Share
 
Comments
’’آج صنعتی تربیتی ادارے کے 9 لاکھ سے زائد طلبا کے جلسہ تقسیم اسناد کے موقع پر تاریخ رقم کی گئی ہے‘‘
’’وشوکرما جینتی ہر اس شخص کا فخر ہے جو حقیقی معنوں میں سخت محنت کرتا ہے، یہ مزدور کا دن ہے‘‘
’’بھارت میں،ہم نے مزدور کی مہارت میں ہمیشہ خدا کی تصویر دیکھی ہے، انہیں وشوکرما کی شکل میں دیکھا جاتا ہے ‘‘
’’اس صدی کو بھارت کی صدی بنانے کے لیے، یہ ازحد ضروری ہے کہ بھارت کے نوجوان تعلیم اور ہنرمندی میں یکساں طور پر مہارت حاصل کریں‘‘
’’آئی ٹی آئی اداروں سے تکنیکی تربیت حاصل کرچکے نوجوانوں کے لیے فوج میں بھرتی کے لیے خصوصی تجویز ہے‘‘
’’اس سلسلے میں آئی ٹی آئی اداروں کا کردار بہت اہم ہے، ہمارے نوجوانوں کو ان امکانات سے زیادہ سے زیادہ مستفید ہونا چاہئے‘‘
’’بھارت کی ہنرمندی میں کوالٹی بھی ہے اور تنوع بھی‘‘
’’جب نوجوان کے پاس تعلیم کے ساتھ ساتھ ہنرمندی کی طاقت بھی ہوتی ہے، تب اس کی خوداعتمادی میں خود بخود اضافہ ہو جاتا ہے‘‘
’’بدلتی ہوئی عالمی صورتحال میں، بھارت کے تعلق سے دنیا کے اعتماد میں مسلسل اضافہ رونما ہو رہا ہے‘‘
وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج ویڈیو پیغام کے ذریعہ اولین کوشل دیکشانت سماروہ میں صنعتی تربیتی ادارے کے طلبا سے خطاب کیا۔ تقریباً 40 لاکھ طلبا نے اس پروگرام میں شرکت کی۔

نمسکار!

آج میری خوش قسمتی ہے کہ مجھے ملک کے لاکھوں آئی ٹی آئی کے طلباء و طالبات سے بات چیت کرنے کا موقع ملا ہے۔ اسکل ڈیولپمنٹ سے جڑے مختلف اداروں کے طلباء، اساتذہ، تعلیمی دنیا کی دیگر شخصیات، خواتین و حضرات!

اکیسویں صدی میں آگے بڑھ رہے ہمارے ملک میں آج ایک نئی تاریخ رقم کی گئی ہے۔ پہلی بار آئی ٹی آئی کے 9 لاکھ سے زیادہ طلباء و طالبات کا کوشل دیکشانت سماروہ منعقد کیا گیا ہے۔ 40 لاکھ سے زیادہ اسٹوڈنٹس ہمارے ساتھ ورچوئل  طریقے سے بھی جڑے ہوئے ہیں۔ میں آپ سبھی کو کوشل دیکشانت سماروہ کی بہت بہت مبارکباد دیتا ہوں اور آج سونے میں سہاگہ ہے۔ آج بھگوان وشو کرما کی جینتی بھی ہے۔ یہ کوشل دیکشانت سماروہ، اپنے ہنر سے  نوتعمیر کی راہ پر آپ کا پہلا قدم، اور وشو کرما جینتی کا مقدس موقع! کتنا انوکھا اتفاق ہے۔  میں یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ آپ کی یہ شروعات جتنی خوشگوار ہے، آپ کے آنے والے کل کا سفر بھی اتنا ہی تخلیقی ہوگا۔ آپ کو اور تمام ہم وطنوں کو بھگوان وشو کرما جینتی کی بھی دلی مبارکباد!

