ڈیجیٹل اکانومی پر بات کرنے کے لیے بنگلور سے بہتر کوئی جگہ نہیں ہے
ہندوستان کی ڈیجیٹل تبدیلی جدت طرازی میں اس کے غیر متزلزل یقین اور تیز رفتار نفاذ کے عزم سے تقویت یافتہ ہے
ملک گورننس کو تبدیل کرنے اور اسے مزید مؤثر، جامع، تیز تر اور شفاف بنانے کے لیے ٹیکنالوجی کا فائدہ اٹھا رہا ہے
ہندوستان کا ڈیجیٹل پبلک انفراسٹرکچر عالمی چیلنجوں کے لیے قابل توسیع، محفوظ اور جامع حل پیش کرتا ہے
اس طرح کے تنوع کے ساتھ، ہندوستان حل کے لیے ایک مثالی لیباریٹری ہے۔ ہندوستان میں کامیاب ہونے والے حل کو دنیا میں کہیں بھی آسانی سے لاگو کیا جا سکتا ہے
محفوظ، قابل اعتماد، اور لچکدار ڈیجیٹل معیشت کے لیے جی20 کے اعلیٰ سطحی اصولوں پر اتفاق رائے پیدا کرنا اہم ہے
انسانیت کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے ٹیکنالوجی پر مبنی حل کا پورا ماحولیاتی سسٹم بنایا جا سکتا ہے۔ اسے ہم سے صرف چار C کی ضرورت ہے - یقین، عزم، ہم آہنگی، اور تعاون

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج ویڈیو پیغام کے ذریعے بنگلورو میں منعقدہ جی20 ڈیجیٹل اکانومی وزرا کے اجلاس سے خطاب کیا۔

اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے، وزیر اعظم نے معززین کا شہر بنگلورو میں خیرمقدم کیا - جو سائنس، ٹیکنالوجی اور صنعت کاری کے جذبے کا مرکز ہے، اور کہا کہ ڈیجیٹل معیشت پر بات کرنے کے لیے اس سے بہتر کوئی جگہ نہیں ہو سکتی۔

وزیر اعظم نے 2015 میں ڈیجیٹل انڈیا پہل کے آغاز کو اس بے مثال ڈیجیٹل تبدیلی کی وجہ بتایا جو پچھلے 9 سالوں میں ہندوستان میں ہوئی ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہندوستان کی ڈیجیٹل تبدیلی جدت طرازی پر اس کے غیر متزلزل یقین اور تیزی سے عمل آوری کے عزم سے تقویت یافتہ ہے جبکہ شمولیت کے جذبے سے بھی اس کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے جہاں کوئی بھی پیچھے نہیں رہتا۔

اس تبدیلی کے پیمانے، رفتار اور دائرہ کار پر روشنی ڈالتے ہوئے، وزیر اعظم نے ہندوستان کے 850 ملین انٹرنیٹ صارفین کا ذکر کیا جو دنیا میں سب سے سستی ڈیٹا کی قیمتوں سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔ جناب مودی نے گورننس کو تبدیل کرنے اور اسے زیادہ مؤثر، جامع، تیز اور شفاف بنانے کے لیے ٹیکنالوجی کا فائدہ اٹھانے اور آدھار کی مثال دی - ہندوستان کا منفرد ڈیجیٹل شناختی پلیٹ فارم جس میں 1.3 بلین سے زیادہ افراد شامل ہیں۔ انہوں نے JAM تثلیث کا ذکر کیا- جن دھن بینک اکاؤنٹس، آدھار، اور موبائل جنہوں نے مالیاتی شمولیت اور UPI ادائیگی کے نظام میں انقلاب برپا کیا ہے جہاں ہر ماہ تقریباً 10 بلین لین دین ہوتے ہیں، اور عالمی حقیقی وقت کی ادائیگیوں کا 45 فیصد ہندوستان میں ہوتا ہے۔ CoWIN پورٹل کا حوالہ دیتے ہوئے، جس نے ہندوستان کی کووڈ ویکسینیشن مہم کی حمایت کی ہے، وزیر اعظم نے بتایا کہ اس نے ڈیجیٹل طور پر قابل تصدیق سرٹیفکیٹس کے ساتھ 2 بلین سے زیادہ ویکسین کی خوراک کی فراہمی میں مدد کی۔ جناب مودی نے گتی شکتی پلیٹ فارم پر بھی بات کی جو بنیادی ڈھانچے اور لاجسٹکس کے نقشے کے لیے ٹیکنالوجی اور مقامی منصوبہ بندی کا استعمال کرتا ہے، اس طرح منصوبہ بندی، لاگت کو کم کرنے اور ترسیل کی رفتار کو بڑھانے میں مدد کرتا ہے۔ وزیر اعظم نے گورنمنٹ ای-مارکیٹ پلیس، ایک آن لائن پبلک پروکیورمنٹ پلیٹ فارم پر روشنی ڈالی جس سے اس عمل میں شفافیت اور دیانت داری آئی ہے، اور ڈیجیٹل کامرس کے لیے اوپن نیٹ ورک جو ای کامرس کو جمہوری شکل دے رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ”مکمل طور پر ڈیجیٹائز ٹیکس کا نظام شفافیت اور ای گورننس کو فروغ دے رہا ہے“۔ وزیر اعظم نے بھاشینی کی ترقی کا بھی ذکر کیا جو AI سے چلنے والا زبانوں کے ترجمہ کا پلیٹ فارم ہے جو ہندوستان کی تمام متنوع زبانوں میں ڈیجیٹل شمولیت کی حمایت کرے گا۔

