ناگرنار میں این ایم ڈی سی اسٹیل لمیٹڈ کے اسٹیل پلانٹ کو وقف کیا
جگدل پور ریلوے اسٹیشن کو جدید بنانے کے لئے سنگ بنیاد رکھا
چھتیس گڑھ میں ریل اور سڑک کے متعدد پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا اور قوم کے نام وقف کیا
تروکی – رائے پور ڈی ای ایم یو ٹرین سروس کو جھنڈی دکھا کر روانہ کیا
’’وکست بھارت کا خواب تب ہی پورا ہوگا جب ملک کی ہر ریاست، ہر ضلع اور ہر گاؤں ترقی یافتہ ہو گا‘‘
’’وکست بھارت کے لیے ٹھوس، سماجی اور ڈیجیٹل بنیادی ڈھانچہ مستقبل کی ضروریات کے مطابق ہونا چاہیے‘‘
’’چھتیس گڑھ اسٹیل پیدا کرنے والی بڑی ریاست ہونے کا فائدہ اٹھا رہا ہے‘‘
’’بستر میں بننے والا اسٹیل ہماری فوج کو مضبوط کرے گا اور بھارت کی دفاعی برآمدات میں موجودگی بھی مضبوط ہوگی‘‘
’’امرت بھارت اسٹیشن یوجنا کے تحت چھتیس گڑھ کے 30 سے زیادہ اسٹیشنوں کو جدید بنایا جا رہا ہے‘‘
’’حکومت، چھتیس گڑھ کے لوگوں کی زندگی کو آسان بنانے کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے‘‘
’’حکومت، چھتیس گڑھ کی ترقی کے سفر میں اپنا تعاون جاری رکھے گی اور ریاست قوم کی تقدیر بدلنے میں اپنا کردار ادا کرے گی‘‘

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج چھتیس گڑھ کے جگدل پور اور بستر میں 27ہزار کروڑ روپے کی لاگت کے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کے سنگ بنیاد رکھا اور قوم کے نام وقف کیا۔ ان پروجیکٹوں میں بستر ضلع میں 23800 کروڑ روپے سے زیادہ کے ناگر نار میں این ایم ڈی سی اسٹیل لمیٹڈ کا اسٹیل پلانٹ کے ساتھ متعدد ریلوے اور سڑک پروجیکٹ شامل ہیں۔ انہوں نے تروکی – رائے پور ڈی ای ایم یو ٹرین سروس کو بھی ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا۔

 

اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ وکست بھارت کا خواب اسی وقت پورا ہوگا جب ملک کی ہر ریاست ، ہر ضلع اور ہر گاؤں ترقی یافتہ بن جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ آج کے تقریباً 27 ہزار کروڑ روپے کی لاگت والے پروجیکٹ والے ان عزائم کو پورا کرنے کے لئے شروع کئے گئے ہیں اور انہوں نے ترقیاتی پروجیکٹوں کے لئے چھتیس گڑھ کے عوام کو مبارکباد دی ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ وکست بھارت کے لئے ٹھوس ،سماجی اور ڈیجیٹل بنیادی ڈھانچہ  مستقبل کی ضروریات کے مطابق ہونا چاہئے۔ انہوں نے بتایا کہ اس سال بنیادی ڈھانچے کے لئے 10 لاکھ کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں یعنی 6 گنا اضافہ کیا گیا ہے۔

ریل ، سڑک ، ہوائی اڈہ ، بجلی کے پروجیکٹوں ، ٹرانسپوٹیشن ، غریبوں کے لئے مکان ، تعلیم اور حفظان صحت کے اداروں میں اسٹیل کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت نے پچھلے 9 برسوں میں ملک کو اسٹیل کی پیداوار میں خود کفیل بنانے کے لئے کئی اقدامات کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ’’چھتیس گڑھ اسٹیل تیار کرنے والی بڑی ریاست ہونے کے فوائد حاصل کررہی ہے‘‘۔ وزیر اعظم نے آج ناگر نار میں انتہائی جدید اسٹیل پلانٹ کا افتتاح کرتے ہوئے اس بات کو اجاگر کیا ۔انہوں نے کہا کہ اس پلانٹ میں پیدا ہونے والی اسٹیل، ملک میں آٹو موبائیل  ، انجینئرنگ اور دفاعی مینوفیکچرنگ کے سیکٹر کو نئی توانائی دے گا۔جناب مودی نے کہا کہ ’’بستر میں پیدا ہونے والی اسٹیل دفاعی  برآمدات میں اضافہ کرنے کے ساتھ مسلح افواج کو بھی مستحکم کرے گی۔‘‘ انہوں نے اس بات کو اجاگر کیا کہ اسٹیل پلانٹ بستر اور آس پاس کے علاقوں کے تقریباً 50ہزار نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرےگا۔انہوں نے مزید کہا کہ’’نیا اسٹیل پلانٹ  مرکزی حکومت کے ذریعہ بستر جیسے امنگوں والے اضلاع کی ترقی کی ترجیح میں نئی رفتار پیدا کرےگا۔‘‘

