Share
 
Comments
امام حسینؑ ہمیشہ ناانصافی کے خلاف کھڑے ہوئے اور انہوں نے امن و انصاف کی حفاظت کے لئے شہادت حاصل کی : وزیر اعظم مودی
سب کو ساتھ لے کر چلنے کے طریقہ کار نے ہندوستان کو دوسرے ممالک سے منفرد بنا دیا ہے : وزیر اعظم مودی
ہمیں اپنے ماضی پر فخر ہے، ہمیں اپنے حال پر بھروسہ ہے اور ہم اپنے روشن مستقبل کے لئے پر اعتماد ہیں : وزیر اعظم مودی
وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ بھارت کی نمو اور پیش رفت میں داؤدی بوہرا برادری نے ہمیشہ کلیدی کردار ادا کیا ہے۔
شہریوں کے لئے بہتر معیار زندگی کو یقینی بنانے کے لئے حکومت کی جانب سے مختلف کوششیں کی جا رہی ہیں : وزیر اعظم مودی

نئی دلّی ، 14 ستمبر؍ وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج اندور میں امام حسین ( ایس اے ) کی شہادت کی یادگار عشرہ مبارکہ کے موقع پر داؤدی بوہرہ برادری کے ایک اجتماع سے خطاب کیا ۔

وزیر اعظم نے امام حسین کی قربانی کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ امام حسین ہمیشہ نا انصافی کے خلاف سینہ سپر رہے اور امن و انصاف کی سر بلندی کے لئے جام شہادت نوش کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ امام حسین کی تعلیمات آج بھی افادیت کی حامل ہیں ۔وزیر اعظم نے ڈاکٹر سیدنا مفضل سیف الدین کے ذریعہ کئے گئے کام کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ قوم کے تئیں محبت اور وابستگی ان کی تعلیمات کا ہال مارک ہیں ۔

وزیر اعظم نے کہا کہ سب کو ساتھ لے کرچلنے کی تہذیب بھارت کو دوسرے ملکوں سے منفرد حیثیت عطا کرتی ہے ۔ ہمیں اپنے ماضی پر فخر ہے ، ہمیں اپنے حال پر اعتماد ہے اور ہم اپنے روشن مستقبل کے تئیںیقین رکھتے ہیں ۔
وزیر اعظم نے داؤدی بوہرہ برادری کے تعاون کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ داؤدی بوہرہ سماج نے بھارت کی ترقی اور فروغ کے عمل میں ایک کلیدی رول ادا کیا ہے ۔ انہوں نے اس امر کا اظہار کیا کہ برادری تمام دنیا میں بھارت کی ثقافتی قوت کو پھیلانے کے عظیم کام کو جاری رکھے گی ۔
وزیر اعظم نے داؤدی بوہرہ برادری کے ذریعہ کئے گئے مختلف سماجی اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ حکومت شہریوں کے معیار زندگی کو بلند کرنے خاص طور پر غریب اور ضرورت لوگوں کے معیارحیات کو بلند کرنے کے لئے کوشاں ہے ۔اس پس منظر میں انہوں نے حکومت کے ذریعہ کئے گئے ترقیاتی مختلف پہل قدمیوںآیوش مان بھارت ، سوئچھ ، بھارت ابھیان اور پردھان منتری آواس یوجنا کا ذکر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ پہل قدمیاں عام لوگوں کی زندگی میں تبدیلی لا رہی ہیں ۔

وزیر اعظم نے اندور کے لوگوں کو سوؤچھ سبھارت کو مشن کے طور پر اپنانے کے لئے مبارک باد پیش کی ۔ انہوں نے کہا کہ کل سوچھتا ہی سیوا ہے نامی اسکیم لانچ کی جائے گی اور اور اس عظیم سوچھتا مشن میں لوگ تیزی سے شرکت کریں گے ۔

 