ساتھیو،

وشوکرما جینتی، یہ ہنرمندی کے عزم مصمم کا تہوار ہے۔ جیسے مورتی ساز کوئی مورتی بناتا ہے، لیکن جب تک اس  کا عزم مصمم نہیں ہوتا، وہ مورتی بھگوان کا روپ نہیں کہلاتی۔ آج ہم سبھی کے لیے فخر کی بات ہے کہ آج وشو کرما جینتی کے دن، آپ کی ہنرمندی کا عزم مصمم ظاہر ہو رہاہے، آپ کی ہنرمندی کو قبولیت کا درجہ مل رہا ہے۔ وشو کرما جیتنی صحیح معنوں میں محنت کرنے والی شخص کی عزت افزائی ہے، محنت کشوں کا دن ہے۔ ہمارے یہاں  محنت کشوں کی ہنرمندی میں ایشور کا عنصر دیکھا گیا ہے، اسے وشو کرما کی شکل میں دیکھا گیا ہے۔ یعنی آپ کے پاس آج جو ہنرمندی ہے، اسکل ہے، اس میں بھی کہیں نہ کہیں ایشور کا عنصر ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ یہ پروگرام بھگوان وشو کرما کو ہماری طرف سے ایک ’کوشلانجلی‘ کی طرح ہے۔ ’کوشلانجلی‘ کہو یا ’کرمانجلی‘ کہو، وشو کرما کی جیتنی سے انوکھا دن کیا ہو سکتا ہے۔

ساتھیو،

گزشتہ 8 برسوں میں ملک نے بھگوان وشو کرما  سے ملنے والی حوصلہ افزائی سے متعدد نئی اسکیمیں شروع کی ہیں، ’شرم ایو جیئتے‘ کی اس ہماری روایت کو دوبارہ زندہ کرنے کے لیے کوشش ہے۔ آج ملک ایک بار پھر اسکل کو عزت بخش رہا ہے، اسکل ڈیولپمنٹ پر بھی اتنا ہی زور دے رہا ہے۔ اس صدی کو بھارت کی صدی بنانے کے لیے بہت ضروری ہے کہ بھارت کے نوجوان پڑھائی کے ساتھ ہی اسکل میں بھی اتنے ہی ماہر ہوں۔ اسی سوچ کے ساتھ ہماری حکومت نے نوجوانوں کی ہنرمندی کے فروغ اور نئے اداروں کی تعمیر کو اولین ترجیح دی ہے۔ ہمارے ملک میں پہلا آئی ٹی آئی، 1950 میں بنا تھا۔ اس کے بعد کی سات دہائیوں میں قریب قریب 10 ہزار آئی ٹی آئی بنے۔ ہماری حکومت کے 8 برسوں میں ملک میں قریب قریب 5 ہزار نئے آئی ٹی آئی بنائے گئے ہیں۔ گزشتہ 8 برسوں میں آئی ٹی آئی میں 4 لاکھ سے زیادہ نئی سیٹیں بھی جوڑی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ ملک بھر میں نیشنل اسکل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس، انڈین انسٹی ٹیوٹ آف اسکلز، اور ہزاروں اسکل ڈیولپمنٹ سنٹرز بھی کھولے گئے ہیں۔ اسکول کی سطح پر اسکل ڈیولپمنٹ کو فروغ دینے کے لیے حکومت، 5 ہزار سے زیادہ ہنرمندی کے مراکز بھی قائم کرنے جا رہی ہے۔ ملک میں جو نئی قومی تعلیمی پالیسی نافذ کی گئی ہے، اس میں بھی تجربہ پر مبنی تعلیم (ایکس پرئینسڈ  لرننگ) کو فروغ دیا جا رہا ہے، اسکولوں میں اسکل کورس، متعارف کرائے جا رہے ہیں۔

آئی ٹی آئی کے آپ سبھی اسٹوڈنٹس کے لیے حکومت نے ایک اور فیصلہ کیا ہے، جس کا فائدہ آپ سبھی کو ہو رہا ہے۔ 10ویں پاس کرکے آئی ٹی آئی میں آنے والے طلباء و طالبات کو نیشنل اوپن اسکول کے توسط سے آسانی سے 12ویں پاس کا سرٹیفکیٹ بھی مل رہا ہے۔ اس سے آپ کو آگے کی پڑھائی میں اور زیادہ آسانی ہوگی۔ آپ کے لیے ایک اور اہم فیصلہ کچھ مہینے پہلے ہی لیا گیا ہے۔ اب ہماری فوج میں آئی ٹی آئی سے ٹیکینکل ٹریننگ لے کر نکلے نوجوانوں کی بھرتی کے لیے مخصوص انتظام کیا گیا ہے۔ یعنی اب آئی ٹی آئی سے نکلے نوجوانوں کو فوج میں بھی  ان کو موقع ملے گا۔

