھا، کالا پانی مانا جاتا تھا۔ تاہم گذشتہ برسوں میں ہم نے ساتھ مل کر کچھ کا کایہ پلٹ کر دیا ہے۔ ہم نے کچھ کے پانی کے بحران کو حل کرنے کے لیے جس طرح ساتھ مل کر کام کیا، ہم نے ساتھ مل کر جس طرح کچھ کو دنیا کا اتنا بڑا سیاحتی مقام بنایا، وہ سب کا پریاس کی ایک بہترین مثال ہے۔ آج مجھے یہ دیکھ کر فخر ہوتا ہے کہ کچھ، ملک کے سب سے تیزی سے ترقی حاصل کرنے والے اضلاع میں سے ایک ہے۔ کچھ کنکٹیویٹی بہتر ہو رہی ہے، وہاں بڑی بڑی صنعتیں آر ہی ہیں۔ جس کچھ میں کبھی کھیتی کے بارے میں سوچنا بھی مشکل تھا، آج وہاں سے زرعی مصنوعات برآمد کی جا رہی ہیں، دنیا بھر میں جا رہی ہیں۔ اس میں آپ سبھی کا بڑا کردار رہا ہے۔

بھائیو اور بہنو

میں نرائن رام جی لمبانی سے ازحد متاثر ہوں۔ شری اکھل بھارتیہ کچھ کڑوا پاٹی دار سماج کو آگے بڑھانے والے کئی افراد سے میرا ذاتی تعلق بھی رہا ہے۔ اس لیے، وقت وقت پر سماج کے کاموں اور مہمات کے بارے میں مجھے معلومات بھی حاصل ہوتی رہتی ہے۔ کورونا کے وقت بھی آپ سبھی نے قابل ستائش کام کیا ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ اس سناتنی شتابدی پروگرام کے ساتھ ہی آپ نے آئندہ 25 برسوں کا ویژن اور اس کے عزائم بھی سامنے رکھے ہیں۔ آپ کے 25 برسوں کے یہ عزائم اس وقت مکمل ہوں گے، جب ملک اپنی آزادی کے 100 برس منائے گا۔ آپ نے معیشت سے لے کر تکنالوجی تک، سماجی ہم آہنگی سے لے کر ماحولیات اور فطری طریقہ کاشت تک جو عہد کیے ہیں، وہ ملک کے امرت عہد سے جڑے ہوئے ہیں۔  مجھے یقین ہے شری اکھل بھارتیہ کچھ کڑوا سماج کی کوششیں اس سمت میں ملک کے عہد و پیمان کو طاقت دیں گی، انہیں کامیابی سے ہمکنار کریں گی۔ اسی احساس کے ساتھ، آپ سبھی کو ایک مرتبہ پھر بہت ساری نیک خواہشات۔

شکریہ!

 

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
A Leader for a New Era: Modi and the Resurgence of the Indian Dream

Media Coverage

A Leader for a New Era: Modi and the Resurgence of the Indian Dream
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
Srinagar Viksit Bharat Ambassadors Unite for 'Viksit Bharat, Viksit Kashmir'
April 20, 2024

Srinagar hosted a momentous gathering under the banner of the Viksit Bharat Ambassador or VBA 2024. Held at the prestigious Radisson Collection, the event served as a unique platform, bringing together diverse voices and perspectives to foster the nation's collective advancement towards development.

Graced by the esteemed presence of Union Minister Shri Hardeep Singh Puri as the Chief Guest, the event saw the attendance of over 400 distinguished members of society, representing influencers, industry stalwarts, environmentalists, and young minds, including first-time voters. Presidents of Chambers of Commerce, Federation of Kashmir Industrial Corporation, House Boat Owners Association, and members of the writers' association were also present.

The VBA 2024 meetup began with an interesting panel discussion on Viksit Kashmir, which focused on the symbiotic relationship between industry growth and sustainable development. This was followed by an interactive session by Minister Puri, who engaged with the attendees through an engaging presentation. Another event highlight was the live doodle capture by a local artist of the discussions.

