PM to inaugurate, dedicate to nation and lay the foundation stone of multiple development projects worth over Rs. 34,400 crore in Chhattisgarh
Projects cater to important sectors like Roads, Railways, Coal, Power and Solar Energy
PM to Dedicate NTPC’s Lara Super Thermal Power Project Stage-I to the Nation and lay Foundation Stone of NTPC’s Lara Super Thermal Power Project Stage-II

وزیر اعظم جناب نریندر مودی24 فروری2024 کو دوپہر 12:30 بجے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے’’وکست بھارت وکست چھتیس گڑھ‘‘ پروگرام سے خطاب کریں گے۔ پروگرام کے دوران وزیر اعظم34,400 کروڑ روپے سے زیادہ  مالیت کے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا افتتاح کریں گے،قوم کے نام وقف کریں گے اور سنگ بنیاد رکھیں گے۔ یہ پروجیکٹ سڑکوں، ریلوے، کوئلہ، بجلی، شمسی توانائی سمیت کئی اہم شعبوں کی ضرروتوں کو پورا کریں گے۔

وزیر اعظم جناب نریندر مودی این ٹی پی سی کے لارا سُپر تھرمل پاور پروجیکٹ، اسٹیج-1(2x800 میگاواٹ)کو قوم کے نام وقف کریں گے اور چھتیس گڑھ کے ضلع رائے گڑھ میں این ٹی پی سی کے لارا سُپر تھرمل پاور پروجیکٹ، اسٹیج-II(2x800 میگاواٹ) کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ اسٹیشن کا اسٹیج-1 تقریباً 15,800 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری سے بنایا گیا ہے،جبکہ پروجیکٹ کا اسٹیج-II اسٹیج-1 کے احاطے کی دستیاب زمین پر تعمیر کیا جائے گا۔ اس طرح توسیع کے لیے کسی اضافی زمین کی ضرورت نہیں ہوگی اور 15,530 کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔ انتہائی مؤثر سپر کریٹیکل ٹیکنالوجی(اسٹیج-I کے لیے)اور الٹرا سُپر کریٹیکل ٹیکنالوجی(اسٹیج-II کے لیے)سے لیس یہ پروجیکٹ کوئلے کے کم استعمال اور کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج کو یقینی بنائے گا، جبکہ اسٹیج-I اور II دونوں سے 50فیصد بجلی ریاست چھتیس گڑھ کو مختص کی گئی ہے، یہ پروجیکٹ کئی دیگر ریاستوں اورمرکز کے زیر انتظام خطوں جیسے گجرات، مدھیہ پردیش، مہاراشٹر، گوا، دمن اور دیو، دادر اور نگر حویلی میں بجلی کے منظر نامے کو بہتر بنانے میں بھی اہم کردار ادا کرے گا۔

وزیر اعظم ساؤتھ ایسٹرن کول فیلڈز لمیٹڈ کے تین اہم فرسٹ مائل کنکٹی وٹی(ایف ایم سی)پروجیکٹوں کا افتتاح کریں گے، جن کی کل لاگت 600 کروڑ روپے سے زیادہ ہے۔ وہ کوئلے کے تیز تر، ماحول دوست اور مؤثر میکانائزڈ انخلاء میں مدد کریں گے۔ ان پروجیکٹوں میں ایس ای سی ایل کے ڈِپکا ایریا میں ڈِپکا او سی پی کول ہینڈلنگ پلانٹ، ایس ای سی ایل کے رائے گڑھ ایریا میں چھل اور بارود او سی پی کول ہینڈلنگ پلانٹ شامل ہیں۔ ایف ایم سی پروجیکٹس کوئلے کی مشینی نقل و حرکت کو پِٹ ہیڈ سے کول ہینڈلنگ پلانٹس تک یقینی بنائیں گے، جو سائلوز، بنکرز اور کنویئر بیلٹ کےذریعے تیز رفتار لوڈنگ سسٹم سے لیس ہوں گے۔ سڑک کے ذریعے کوئلے کی نقل و حمل کو کم کرکے، یہ پروجیکٹس کوئلے کی کانوں کے آس پاس رہنے والے لوگوں کے حالات زندگی کو سہل بنانے میں مدد کریں گے، جس سے ٹریفک کی بھیڑ، سڑک حادثات اور کوئلے کی کانوں کے ارد گرد ماحول اور صحت پر منفی اثرات کم ہوں گے۔ یہ پٹ ہیڈ سے ریلوے سائڈنگز تک کوئلہ لے جانے والے ٹرکوں کے ذریعے ڈیزل کی کھپت کو کم کرکے نقل و حمل کے اخراجات میں بھی بچت کا باعث بنیں گے۔

خطے میں قابل تجدید توانائی کی پیداوار کو فروغ دینے کے ایک قدم کے طور پر وزیر اعظم راجناندگاؤں میں تقریباً900کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کردہ سولر پی وی پروجیکٹ کا افتتاح کریں گے۔یہ پروجیکٹ سالانہ اندازے کے مطابق 243.53 ملین یونٹ توانائی پیدا کرے گا اور 25 سالوں کے دوران تقریباً 4.87 ملین ٹن کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج کو کم کرے گا، جو اسی مدت کے دوران تقریباً 8.86 ملین درختوں کے ذریعے الگ کیے گئے کاربن کے برابر ہے۔