”ہندوستان کا ڈیجیٹل پبلک انفراسٹرکچر عالمی چیلنجوں کے لیے قابل توسیع، محفوظ اور جامع حل پیش کرتا ہے“، وزیر اعظم نے کہا۔ ملک کے ناقابل یقین تنوع کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ ہندوستان میں درجنوں زبانیں اور سیکڑوں بولیاں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ دنیا بھر کے ہر مذہب اور لاتعداد ثقافتی رسومات کا مرکز ہے۔ ”قدیم روایات سے لے کر جدید ترین ٹیکنالوجی تک، ہندوستان کے پاس ہر ایک کے لیے کچھ نہ کچھ ہے“، وزیر اعظم نے زور دے کر کہا۔ اس طرح کے تنوع کے ساتھ، انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا، ہندوستان حل کے لیے ایک مثالی ٹیسٹنگ لیباریٹری ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہندوستان میں کامیاب ہونے والے حل کو دنیا میں کہیں بھی آسانی سے لاگو کیا جا سکتا ہے۔ وزیر اعظم نے واضح کیا کہ ہندوستان اپنے تجربات کو دنیا کے ساتھ بانٹنے کے لیے تیار ہے اور انھوں نے کووڈ عالمی وبا کے دوران عالمی بھلائی کے لیے پیش کیے جانے والے CoWIN پلیٹ فارم کی مثال دی۔

وزیر اعظم نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ ورکنگ گروپ جی20 ورچوئل گلوبل ڈیجیٹل پبلک انفراسٹرکچر ریپوزٹری بنا رہا ہے اور اس بات پر زور دیا کہ ڈیجیٹل پبلک انفراسٹرکچر کے لیے مشترکہ فریم ورک پر پیش رفت سب کے لیے ایک شفاف، جواب دہ اور منصفانہ ڈیجیٹل ماحولیاتی نظام بنانے میں مدد کرے گی۔ انہوں نے ڈیجیٹل ہنر کے بین ملکی موازنہ کو آسان بنانے اور ڈیجیٹل مہارت پر ایک ورچوئل سنٹر آف ایکسیلنس قائم کرنے کے لیے ایک روڈ میپ تیار کرنے کی کوششوں کا بھی خیر مقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل کے لیے تیار افرادی قوت کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے یہ اہم کوششیں ہیں۔ اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ڈیجیٹل معیشت کو سلامتی کے خطرات اور چیلنجوں کا سامنا کرنا پڑے گا کیونکہ یہ عالمی سطح پر پھیلتی ہے، وزیر اعظم نے نشاندہی کی کہ ایک محفوظ، قابل اعتماد اور لچکدار ڈیجیٹل معیشت کے لیے جی20 کے اعلیٰ سطحی اصولوں پر اتفاق رائے پیدا کرنا ضروری ہے۔

”ٹیکنالوجی نے ہمیں جس طرح جوڑا ہے اس کی مثال پہلے کبھی نہیں ملتی۔ اس میں سب کے لیے جامع اور پائیدار ترقی کا وعدہ ہے“، وزیر اعظم نے تبصرہ کیا اور زور دے کر کہ کہ جی20 ممالک کے پاس ایک جامع، خوشحال اور محفوظ عالمی ڈیجیٹل مستقبل کی بنیادیں رکھنے کا ایک منفرد موقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل پبلک انفراسٹرکچر کے ذریعے مالی شمولیت اور پیداواریت کو آگے بڑھایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کسانوں اور چھوٹے کاروباروں کے ذریعے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے استعمال کو فروغ دینے، عالمی ڈیجیٹل ہیلتھ ایکو سسٹم بنانے کے لیے فریم ورک قائم کرنے اور مصنوعی ذہانت کے محفوظ اور ذمہ دارانہ استعمال کے لیے ایک فریم ورک تیار کرنے کی تجویز بھی پیش کی۔ جناب مودی نے اس بات پر زور دیا کہ انسانیت کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے ٹیکنالوجی پر مبنی حل کا پورا ایکو سسٹم بنایا جا سکتا ہے۔ ”اسے ہماری طرف سے صرف چار C کی ضرورت ہے – یقین (Conviction)، عزم (Commitment)، ہم آہنگی (Coordination)، اور تعاون (Collaboration)“، وزیر اعظم نے اس اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ورکنگ گروپ ہمیں اس سمت میں آگے لے جائے گا۔