Union Minister Hardeep Singh Puri discussed how India has changed in the last decade. He said India is on track to become one of the world's top three economies, surpassing Germany and Japan soon.

 

"The country is set to surpass Germany and Japan and will become the world's third-largest economy by 2027-28," he said.

 

According to official estimates, India's economy is projected to reach a remarkable $40 trillion by 2040. Presently, the economy stands at approximately $3.5 trillion.

He also stressed that India's progress is incomplete without a developed Kashmir.

 

"Bharat cannot be Viksit without a Viksit Kashmir," he said.

Hardeep Puri reflected on India's economic journey, noting that in the 1700s, India contributed a significant 25% to the global GDP. However, as experts documented, this figure gradually dwindled to a mere 2% by 1947.

 

He highlighted how India, once renowned as the 'sone ki chidiya' (golden bird), lost its economic strength during British colonial rule and continued to struggle even after gaining independence, remaining categorized under the 'Fragile Five' until 2014.

 

Puri emphasized that the true shift in India's economic trajectory commenced under the Modi government. Over the past decade, the nation has ascended from among the top 11 economies to ranking among the top 5 globally.

The Union Minister also encouraged everyone to participate in the Viksit Bharat 2047 mission, emphasizing that achieving this dream requires the active engagement and coordination of all "ambassadors" of change.

He highlighted India's rapid progress in metro network development, stating that the operational metro network spans approximately 950 kilometres. He expressed confidence that within the next 2-3 years, India's metro network will expand to become the second-largest globally, surpassing that of the United States.

 

Regarding Jammu and Kashmir, he mentioned that through the Smart project, over 68 projects totalling Rs 6,800 crores were conceptualized, with Rs 3,200 crores worth of projects already completed.

 

He further stated that Jammu and Kashmir possesses more potential than Switzerland but has faced setbacks due to man-made crises. He emphasized the Modi government's dedication to the comprehensive development of the region.

The minister highlighted a significant government policy shift from women-centred to women-led development. Drawing from his extensive experience as a diplomat spanning 39 years, he shared that when a country transitions to women-led development, there is typically a substantial GDP increase of 20-30%. 

He mentioned that the government is actively pursuing this objective, citing examples such as the Awas Yojana, where houses are registered in the names of women household members, and the implementation of 33% reservation for women in elected bodies as part of this broader mission. 

He also provided insight into the transformative impact of the Modi government's welfare policies on people's lives. He highlighted the Ujjwala Yojana, noting that 32 crore individuals have received LPG cylinders, a significant increase from the 14 crore connections in 2014. Additionally, he mentioned the expansion of the gas pipeline network, which has grown from 14,000 km to over 20,000 km over the past ten years.

The Vision of Viksit Bharat: 140 crore dreams, 1 purpose 

The Viksit Bharat Ambassador movement aims to encourage citizens to take responsibility for contributing to India's development. VBA meet-ups and events are being organized in various parts of the country to achieve this goal. These events provide a platform for participants to engage in constructive discussions, exchange ideas, and explore practical strategies for contributing to the movement.

Join the movement on the NaMo App: https://www.narendramodi.in/ViksitBharatAmbassador

The NaMo App: Bridging the Gap

Prime Minister Narendra Modi's app, the NaMo App, is a digital bridge that empowers citizens to participate in the Viksit Bharat Ambassador movement. The NaMo App serves as a one-stop platform for individuals to:

Join the cause: Sign up and become a Viksit Bharat Ambassador and make 10 other people

Amplify Development Stories: Access updates, news, and resources related to the movement.

Create/Join Events: Create and discover local events, meet-ups, and volunteer opportunities.

Connect/Network: Find and interact with like-minded individuals who share the vision of a developed India.

The 'VBA Event' section in the 'Onground Tasks' tab of the 'Volunteer Module' of the NaMo App allows users to stay updated with the ongoing VBA events.