کووڈ-19کی وباایک بہت بڑی رکاوٹ بن کے ہمارے سامنے آئی ہے اور اس نے ہمارے لیے بڑے مشکلات پیدا کیے ہیں۔ اور ، یہ ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔ دنیا کے بیشتر حصوں میں ابھی تک ٹیکہ کاری کے مرحلے کو مکمل نہیں کیا جا سکا ہے۔ اوراسی لیے صدر بائیڈن کا یہ اقدام بروقت اور خوش آئند ہے۔

عزت مآب شخصیات ،

بھارت نے ہمیشہ انسانیت کو ایک کنبے کے طور پر دیکھا ہے۔ ہندوستان کی دوا سازی کی صنعت نے  کم لاگت والی اور  موثرترین تشخیصی کٹس ، ادویات ، طبی آلات اور پی پی ای کٹس تیار کیے ہیں۔ یہ بہت سے ترقی پذیر ممالک کو انتہائی کم  قیمتوں پرفراہم بھی  کرائے جا رہے ہیں۔ اور ، ہم نے 150 سے زائد ممالک کے ساتھ ادویات اور طبی ساز وسامان کا اشتراک کیا ہے۔ دیسی طور پر تیار کی جانے والی دو ویکسینوں کو ہندوستان میں "ایمرجنسی کی حالت میں استعمال کیے جانے کی سند" بھی ملی ہے جس میں دنیا کی پہلی ڈی این اے پر مبنی ویکسین بھی شامل ہے۔

متعدد بھارتی کمپنیاں مختلف ویکسینوں کی لائسنس یافتہ پیداوار میں بھی شامل ہیں۔

اس سال کے شروع میں ، ہم نے اپنی ویکسین کی پیداواردیگر 95 ممالک اور اقوام متحدہ کے قیام امن کی فورس کے ساتھ بھی شیئر کیں۔ اور ایک کنبے اور خاندان کی طرح دنیا بھی بھارت کے ساتھ کھڑی تھی جب ہم دوسری لہر سے گزر رہے تھے۔

بھارت کے ساتھ اظہار یکجہتی اور حمایت کے لیے ، میں آپ سب کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔



عزت مآب شخصیات،

بھارت اب دنیا کی سب سے بڑی ویکسینیشن(ٹیکہ کاری)کی مہم چلا رہا ہے۔ حال ہی میں ، ہم نے ایک دن میں تقریباً 25 ملین(ڈھائی کروڑ)افراد کو ٹیکے لگائے۔ ہمارے نچلی سطح کے صحت کے نظام نے اب تک 800 ملین سے زائد افراد کو ویکسین کی خوراکیں فراہم کرائی ہیں۔

200 ملین سے زیادہ بھارتی شہری مکمل طور پرٹیکے لگوا چکے ہیں۔ یہ ہمارے جدید ڈیجیٹل پلیٹ فارم کا استعمال کرتے ہوئے ممکن ہوسکا ہے جسے CO-WIN کہا جاتا ہے۔

اشتراک کرنے کے جذبے سے سرشار ہوکر ہی بھارت نے CO-WIN اور بہت سے دیگر ڈیجیٹل سولیوشن (حل)کے ذریعہ  آزادانہ طور پر اوپن سورس سافٹ ویئر کے طور پر دستیاب کرائے ہیں۔

عزت مآب شخصیات،

جیسا کہ نئی بھارتی ویکسینیں تیار ہو رہی ہیں ، ہم موجودہ ویکسین کی پیداواری صلاحیت میں بھی اضافہ کررہے ہیں۔

جیسے جیسے ہماری پیداوار بڑھتی ہے ، ہم دوسروں کو بھی ویکسین کی فراہمی دوبارہ شروع کر سکیں گے۔ اس کے لیے خام مال کی سپلائی چین کو کھلا رکھنا چاہیے۔

اپنے کویڈ شراکت داروں کے ساتھ ، ہم انڈو پیسیفک خطے کے لیے ویکسین تیار کرنے کے لیے بھارت کی مینوفیکچرنگ طاقت کا فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

ہندوستان اور جنوبی افریقہ نے ڈبلیو ٹی او میں کووڈ-19کے لیے بنائے جانے والے ٹیکے، تشخیص اور ادویات پرعائد ہونے والے محصول (ٹی آر آئی پی ایس)پرچھوٹ کی تجویز پیش کی ہے۔

اس سے وبائی امراض کے خلاف جنگ لڑنےمیں ہمیں بھرپوری مدد ملے گی۔ ہمیں وبا کے بعد پیدا ہونے والے معاشی اثرات سے نمٹنے پر بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

اس مقصد کے لیے، ویکسین سرٹیفکیٹ کی باہمی شناخت کے ذریعے بین الاقوامی سفر کو آسان بنایا جانا چاہیے۔

عزت مآب شخصیات،

میں ایک بار پھر اس اجلاس کے مقاصد اور صدر بائیڈن کے وژن کی تائید کرتا ہوں۔

ہندوستان وبائی مرض کے خاتمے کے لیے دنیا کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے تیار ہے۔

شکریہ

آپ تمام ہی حضرات کا بہت بہت شکریہ

 

 

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
Boosting ‘Make in India’! How India is working with Asean to review trade pact to spur domestic manufacturing

Media Coverage

Boosting ‘Make in India’! How India is working with Asean to review trade pact to spur domestic manufacturing
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
India’s Top Gamers Meet ‘Cool’ PM Modi
April 13, 2024
PM Modi showcases his gaming prowess, impressing India's top gamers with his quick grasp of mobile, PC, and VR games!
PM Modi delves into gaming, sparking dialogue on innovation and digital empowerment!
Young gamers applaud PM Modi's agility and adaptability, give him ‘NaMo OP' badge

Prime Minister Narendra Modi engaged in a unique interaction with India's top gamers, immersing himself in the world of PC and VR gaming. During the session, Prime Minister Modi actively participated in gaming sessions, showcasing his enthusiasm for the rapidly evolving gaming industry.

The event brought together people from the gaming community including @gcttirth (Tirth Mehta), @PAYALGAMING (Payal Dhare), @8bitthug (Animesh Agarwal), @GamerFleet (Anshu Bisht), @MortaLyt (Naman Mathur), @Mythpat (Mithilesh Patankar), and @SkRossi (Ganesh Gangadhar).

Prime Minister Modi delved into mobile, PC, and VR gaming experiences, leaving the young gamers astounded by his quick grasp of game controls and objectives. Impressed by PM Modi’s gaming skills, the gaming community also gave him the ‘NaMo OP’ badge.

What made the entire interaction even more interesting was PM Modi's eagerness to learn trending gaming lingos like ‘grind’, ‘AFK’ and more. He even shared one of his lingos of ‘P2G2’ which means ‘Pro People Good Governance.’

The event served as a platform for a vibrant exchange of ideas, with discussions ranging from the youngsters’ unique personal journeys that led them to fame in this growing field of gaming, to the latest developments in the gaming sector.

Among the key topics explored was the distinction between gambling and gaming, highlighting the importance of responsible gaming practices while fostering a supportive environment for the gaming community. Additionally, the participants delved into the crucial issue of enhancing women's participation in the gaming industry, underscoring the need for inclusivity and diversity to drive the sector forward.

PM Modi also spoke about the potential for not just esports and gaming content creation, but also game development itself which is centred around India and its values. He discussed the potential of bringing to life ancient Indian games in a digital format, that too with open-source script so that youngsters all over the country can make their additions to it.