خطے میں ریل کے بنیادی ڈھانچے کو مضبوط بنانے کے لیے وزیر اعظم تقریباً300کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیے جانے والے بلاس پور – اسلا پور فلائی اوور کو قوم کے نام وقف کریں گے۔ اس سے ٹریفک کی بھاری بھیڑ کم ہو جائے گی اور بلاس پور میں کٹنی کی طرف  جانے والے کوئلے کی ٹریفک کو روک دیا جائے گا۔ وزیر اعظم بھلائی میں50 میگاواٹ کے سولر پاور پلانٹ کو بھی قوم کے نام وقف کریں گے۔ اس سے چلنے والی ٹرینوں میں شمسی توانائی کے استعمال میں مدد ملے گی۔

وزیر اعظم  این ایچ-49 کے 55.65 کلومیٹر طویل سیکشن کی بحالی اورپیوڈ سولڈرز کے ساتھ دو لین میں اَپ گریڈیشن کوقوم کے نام وقف کریں گے۔ اس پروجیکٹ سے دو اہم شہروں بلاس پور اور رائے گڑھ کے درمیان رابطے کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ وزیر اعظم این ایچ-130کے 52.40 کلومیٹر طویل حصے کی بحالی اور پیوڈ سولڈرز کے ساتھ  دو لین میں  اپ گریڈیشن کو بھی قوم کے نام وقف کریں گے۔ اس پروجیکٹ سے امبیکاپور شہر کے رائے پور اور کوربا شہر کے ساتھ رابطے کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی اور اس علاقے کی اقتصادی ترقی کو فروغ ملے گا۔

 

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
Getting excellent feedback, clear people across India voting for NDA, says PM Modi

Media Coverage

Getting excellent feedback, clear people across India voting for NDA, says PM Modi
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
Overwhelming support for the NDA at PM Modi's rally in Nanded, Maharashtra
April 20, 2024
For decades, Congress stalled the development of Vidarbha & Marathwada: PM Modi
The land of Nanded reflects the purity of India's Sikh Gurus: PM Modi
The I.N.D.I alliance only believe in vote-bank politics: PM Modi

Ahead of the Lok Sabha elections, PM Modi addressed a public meeting in Nanded, Maharashtra amid overwhelming support by the people of BJP-NDA. He bowed down to prominent personalities including Guru Gobind Singh Ji, Nanaji Deshmukh, and Babasaheb Ambedkar.

Speaking on the initial phase of voting for the Lok Sabha elections, PM Modi said, “We have the popular support of the First-time voters with us.” He added, “I.N.D.I alliance have come together to save and protect their corruption and the people have thoroughly rejected them in the 1st phase of polling.” He added that the Congress Shehzada now has no choice but to contest from Wayanad, but like he left Amethi he may also leave Wayanad. He said that the country is voting for BJP-NDA for a ‘Viksit Bharat’.

Lamenting the Congress for stalling the development of the people, PM Modi said, “Congress is the wall between the development of Dalits, Poor & deprived.” He added that Congress even today opposes any developmental work that our government intends to carry out. He said that one can never expect them to resolve any issues and people cannot expect robust developmental prospects from them.

Highlighting the dire state and fragile conditions of Marathwada and Vidarbha, PM Modi said, “For decades, Congress stalled the development of Vidarbha & Marathwada.” He “It is the policies of the Congress that both Marathwada and Vidarbha are water-deficient, its farmers are poor and there are no prospects for industrial growth.” He said that our government has enabled 'Nal se Jal' to 80% of households in Nanded. He said that our constant endeavor has been to facilitate the empowerment of our farmers through record rise in MSPs, income support through PM-KISAN, and the promotion of ‘Sree Anna’.

Highlighting the infra impetus in Nanded in the last decade, PM Modi said, “To treat every wound given by Congress is Modi's guarantee.” He added “The ‘Shaktipeeth highway’ and ‘Latur Rail Coach Factory’ is our commitment to a robust infra.” He said that we aim to foster the development of the Marathwada region in the next 5 years.

Elaborating on the relationship between the Sikh Gurus and Nanded, PM Modi said, “The land of Nanded reflects the purity of India's Sikh Gurus.” He added that we are guided by the principles of Guru Gobind Singh Ji. “Over the years we have celebrated the 550th birth anniversary of Guru Nanak Dev Ji, the 400th birth anniversary of Guru Teg Bahadur Ji, and the 350th birth anniversary of Guru Gobind Singh Ji,” said PM Modi. He said that the Congress has always opposed the Sikh community and is taking revenge for 1984. He said that it is due to this that they oppose the CAA that aims to bring the Sikh brothers and sisters to India, granting them citizenship. He said that it was our government that brought back the Guru Granth Sahib from Afghanistan and facilitated the Kartarpur corridor. He said that various other decisions like the abrogation of Article 370 and the abolition of Triple Talaq have greatly benefitted our Muslim sisters and brothers.

Taking a dig at the I.N.D.I alliance, PM Modi said “The I.N.D.I alliance only believe in vote-bank politics.” He added that for this they have left no stone unturned to criticize and disrespect ‘Sanatana’. He said that it is the same I.N.D.I alliance that boycotted the Pran-Pratishtha of Shri Ram.

In conclusion, PM Modi said that we all must strive to ensure that India becomes a ‘Viksit Bharat’, and for that, it is the need of the hour to vote for the BJP-NDA. He thanked the people of Nanded for their overwhelming support and expressed confidence in a Modi 3.0.