 

کنیکٹوٹی پر مرکزی حکومت کی مخصوص توجہ کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر اعظم نے چھتیس گڑھ میں اقتصادی راہ داری اور جدید شاہراہوں کا ذکر کیا ۔انہوں نے بتایا کہ 2014 کے مقابلے چھتیس گڑھ کے ریلوے کے بجٹ میں تقریباً 20 گنا اضافہ کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ تروکی آزادی کے اتنے سال بعد ایک نئی ریلوے لائین کا تحفہ حاصل کررہی ہے۔ ایک نئی ڈی ای ایم یو ٹرین نے ملک کے ریلوے کے نقشے پر تروکی کو جوڑا ہے جو راجدھانی رائے پور کے لئے سفر کو مزید آسان بنائے گی۔جگدل پور اور دانتے واڑہ کے درمیان ریل لائن کو چوڑا کرنے کا پروجیکٹ  لاجسٹکس  کی لاگت میں کمی کرےگا اور  سفر میں آسانی پیدا کرےگا ۔

وزیر اعظم نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ چھتیس گڑھ نے ریلوے پٹریوں کی سو فیصد برق کاری  کا کام پورا کرلیا ہے۔وندے بھارت ٹرین بھی ریاست میں چلائی جارہی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ’’چھتیس گڑھ میں 30 سے زیادہ اسٹیشنوں کو امرت بھارت اسٹیشن یوجنا کے تحت جدید بنایا جارہا ہے، ان میں سے 7 اسٹیشنوں کی جدید کاری کا سنگ بنیاد پہلے ہی رکھا جاچکا ہے ، ان کے ساتھ آج بلاسپور، رائے پور اور درگ اسٹیشنوں کے ساتھ جگدل پور اسٹیشن کو بھی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ ’’آنے والے دنوں میں جگدل پور اسٹیشن شہر کا خاص مرکز بن جائے گا اور یہاں مسافروں کے لئے سہولیات کو جدید بنایا جائے گا ۔‘‘ انہوں نے کہا کہ’’پچھلے 9 برسوں میں ریاست کے 120 سے زیادہ اسٹیشنوں پر مفت وائی فائی سہولت فراہم کی گئی ہے۔‘‘

حکومت چھتیس گڑھ کے عوام کے لئے زندگی کو آسان بنانے کی خاطر ہر ممکن کوششیں کررہی ہے۔ وزیر اعظم مودی نے یہ کہتے ہوئے اس بات کو اجاگر کیا کہ آج کے پروجیکٹ ریاست میں ترقی کی رفتار میں اضافہ کریں گے ، روزگار کے نئے مواقع پیدا کریں گے اور نئی صنعتوں کی ہمت افزائی کریں گے۔ خطاب کا اختتام کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ حکومت چھتیس گڑھ کی ترقی کے سفر میں اپنا تعاون جاری رکھے گی اور ریاست ملک کی قسمت تبدیل کرنے میں اپنا رول ادا کرےگی۔ انہوں نے اس موقع پر ریاست کی نمائندگی کرنے  اور ریاست کی ترقی کے بارے میں فکرمند ہونے کے لئے چھتیس گڑھ کے گورنر جناب بسوابھوشن  ہری چندن کا شکریہ ادا کیا ۔

چھتیس گڑھ کے گورنر  جناب بسوا بھوشن ہری چندن ، رکن پارلیمنٹ جناب موہن منڈاوی اس موقع پر دیگر افراد کے ساتھ موجود تھے۔