ساتھیو،

چوتھے صنعتی انقلاب، ’انڈسٹری 4.0‘ کے اس دور میں، بھارت کی کامیابی میں صنعتی تعلیمی اداروں- آئی ٹی آئی کا بھی بڑا رول ہے۔ بدلتے ہوئے وقت میں نیچر آف جاب بھی بدل رہا ہے۔ اس لیے، حکومت نے اس بات کا خاص دھیان رکھا ہے کہ ہماری آئی ٹی آئی میں پڑھنے والے اسٹوڈنٹس کو ہر جدید کورس کی سہولت بھی ملے۔ آج کوڈنگ سے لے کر آرٹیفیشیل انٹیلی جنس (مصنوعی ذہانت)، روبوٹکس، 3 ڈی پرنٹنگ، ڈرون ٹیکنالوجی، ٹیلی میڈیسن سے جڑے کئی کورس آئی ٹی آئی میں شروع کیے گئے ہیں۔ آپ یہ بھی دیکھ رہے ہیں کہ آج بھارت کس طرح قابل تجدید توانائی کے شعبے میں، شمسی توانائی کے شعبے میں، بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کے شعبے میں لیڈ لے رہا ہے۔ ہماری متعدد آئی ٹی آئی میں ان سے جڑے کورسز شروع ہونے سے آپ جیسے طلباء کو روزگار کے مواقع ملنے میں اور زیادہ آسانی ہوگی۔

ساتھیو،

آج ملک میں جیسے جیسے ٹیکنالوجی کی توسیع ہو رہی ہے، ویسے ویسے روزگار کے مواقع بھی بڑھ رہے ہیں۔ جیسے آج جب ملک ہر گاؤں تک آپٹیکل فائبر پہنچا رہا ہے، لاکھوں کامن سروس سنٹر کھول رہا ہے، تو آئی ٹی آئی سے پڑھ کر نکلے طلباء و طالبات کے لیے گاؤوں میں بھی زیادہ سے زیادہ مواقع بن رہے ہیں۔ گاؤں گاؤں میں موبائل کے رپیئر کا کام ہو، کھیتی میں نئی ٹیکنالوجی سے جڑے کام ہوں، ڈرون سے فرٹیلائزر یا دوا چھڑکنے کا کام ہو، ایسے متعدد نئے طرح کے روزگار دیہی معیشت سے جڑ رہے ہیں۔ ان امکانات کو ہمارے نوجوانوں کو پورا فائدہ حاصل ہو، اس میں آئی ٹی آئی کا رول بہت اہم ہے۔ حکومت اسی سوچ کے ساتھ لگاتار آئی ٹی آئی کو اپ گریڈ کرنے کا بھی کام کر رہی ہے، وقت کے مطابق تبدیلی کی کوشش کر رہی ہے۔

ساتھیو،

اسکل ڈیولپمنٹ کے ساتھ ہی، نوجوانوں میں سافٹ اسکلز کا ہونا بھی اتنا ہی ضروری ہے۔ آئی ٹی آئی میں اب اس پر بھی خصوصی زور دیا جا رہا ہے۔ بزنس پلان کیسے بناتے ہیں، بینکوں سے لون پانے کی کون سی اسکیمیں ہیں، کیسے ضروری فارم بھرتے ہیں، کیسے نئی کمپنی رجسٹر کرتے ہیں، اس سے جڑی جانکاریوں کو بھی آپ کے کورس کے ساتھ ہی دینے کا کام کیا جا رہا ہے۔ حکومت کی انھیں کوششوں کا نتیجہ ہے کہ آج بھارت کے پاس اسکل میں کوالٹی بھی آ رہی ہے، اور ڈائیورسٹی بھی ہے۔ گزشتہ کچھ وقت میں ہمارے آئی ٹی آئی پاس آؤٹس کو ورلڈ اسکلز کمپٹیشنز میں کئی بڑے انعام ملے ہیں۔

