Share
 
Comments
بھارت اپنےمجاہدین آزادی کو نہیں بھولے گا ، وزیر اعظم
پچھلے چھ سالوں میں گمنام ہیروز کی تاریخ کو محفوظ کرنے کے لئے با شعور کوششیں: وزیر اعظم
ہمیں اپنے آئین اور اپنی جمہوری روایت پر فخر ہے: وزیر اعظم

وزیر اعظم ، جناب نریندر مودی نے سابرمتی آشرم ، احمد آباد سے ‘پد یاترا’ (آزادی مارچ) کو روانہ کیا اور ‘آزادی کا امرت مہوتسو’ (ہندوستان 75@) کی ابتدائی سرگرمیوں کا افتتاح کیا۔ انہوں نے 75 دیگر تقریبات میں ہندوستان کے لئے دیگر متعدد ثقافتی اور ڈیجیٹل اقدامات بھی شروع کیے۔ اس موقع پر گجرات کے گورنرجناب آچاریہ دیوورت ، یونین کے ایم او ایس (آزادانہ چارج) جناب پرہلاد سنگھ پٹیل اور گجرات کے وزیر اعلی جناب وجئے روپانی موجود تھے۔

آزادی کا امروت مہوتسو تقریبات کا ایک سلسلہ ہے جو ہندوستان کی آزادی کی 75 ویں سالگرہ کی یاد میں حکومت ہند کے زیر اہتمام منعقد کیا جاتا ہے۔ مہوتسو کو عوامی بھاگیداری کے جذبے سے ایک عوامی جشن کے طور پر منایا جائے گا۔

 

سابرمتی آشرم میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے 15 اگست 2020 سے 75 ہفتوں پہلے 'آزادی کا امرت مہوتسو' کے آغاز کا ذکر کیا جو 15 اگست 2023 تک جاری رہے گا۔ انہوں نے مہاتما گاندھی اور ان عظیم شخصیات کو خراج عقیدت پیش کیا جنہوں نے جدوجہد آزادی میں اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔

وزیر اعظم نے پانچ ستونوں کے بارے میں زور دیا یعنی۔ آزادی کی جدوجہد ، نظریات 75 ویں منزل میں ، حصولیابیاں 75 ویں منزل میں ، 75 ویں منزل میں ایکشنز اور 75 ویں منزل میں عزائم جو خوابوں اور ذمہ داریوں کو ترغیب کے طور پر آگے بڑھنے کے لئے تحریک دینے والی ایک طاقت ہیں۔

 

وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ آزادی امرت مہوتسو کے معنی ہیں آزادی کی توانائی کا امرت۔ اس کا مطلب ہے آزادی کی جدوجہد کے سورماؤں کی ترغیب کا امرت ؛ نئے خیالات اور وعدوں کا امرت اور آ تم نربھر بھارت کا امرت۔

نمک کی علامت کے بارے میں بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ محض قیمت کی بنیاد پر نمک کی  قدر  کا  کبھی اندازہ نہیں کیا جاتا۔ ہندوستانیوں کے لئے ، نمک ایمانداری ، اعتماد ، وفاداری ، محنت ، مساوات اور خود انحصاری کی نمائندگی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت نمک ہندوستان کی خود انحصاری کی علامت تھا۔ ہندوستان کی اقدار کے ساتھ ساتھ انگریزوں نے  اس کی بھی خود انحصاری کو مجروح کیا۔ ہندوستان کے لوگوں کو انگلینڈ سے آنے والے نمک پر انحصار کرنا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ گاندھی جی نے ملک کے لوگوں کے اس  بے انتہا درد کو سمجھا ، لوگوں کی نبض کو پہچانا اور اسے ایک تحریک میں بدل د یا۔

وزیر اعظم نے آزادی کی جدوجہد کے اہم لمحات جیسے 1857 میں ہندوستان کی آزادی کے لئے پہلی جنگ ، مہاتما گاندھی کی بیرون ملک سے واپسی ، قوم کو ستیہ گرہ کی طاقت کی یاد  دلانا ،لوک مانیہ تلک کے ذریعہ ، مکمل آزادی  کی مانگ ،نیتا جی سبھاش چندر بوس کی زیر قیادت  آزاد ہند فوج  کا دہلی مارچ اور دہلی چلو جیسے نعروں کی یاد دلائی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تحریک آزادی کے اس شعلے کو بیدار کرنے کا کام ، ہمارے آچاریوں ، سنتوں اور اساتذہ نے ملک کے کونے کونے میں، ہر سمت، ہر خطہ میں کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرح سے ، بھکتی تحریک نے ملک گیر آزادی کی تحریک کے لئے زمین تیار کی تھی۔ چیتنیا مہاپربھو ، رام کرشن پرم ہنس ، شریمنت شنکر دیو جیسے سنتوں نے ملک گیر آزادی کی جدوجہد کی  راہ ہموار کی ۔ اسی طرح کونے کونے سے آئے ہوئے سنتوں نے قومی  شعور اور آزادی  کی جدوجہد میں اہم کردار ادا کیا۔ ملک بھر سے بہت سارے دلت ، آدیواسی ، خواتین اور نوجوانوں نے لاتعداد قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے تمل ناڈو سے تعلق رکھنے والے 32 سالہ شخص کوڈی کتھا کماران جیسے گمنام ہیروز کی قربانیوں کا ذکر کیا ، جنھوں نے  اپنے سر میں انگریزوں کے ذریعہ گولی مارے جانے کے بعد بھی ملک کا جھنڈا زمین پرنہیں گرنے دیا۔ تمل ناڈو کے ویلو ناچیار جو پہلی مہارانی تھیں جنھوں نے برطانوی حکمرانی کے خلاف جنگ  لڑی تھی ۔