پس منظر

وزیر اعظم نے آتم نربھر بھارت وژن کو بڑی تیزی فراہم کرنے والے ایک اقدام کے طور پر بستر ضلع میں این ایم ڈی سی  اسٹیل لمیٹڈ کے ناگر نار میں اسٹیل پلانٹ کو قوم کے نام وقف کیا۔23800 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت سے تیار ہونے والا یہ اسٹیل پلانٹ ایک گرین فیلڈ پروجیکٹ ہے جو اعلیٰ معیار کی اسٹیل تیار کرےگا ۔ناگر نار میں این ایم ڈی سی اسٹیل لمیٹڈ کا اسٹیل پلانٹ  میں ہزاروں افراد کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ  اس سے متعلقہ صنعتوں اور دیگر صنعتوں نے روزگار کے مواقع فراہم کرےگا۔یہ بستر کو دنیا کے اسٹیل کے نقشے پر پیش کرےگا اور خطے کی سماجی اقتصادی ترقی میں تیزی لائے گا۔

پورے ملک میں ریل کے بنیادی ڈھانچے کو بہتر بنانے کے وزیر اعظم کے وژن کے خطوط پر  پروگرام کے دوران متعدد ریل پروجیکٹوں کے لئے سنگ بنیاد رکھا گیا اور انہیں قوم کے نام وقف کیا گیا۔وزیر اعظم نے انتاگڑھ اور تروکی کے درمیان ایک نئی ریلوے لائین کو قوم کے نام وقف کیا اور جگدل پور اور دانتے واڑہ کے درمیان ریل کی پٹریوں کو دوہرا کرنے کا افتتاح کیا ۔ انہوں نے بوری ڈانڈ – سورج پور ریل لائین کو دوہرا کرنے اور امرت بھارت اسٹیشن اسکیم کے تحت جگدل پور اسٹیشن کی جدید کاری کے لئے سنگ بنیاد رکھا ۔وزیر اعظم نے تروکی- رائے پور ڈی ای ایم یو ٹرین خدمات کو ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا ۔ ریل کے یہ پروجیکٹ ریاست کے قبائلی خطوں میں کنیکٹوٹی کو بہتر بنائیں گے۔ ریلوے کا جدید بنیادی ڈھانچہ اور نئی ریل خدمات  سے مقامی لوگوں کو فائدہ ہوگا اور خطے کی اقتصادی ترقی میں مدد ملے گی۔

وزیر اعظم نے قومی شاہراہ نمبر 43 پر کنکوری  سے چھتیس گڑھ – جھارکھنڈ سرحد کے سیکشن کو بہتر بنانے کے پروجیکٹ کو قوم کے نام وقف کیا۔ یہ نئی سڑک خطے کے عوام کے لئے کنیکٹوٹی کو بہتر بنائے گی جس سے عام لوگوں کو فائدہ ہوگا۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
As you turn 18, vote for 18th Lok Sabha: PM Modi's appeal to first-time voters

Media Coverage

As you turn 18, vote for 18th Lok Sabha: PM Modi's appeal to first-time voters
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to visit Kerala, Tamil Nadu and Maharashtra on 27-28 February
February 26, 2024
PM to visit Vikram Sarabhai Space centre (VSSC), Thiruvananthapuram, and inaugurate three important space infrastructure projects worth about Rs 1800 crore
Projects include ‘PSLV Integration Facility’ at Satish Dhawan Space Centre, Sriharikota; ‘Semi-cryogenics Integrated Engine and stage Test facility’ at ISRO Propulsion Complex at Mahendragiri; and ‘Trisonic Wind Tunnel’ at VSSC
PM to also review progress of Ganganyaan
PM to inaugurate, dedicate to nation and lay the foundation stone of multiple infrastructure projects worth more than Rs 17,300 crore in Tamil Nadu
In a step to establish a transshipment hub for the east coast of the country, PM to lay the foundation stone of Outer Harbor Container Terminal at V.O.Chidambaranar Port
PM to launch India's first indigenous green hydrogen fuel cell inland waterway vessel
PM to address thousands of MSME entrepreneurs working in Automotive sector in Madurai
PM to inaugurate and dedicate to nation multiple infrastructure projects related to rail, road and irrigation worth more than Rs 4900 crore in Maharashtra
PM to release 16th instalment amount of about Rs 21,000 crore under PM-KISAN; and 2nd and 3rd instalments of about Rs 3800 crore under ‘Namo Shetkari MahaSanman Nidhi’
PM to disburse Rs 825 crore of Revolving Fund to 5.5 lakh women SHGs across Maharashtra
PM to initiate the distribution of one crore Ayushman cards across Maharashtra
PM to launch the Modi Awaas Gharkul Yojana

Prime Minister Shri Narendra Modi will visit Kerala, Tamil Nadu and Maharashtra on 27-28 February, 2024.