ساتھیو،

اسکل ڈیولپمنٹ سے جڑا ایک اور پہلو ہے، جس کی بات کی جانی اتنی ہی ضروری ہے۔ جب کسی نوجوان کے پاس پڑھائی کی طاقت کے ساتھ ہی اسکل کی طاقت بھی ہوتی ہے تو اس  کی خود اعتمادی اپنے آپ بڑھ جاتی ہے۔ نوجوان جب اسکل کے ساتھ طاقتور ہو کر نکلتا ہے، تو اس کے من میں یہ خیال بھی ہوتا ہے کہ کیسے وہ اپنا کام شروع کریں۔ ذاتی روزگار کے اس جذبے کو تعاون فراہم کرنے کے لیے، آج آپ کے پاس بنا گارنٹی لون دلانے والی مدرا یوجنا، اسٹارٹ اپ انڈیا اور اسینڈ اپ انڈیا جیسی اسکیموں کی طاقت بھی ہے۔ ہدف سامنے ہے، آپ کو اُس سمت میں آگے بڑھنا ہے۔ آج ملک نے آپ کا ہاتھ تھاما ہے، کل آپ کو ملک کو آگے لے کر جانا ہے۔ جس طرح آپ کی زندگی کے اگلے 25 سال بہت اہم ہیں، ویسے ہی ملک کے لیے بھی امرت کال کے 25 سال اتنے ہی اہم ہیں۔ آپ سبھی نوجوان، میک ان انڈیا اور ووکل فار لوکل مہم کے محرک ہیں۔ آپ بھارت کی صنعتی دنیا کی ’بیک بون‘ (ریڑھ کی ہڈی) کی طرح ہیں اور اس لیے ترقی یافتہ ہندوستان کے عہد کو پورا کرنے میں، آتم نربھر بھارت کے عہد کو پورا کرنے میں، آپ  کا بہت بڑا رول ہے۔

ساتھیو،

آپ کو ایک اور بات یاد رکھنی ہے۔ آج دنیا کے کئی بڑے ممالک کو اپنے خواب پورا کرنے کے لیے، اپنی رفتار کو برقرار رکھنے کے لیے اسکلڈ ورک فورس (ہنرمند افرادی قوت) کی ضرورت ہے۔ آپ کے لیے ملک کے ساتھ ہی، بیرونی ممالک میں بھی متعدد مواقع انتظار کر رہے ہیں۔ بدلتے ہوئے عالمی حالات میں، بھارت کے تئیں دنیا کا اعتماد بھی مسلسل بڑھ رہا ہے۔ کورونا کے دور میں بھی بھارت نے ثابت کیا ہے کہ  اس کا اسکلڈ ورک فورس، اس کے نوجوان، کس طرح بڑی سے بڑی چنوتیوں کو حل کرنے کی طاقت رکھتے ہیں۔ آج چاہے ہیلتھ سروس ہو یا ہوٹل ہاسپیٹل مینجمنٹ ہو، ڈیجیٹل سالیوشنز ہوں، یا ڈیزاسٹر مینجمنٹ کا شعبہ ہو، بھارت کے نوجوان اپنے اسکل کی وجہ سے، اپنے ٹیلنٹ کی وجہ سے ہر شعبے میں چھا رہے ہیں۔ مجھے یاد ہے، غیر ملکی دوروں کے دوران مجھے کتنی ہی بار الگ الگ بڑے لیڈروں نے کہا ہے کہ ہمارے ملک میں یہ عمارت بھارت کے لوگوں نے بنائی ہے، یہ پروجیکٹ بھارت کے لوگوں نے پورا کیا ہے۔ آپ کو اس بھروسے کا بھی پورا فائدہ اٹھانا ہے۔