Click here to read full text speech

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
Unstoppable bull run! Sensex, Nifty hit fresh lifetime highs on strong global market cues

Media Coverage

Unstoppable bull run! Sensex, Nifty hit fresh lifetime highs on strong global market cues
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM Modi ignites massive Barasat rally, West Bengal
May 28, 2024
TMC's narrative against the CAA has been fuelled by appeasement politics: PM Modi in Barasat
The Calcutta High Court's verdict has unmasked TMC's deception towards the OBCs in Bengal: PM Modi
Bengal was first looted by Congress and then Left. Now, TMC is looting it with both hands: PM Modi in Barasat

Prime Minister Narendra Modi, in a grand Barasat rally, vowed to combat corruption in Bengal and propel its culture and economy to new heights. Addressing the huge gathering, PM Modi said, “Today, India is on the path to becoming developed. The strongest pillar of this development is eastern India. In the last 10 years, the expenses made by the BJP Government in eastern India was never made in 60-70 years."

Initiating his spirited address, PM Modi said that he closely monitored the cyclone's progress, commending the NDRF and other teams for their exemplary efforts. He also assured that “The Central Government is committed to providing all necessary support to the State Government.”

Delving deep into his speech, PM Modi underscored the pivotal role of Eastern India in India's developmental trajectory and remarked, “In the journey of India's progress, Eastern India stands as a significant force. Over the past decade, the BJP government has allocated more funds to Eastern India than in the preceding six to seven decades. Our efforts have been dedicated to enhancing connectivity across the region, spanning railways, expressways, waterways, and airports.”

The PM also shed light on Bengal’s rich history and its current economic challenges, “Before independence, Bengal was a thriving hub of employment for countless Indians. Today, however, many factories in Bengal lie dormant, forcing its youth to seek opportunities elsewhere. The blame for this decline falls squarely on the shoulders of Congress, followed by the Left, and now TMC. Each party has contributed to Bengal's woes, with every vote for CPM ultimately benefiting TMC.”

Reflecting on his past promises, PM Modi reiterated his commitment to combating corruption in India, “Ten years ago, I pledged to eradicate corruption, and I've upheld that promise. Now, I assure the nation that ‘Naa Khaunga, Naa Khane Dunga’! Recent recoveries of illicit funds from TMC leaders will be thoroughly investigated, and legal measures are being implemented to ensure justice.”

Amidst discussions on scrutinizing the finances of the common citizens by the INDI Alliance, PM Modi shifted the focus to those engaged in corruption and explicitly commented, “Modi vows to examine the ill-gotten gains of corrupt individuals. An X-ray so powerful that it will deter future generations from indulging in corruption.”

“The Calcutta High Court's verdict has unmasked TMC's deception towards the OBCs in Bengal. By designating 77 Muslim castes as OBCs, TMC unlawfully deprived lakhs of OBC youths of their rights. Yet, observe the response of the TMC CM following this judicial decision, here questions are being raised on the intentions of the judges...” the PM reprimanded strongly.

PM Modi shared that a troubling incident unfolded when a TMC MLA made derogatory remarks about Hindus and Bengal's saints rightfully demanded an apology, “However, instead of rectifying the error, TMC resorted to insulting the saint community itself. Notably, saints associated with ISKCON, Ramakrishna Mission, and Bharat Sevashram Sangh faced disparagement. All this just to appease their vote bank. Furthermore, when sisters from Sandeshkhali sought justice, TMC chose to target them instead.”

“Despite its claims of advocating for the welfare of the people and the land, TMC's actions have sowed fear among mothers and insulted the sanctity of the soil. Even TMC's women MLAs who dare to speak out against its hooliganism face retaliation. Recently, a distressing video surfaced featuring mothers and sisters from Keshpur, West Medinipur, pleading for protection from TMC's goons. It's imperative to hold such acts accountable through the power of your vote,” the PM expressed deep grief.

PM Modi mentioned that “TMC's narrative against the Citizenship Amendment Act (CAA) has been fuelled by appeasement politics. However, the reality is evident as hundreds of refugees have successfully obtained citizenship, visible to the entire nation.” “Forget TMC, no power in the world can impede the implementation of CAA,” PM Modi reassured strongly.

“With the country's resolute decision to elect the Modi government in Delhi”, PM Modi urged the audience, “Come June 1, let the lotus blossom across every seat, including Barasat.” The PM also asked the crowd to venture door to door, village to village, and seek blessings at every temple and place of worship.

“Together, let's usher in a Viksit Bengal and a Viksit Bharat,” the PM concluded.