On 27th February, at around 10:45 AM, Prime Minister will visit Vikram Sarabhai Space centre (VSSC) at Thiruvananthapuram, Kerala. At around 5:15 PM, Prime Minister will participate in the programme ‘Creating the Future – Digital Mobility for Automotive MSME Entrepreneurs’ in Madurai, Tamil Nadu.

On 28th February, at around 9:45 AM, Prime Minister will inaugurate, and lay the foundation stone of multiple development projects worth about Rs 17,300 crore at Thoothukudi, Tamil Nadu. At around 4:30 PM, Prime Minister will participate in a public programme in Yavatmal, Maharashtra, and inaugurate and dedicate to nation multiple development projects worth more than Rs 4900 crore at Yavatmal, Maharashtra. He will also release benefits under PM KISAN and other schemes during the programme.

PM in Kerala

Prime Minister’s vision to reform the country’s space sector to realise its full potential, and his commitment to enhance technical and R&D capability in the sector will get a boost as three important space infrastructure projects will be inaugurated during his visit to Vikram Sarabhai Space Centre, Thiruvananthapuram. The projects include the PSLV Integration Facility (PIF) at the Satish Dhawan Space Centre, Sriharikota; new ‘Semi-cryogenics Integrated Engine and stage Test facility’ at ISRO Propulsion Complex at Mahendragiri; and ‘Trisonic Wind Tunnel’ at VSSC, Thiruvananthapuram. These three projects providing world-class technical facilities for the space sector have been developed at a cumulative cost of about Rs. 1800 crore.

The PSLV Integration Facility (PIF) at the Satish Dhawan Space Centre, Sriharikota will help in boosting the frequency of PSLV launches from 6 to 15 per year. This state-of-the-art facility can also cater to the launches of SSLV and other small launch vehicles designed by private space companies.

The new ‘Semi-cryogenics Integrated Engine and stage Test facility’ at IPRC Mahendragiri will enable development of semi cryogenic engines and stages which will increase the payload capability of the present launch vehicles. The facility is equipped with liquid Oxygen and kerosene supply systems to test engines up to 200 tons of thrust.

Wind tunnels are essential for aerodynamic testing for characterisation of rockets and aircraft during flight in the atmospheric regime. The “Trisonic Wind Tunnel” at VSSC being inaugurated is a complex technological system which will serve our future technology development needs.

During his visit, Prime Minister will also review the progress of Gaganyaan Mission and bestow ‘astronaut wings’ to the astronaut-designates. The Gaganyaan Mission is India’s first human space flight program for which extensive preparations are underway at various ISRO centres.

PM in Tamil Nadu

In Madurai, Prime Minister will participate in the programme ‘Creating the Future – Digital Mobility for Automotive MSME Entrepreneurs’, and address thousands of Micro, Small and Medium enterprises (MSMEs) entrepreneurs working in the automotive sector. Prime Minister will also launch two major initiatives designed to support and uplift MSMEs in the Indian automotive industry. The initiatives include the TVS Open Mobility Platform and the TVS Mobility-CII Centre of Excellence. These initiatives will be a step towards realising the Prime Minister’s vision of supporting the growth of MSMEs in the country and helping them to formalise operations, integrate with global value chains and become self-reliant.

In the public programme at Thoothukudi, Prime Minister will lay the foundation stone of Outer Harbor Container Terminal at V.O.Chidambaranar Port. This Container Terminal is a step towards transforming V.O.Chidambaranar Port into a transshipment hub for the east coast. The project aims to leverage India's long coastline and favourable geographic location, and strengthen India's competitiveness in the global trade arena. The major infrastructure project will also lead to creation of employment generation and economic growth in the region.

Prime Minister will inaugurate various other projects aimed at making the V.O.Chidambaranar Port as the first Green Hydrogen Hub Port of the country. These projects include desalination plant, hydrogen production and bunkering facility etc.