وزیر اعظم نے ریمارکس دیئے کہ ہمارے ملک کے قبائلی معاشرے نے اپنی بہادری سے غیر ملکی حکمرانوں کو  گھٹنوں پر جھکانے کے لئے مستقل طور پر کام  کیا ہے ۔جھارکھنڈ میں ، برسا منڈا نے انگریزوں کو للکارا اور مرمو بھائی نے  سنتھال تحریک کی قیادت کی ۔ اڈیشہ میں ، چکرا بسوئی نے انگریزوں کے خلاف لڑائی لڑی اور لکشمن نائک نے گاندھیائی طریقوں سے آگاہی پھیلائی۔ انہوں نے برطانوی راج کے خلاف لڑنے والے دیگر گمنام قبائلی سورماؤوں کے نام بھی گنائے ، جیسے آندھرا پردیش میں مانیم ویروڈو الوری سیرام راجو جیسے انگریزوں کے خلاف لڑنے والے دیگر غیر منقول قبائلی ہیروز کی فہرست دی جنہوں نے رامپا تحریک کی  قیادت کی اور پاسلٹھا کھنگچیرہ جنہوں نے میزورم کی پہاڑیوں میں انگریزوں کا مقابلہ کیا۔ انہوں نے آسام اور شمال مشرق کے دیگر آزادی پسند جنگجوؤں جیسے گومدھار کونور ، لچیٹ بورپھوکان اور سیرت سنگ کا ذکر کیا جنہوں نے ملک کی آزادی میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ملک گجرات کے جمبوغودہ میں نائک قبائلیوں کی قربانی اور منگدھ میں سیکڑوں قبائلیوں کے قتل عام کو ہمیشہ یاد رکھے گا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ملک گذشتہ 6 سالوں سے ہر ریاست اور ہر خطے میں اس تاریخ کو برقرار رکھنے کے لئے شعوری کوشش کر رہا ہے۔ ڈاندی یاترا سے وابستہ سائٹ کا احیاء دو سال قبل مکمل ہوا تھا۔ ملک کی پہلی آزاد حکومت کے قیام کے بعد انڈمان میں جس مقام پر نیتا جی سبھاش نے ترنگا پھہرایا تھا  اس مقام کا بھی  احیاء نو ہوا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جزائر انڈمان و نکوبار کے نام جدوجہد آزادی کے نام پر رکھے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مقامات جو بابا صاحب سے منسوب ہے ان کی تعمیر  پنج  تیرتھ  کی شکل میں کردی گئی ہے اور جلیانہ والا باغ کی یادگار اور پائیکا تحریک یادگاروں کو بھی تعمیر کیاگیا ہے۔

 جناب وزیراعظم نے کہا کہ ہم نے ملک میں اور بیرون ملک اپنی سخت محنت کے ذریعہ اپنی شناخت قائم کی ہے۔ ہمیں اپنے آئین  اور جمہوری روایات پر فخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان جو جمہوریت کی ماں ہے، آج بھی جمہوری اقدار کو مضبوطی عطا کرتے ہوئے آگے بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کی کامیابیوں سے پوری انسانیت کی امیدیں وابستہ ہورہی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان کی ترقی کا سفر آج نربھرتا سے مملو ہے اور اس سے پوری دنیا کے ترقی کے سفر کو تقویت ملنے والی ہے۔

وزیراعظم نے نوجوانوں اور اسکالروں پر زور دیا کہ وہ ہمارے مجاہدین آزادی کی تاریخ پر مبنی دستاویز تیار کرنے کی ملک کی کوششوں کی ذمہ داری سنبھالیں۔ انہوں نے ان پر زور دیا کہ وہ جدوجہد آزادی میں حاصل کی گئی کامیابیوں سے پوری دنیا کو آگاہ کرائیں۔ انہوں نے فن، ادب، تھیٹر کی دنیا، فلمی صنعت اور ڈیجیٹل تفریح سے وابستہ لوگوں پر زور دیا کہ وہ ہمارے ماضی میں بکھری ہوئی شاندار داستانوں کو نئی زندگی عطا کریں۔

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
Modi Govt's #7YearsOfSeva
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
Birthday Special: PM Modi's love for technology and his popularity between the youth

Media Coverage

Birthday Special: PM Modi's love for technology and his popularity between the youth
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM expresses gratitude to President, VP and other world leaders for birthday wishes
September 17, 2021
Share
 
Comments

The Prime Minister, Shri Narendra Modi has expressed his gratitude to the President, Vice President and other world leaders for birthday wishes.

In a reply to President, the Prime Minister said;

"माननीय राष्ट्रपति महोदय, आपके इस अनमोल शुभकामना संदेश के लिए हृदय से आभार।"

In a reply to Vice President, the Prime Minister said;

"Thank you Vice President @MVenkaiahNaidu Garu for the thoughtful wishes."

In a reply to President of Sri Lanka, the Prime Minister said;

"Thank you President @GotabayaR for the wishes."

In a reply to Prime Minister of Nepal, the Prime Minister said;

"I would like to thank you for your kind greetings, PM @SherBDeuba."

In a reply to PM of Sri Lanka, the Prime Minister said;

"Thank you my friend, PM Rajapaksa, for the wishes."

In a reply to PM of Dominica, the Prime Minister said;

"Grateful to you for the lovely wishes, PM @SkerritR."

In a reply to former PM of Nepal, the Prime Minister said;

"Thank you, Shri @kpsharmaoli."