ساتھیو،

آج میں آپ سے ایک اور اپیل کروں گا۔ آپ نے آج جو سیکھا ہے، وہ آپ کے مستقبل کی بنیاد ضرور بنے گا، لیکن آپ کو مستقبل کے حساب سے اپنے ہنر کو اپ گریڈ بھی کرنا ہی پڑے گا۔ اسیل یے، بات جب اسکل کی ہوتی ہے، تو آپ کا منتر ہونا چاہیے- ’اسکلنگ‘، ’ری سائیکلنگ‘ اور ’اپ اسکلنگ‘۔ آپ جس کسی بھی شعبے میں ہیں، اس میں کیا کچھ نیا ہو رہا ہے، اس پر ضرور نظر رکھیں۔ جیسے اگر کسی نے آٹو موبائل کا عام کورس کیا ہے تو اسے اب الیکٹرک وہیکل کے حساب سے خود کو ری-اسکل کرنا ہوگا۔ ایسے ہی ہر شعبے میں چیزیں تیزی سے بدل رہی ہیں۔ اس لیے آپ اپنے اسکل کو بدلتے وقت کے حساب سے اپ گریڈ کرتے رہیں، انوویٹ کرتے رہیں۔ اپنے شعبے میں کون سی نئی اسکل سیکھنے سے آپ کے کام کی طاقت کئی گنا بڑھ جائے گی، یہ جاننا بھی بہت ضروری ہوتا ہے۔ اس لیے، نئی اسکل بھی ضرور سیکھیں، اور اپنے علم کو شیئر بھی کریں۔ مجھے یقین ہے، آپ اسی رفتار سے آگے بڑھیں گے، اور اپنی اسکل سے، اپنی ہنرمندی سے، نئے بھارت کے بہتر مستقبل کو سمت عطا کریں گے۔

اور ساتھیوں ایک بات میں کہنا چاہتا ہوں کہ آپ کبھی بھی اپنے آپ کو کم مت سمجھنا۔ بھارت کے روشن مستقبل کے لیے آپ کا ہنر، آپ کی صلاحیت، آپ کا عزم، آپ کی لگن ملک کی بہت بڑی پونجی ہے۔ میرے لیے فخر کی بات ہے کہ آج وشو کرما جینتی پر مجھے آپ جیسے نوجوانوں کے ساتھ، جن کے ہاتھ میں ہنر ہے، اسکل ہے، اور بہت بڑے خواب ہیں، ان سے بات کرنے کا موقع ملا ہے۔ بھگوان وشو کرما کا آپ پر لگاتار آشیرواد بنا رہے، آپ کی اسکل مسلسل آگے بڑھتی رہے، اس میں وسعت ہوتی رہے، اسی جذبے کے ساتھ، آپ سب کو بہت بہت مبارکباد۔

بہت بہت شکریہ!

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن
Why Amit Shah believes this is Amrit Kaal for co-ops

Media Coverage

Why Amit Shah believes this is Amrit Kaal for co-ops
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to visit Karnataka on 6th February
February 04, 2023
Share
 
Comments
PM to inaugurate India Energy Week 2023 in Bengaluru
Moving ahead on the ethanol blending roadmap, PM to launch E20 fuel
PM to flag off Green Mobility Rally to create public awareness for green fuels
PM to launch the uniforms under ‘Unbottled’ initiative of Indian Oil - each uniform to support recycling of around 28 used PET bottles
PM to dedicate the twin-cooktop model of the IndianOil’s Indoor Solar Cooking System - a revolutionary indoor solar cooking solution that works on both solar and auxiliary energy sources simultaneously
In yet another step towards Aatmanirbharta in defence sector, PM to dedicate to the nation the HAL Helicopter Factory in Tumakuru
PM to lay foundation stones of Tumakuru Industrial Township and of two Jal Jeevan Mission projects in Tumakuru

Prime Minister Shri Narendra Modi will visit Karnataka on 6th February, 2023. At around 11:30 AM, Prime Minister will inaugurate India Energy Week 2023 at Bengaluru. Thereafter, at around 3:30 PM, he will dedicate to the nation the HAL helicopter factory at Tumakuru and also lay the foundation stone of various development initiatives.

India Energy Week 2023

Prime Minister will inaugurate the India Energy Week (IEW) 2023 in Bengaluru. Being held from 6th to 8th February, IEW is aimed to showcase India's rising prowess as an energy transition powerhouse. The event will bring together leaders from the traditional and non-traditional energy industry, governments, and academia to discuss the challenges and opportunities that a responsible energy transition presents. It will see the presence of more than 30 Ministers from across the world. Over 30,000 delegates, 1,000 exhibitors and 500 speakers will gather to discuss the challenges and opportunities of India's energy future. During the programme, Prime Minister will participate in a roundtable interaction with global oil & gas CEOs. He will also launch multiple initiatives in the field of green energy.