Prime Minister will also launch India's first indigenous green hydrogen fuel cell inland waterway vessel under Harit Nauka initiative. The vessel is manufactured by Cochin Shipyard and underscores a pioneering step for embracing clean energy solutions and aligning with the nation's net-zero commitments. Also, Prime Minister will also dedicate tourist facilities in 75 lighthouses across ten States/UTs during the programme.

During the programme, Prime Minister will dedicate to nation rail projects for doubling of Vanchi Maniyachchi - Nagercoil rail line including the Vanchi Maniyachchi - Tirunelveli section and Melappalayam - Aralvaymoli section. Developed at the cost of about Rs 1,477 crore, the doubling project will help in reducing travel time for the trains heading towards Chennai from Kanyakumari, Nagercoil & Tirunelveli.

Prime Minister will also dedicate four road projects in Tamil Nadu, developed at a total cost of about Rs 4,586 Crore. These projects include the four-laning of the Jittandahalli-Dharmapuri section of NH-844, two-laning with paved shoulders of the Meensurutti-Chidambaram section of NH-81, four-laning of the Oddanchatram-Madathukulam section of NH-83, and two-laning with paved shoulders of the Nagapattinam-Thanjavur section of NH-83. These projects aim to improve connectivity, reduce travel time, enhance socio-economic growth and facilitate pilgrimage visits in the region.

PM in Maharashtra

In a step that will showcase yet another example of commitment of the Prime Minister towards welfare of farmers, the 16th instalment amount of more than Rs 21,000 crores under the Pradhan Mantri Kisan Samman Nidhi (PM-KISAN), will be released at the public programme in Yavatmal, through direct benefits transfer to beneficiaries. With this release, an amount of more than 3 lakh crore, has been transferred to more than 11 crore farmers’ families.

Prime Minister will also disburse 2nd and 3rd instalments of ‘Namo Shetkari MahaSanman Nidhi’, worth about Rs 3800 crore and benefiting about 88 lakh beneficiary farmers across Maharashtra. The scheme provides an additional amount of Rs 6000 per year to the beneficiaries of Pradhan Mantri Kisan Samman Nidhi Yojana in Maharashtra.

Prime Minister will disburse Rs 825 crore of Revolving Fund to 5.5 lakh women Self Help Groups (SHGs) across Maharashtra. This amount is additional to the Revolving fund provided by the Government of India under National rural livelihood Mission (NRLM). Revolving Fund (RF) is given to SHGs to promote lending of money within SHGs by rotational basis and increase annual income of poor households by promoting women led micro enterprises at village level.

Prime Minister will initiate distribution of one crore Ayushman cards across Maharashtra. This is yet another step to reach out to beneficiaries of welfare schemes so as to realise the Prime Minister’s vision of 100 percent saturation of all government schemes.

Prime Minister will launch the Modi Awaas Gharkul Yojana for OBC category beneficiaries in Maharashtra. The scheme envisages the construction of a total 10 lakh houses from FY 2023-24 to FY 2025-26. Prime Minister will transfer the first instalment of Rs 375 Crore to 2.5 lakh beneficiaries of the Yojana.

Prime Minister will dedicate to nation multiple irrigation projects benefiting Marathwada and Vidarbha region of Maharashtra. These projects are developed at a cumulative cost of more than Rs 2750 crore under Pradhan Mantri Krishi Sinchai Yojna (PMKSY) and Baliraja Jal Sanjeevani Yojana (BJSY).

Prime Minister will also inaugurate multiple rail projects worth more than Rs. 1300 crore in Maharashtra. The projects include Wardha-Kalamb broad gauge line (part of Wardha-Yavatmal-Nanded new broad gauge line project) and New Ashti - Amalner broad gauge line (part of Ahmednagar-Beed-Parli new broad gauge line project). The new broad gauge lines will improve connectivity of the Vidarbha and Marathwada regions and boost socio-economic development. Prime Minister will also virtually flag off two train service during the programme. This includes train services connecting Kalamb and Wardha; and train service connecting Amalner and New Ashti. This new train service will help improve rail connectivity and benefit students, traders and daily commuters of the region.

Prime Minister will dedicate to nation several projects for strengthening the road sector in Maharashtra. The projects include four laning of the Warora-Wani section of NH-930; road upgradation projects for important roads connecting Sakoli-Bhandara and Salaikhurd-Tirora. These projects will improve connectivity, reduce travel time and boost socio-economic development in the region. Prime Minister will also inaugurate the statue of Pandit Deendayal Upadhyay in Yavatmal city.