کاروباری امور میں بوہرہ برادری کی ایمانداری کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت ایمان دارکارو باریوں اور کارکنان کی جی ایس ٹی ، اور دیوالیہ پن اور دیوالیہ قرار دیئے جانے کے ضابطے کے توسط سے مدد کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی معیشت نمو پذیر ہے اور نیو انڈیا افق پر روشن ہے ۔

مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ جناب شیو راج سنگھ چوہان بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ ڈاکٹرسید مفضل سیف الدین نے اس سے قبل مثالی کاموں کے لئے وزیر اعظم کی ستائش کی اور ملک کے لئے ان کے ذریعہ انجام دیئے جانے والے امور میں ان کی کامرانی کی تمناکی ۔

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
Modi Govt's #7YearsOfSeva
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
Agri, processed food exports buck Covid trend, rise 22% in April-August

Media Coverage

Agri, processed food exports buck Covid trend, rise 22% in April-August
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
وزیراعظم کاامریکہ کے دورہ پر روانہ ہونے سے قبل بیان
September 22, 2021
Share
 
Comments

میں ریاست ہائے متحدہ امریکہ   یو ایس اے کے صد ر عزت مآب جوبائیڈن کی دعوت پر 22 تا 25 ستمبر 2021 امریکہ کا دورہ کروں گا۔

اپنے دورہ کے دوران میں صدربائیڈن کے ساتھ بھارت- امریکہ جامع عالمی اسٹراٹیجک ساجھیداری کا جائزہ لوں گا اور باہمی مفاد کے علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ  خیال کروں گا۔ میں دونوں ملکوں کے درمیان خاص طور پر سائنس اور ٹکنولوجی کے شعبے میں اشتراک کے لئے امکانات تلاش کرنے کی غرض سے نائب صدر کملا ہیرس کے ساتھ ملاقات کرنے کا بھی منتظر ہوں۔

میں ، صدر جوبائیڈن، آسٹریلیا کے وزیراعظم  اسکاٹ موریسن اور جاپان کے وزیراعظم یوشی ہیدے سوگا کے ہمراہ کوویڈ لیڈران کی اوّلین بنفس نفیس سربراہ کانفرنس میں شرکت کروں گا۔ اس سربراہ کانفرنس سے اس سال مارچ میں منعقدہ ورچول سربراہ کانفرنس کے نتائج کا جائزہ لینے اور بھارت۔ بحرالکاہل خطے کے لئے ہمارے مشترکہ ویژن پر مبنی مستقبل کے رابطوں کے لئے ترجیحات کی نشاندہی کرنے کا موقع فراہم ہوگا۔

میں آسٹریلیا کے وزیراعظم اسکاٹ موریسن اور جاپان کے وزیراعظم سوگا کے ساتھ بھی ملاقات کروں گا جس کے دوران ان کے متعلقہ ممالک کے ساتھ مستحکم دوطرفہ تعلقات اور علاقائی اور عالمی  امور پر ہمارے مفید تبادلوں کو جاری رکھنے کا جائزہ لیا جائے گا۔

میں اقوام متحدہ جنرل اسمبلی  سے خطاب کے ساتھ اپنے دورے کا اختتام کروں گا۔ اس خطاب میں کووڈ-19 عالمی وباد سمیت فوری کارروائی کا تقاضہ کرنے وا لی چنوتیوں، انسداد دہشت گردی کی ضرورت، آب و ہوا کی تبدیلی اور دیگر اہم امور پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔

 امریکہ کے میرے اس دورہ کی بدولت امریکہ کے ساتھ جامع عالمی اسٹراٹیجک ساجھیداری کو مستحکم کرنے، ہمارے اسٹراٹیجک ساجھیداروں- جاپان اور آسٹریلیا کے ساتھ تعلقات کو تقویت بہم پہنچانے اور اہم عا لمی امور پر ہمارے تال میل اور اشتراک کو آگے لے جانے کا ایک موقع فراہم ہوگا۔.