The ethanol blending programme has been a key focus areas of the government to achieve Aatmanirbharta in the field of energy. Due to the sustained efforts of the government, ethanol production capacity has seen a six times increase since 2013-14. The achievements in the course of last eight years under under Ethanol Blending Programe & Biofuels Programe have not only augmented India’s energy security but have also resulted in a host of other benefits including reduction of 318 Lakh Metric Tonnes of CO2 emissions and foreign exchange savings of around Rs 54,000 crore. As a result, there has been payment of around Rs 81,800 crore towards ethanol supplies during 2014 to 2022 and transfer of more than Rs 49,000 crore to farmers.

In line with the ethanol blending roadmap, Prime Minister will launch E20 fuel at 84 retail outlets of Oil Marketing Companies in 11 States/UTs. E20 is a blend of 20% ethanol with petrol. The government aims to achieve a complete 20% blending of ethanol by 2025, and oil marketing companies are setting up 2G-3G ethanol plants that will facilitate the progress.

Prime Minister will also flag off the Green Mobility Rally. The rally will witness participation of vehicles running on green energy sources and will help create public awareness for the green fuels.

Prime Minister will launch the uniforms under ‘Unbottled’ initiative of Indian Oil. Guided by the vision of the Prime Minister to phase out single-use plastic, IndianOil has adopted uniforms for retail customer attendants and LPG delivery personnel made from recycled polyester (rPET) & cotton. Each set of uniform of IndianOil’s customer attendant shall support recycling of around 28 used PET bottles. IndianOil is taking this initiative further through ‘Unbottled’ - a brand for sustainable garments, launched for merchandise made from recycled polyester. Under this brand, IndianOil targets to meet the requirement of uniforms for the customer attendants of other Oil Marketing Companies, non-combat uniforms for Army, uniforms/ dresses for Institutions & sales to retail customers.

Prime Minister will also dedicate the twin-cooktop model of the IndianOil’s Indoor Solar Cooking System and flag-off its commercial roll-out. IndianOil had earlier developed an innovative and patented Indoor Solar Cooking System with single cooktop. On the basis of feedback received, twin-cooktop Indoor Solar Cooking system has been designed offering more flexibility and ease to the users. It is a revolutionary indoor solar cooking solution that works on both solar and auxiliary energy sources simultaneously, making it a reliable cooking solution for India.

PM in Tumakuru

In yet another step towards Aatmanirbharta in the defence sector, Prime Minister will dedicate to the nation the HAL Helicopter Factory in Tumakuru. Its foundation stone was also laid by the Prime Minister in 2016. It is a dedicated new greenfield helicopter factory which will enhance capacity and ecosystem to build helicopters.

This helicopter factory is Asia’s largest helicopter manufacturing facility and will initially produce the Light Utility Helicopters (LUH). LUH is an indigenously designed and developed 3-ton class, single engine multipurpose utility helicopter with unique feature of high manoeuvrability.

The factory will be expanded to manufacture other helicopters such as Light Combat Helicopter (LCH) and Indian Multirole Helicopter (IMRH) as well as for repair and overhaul of LCH, LUH, Civil ALH and IMRH in the future. The factory also has the potential for exporting the Civil LUHs in future.

This facility will enable India to meet its entire requirement of helicopters indigenously and will attain the distinction of enabling self-reliance in helicopter design, development and manufacture in India.

The factory will have a manufacturing set up of Industry 4.0 standards. Over the next 20 years, HAL is planning to produce more than 1000 helicopters in the class of 3-15 tonnes from Tumakuru. This will result in providing employment for around 6000 people in the region.

Prime Minister will lay the foundation stone of Tumakuru Industrial Township. Under the National Industrial Corridor Development Programme, development of the Industrial Township spread across 8484 acre in three phases in Tumakuru has been taken up as part of Chennai Bengaluru Industrial Corridor.

Prime Minister will lay the foundation stones of two Jal Jeevan Mission projects at Tiptur and Chikkanayakanahalli in Tumakuru. The Tiptur Multi-Village Drinking Water Supply Project will be built at a cost of over Rs 430 crores. The Multi-village water supply scheme to 147 habitations of Chikkanayakanahlli taluk will be built at a cost of around Rs 115 crores. The projects will facilitate provision of clean drinking water for the people of the region.