Share
 
Comments

نئی دہلی، 17 اکتوبر 2020: وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج ملک میں کووِڈ۔19 سے متعلق صورتحال اور ٹیکہ فراہمی، تقسیم کاری اور انتظام کاری سے متعلق تیاریوں کا جائزہ لیا۔ اس میٹنگ میں مرکزی وزیر صحت جناب ہرش وردھن، وزیر اعظم کے پرنسپل سکریٹری، رکن (صحت) نیتی آیوگ، پرنسپل سائنٹفک ایڈوائزر، سینئر سائنسداں، وزیر اعظم کے دفتر کے افسران، حکومت ہند کے دیگر شعبوں کے افسران نے شرکت کی۔

وزیر اعظم مودی نے یومیہ کووِڈ معاملات اور شرح نمو میں مستحکم انحطاط کو نوٹ کیا۔

بھارت میں ٹیکوں کی تیاری اہم مراحل میں ہے، ان میں سے 2 ٹیکے دوسرے مرحلے اور ایک تیسرے مرحلے میں ہے۔ بھارتی سائنسداں اور تحقیقی ٹیمیں ہمسایہ ممالک جیسے افغانستان، بھوٹان، بنگلہ دیش، مالدیپ، ماریشس، نیپال اور سری لنکا میں تحقیقی صلاحیت کو مضبوط بنانے کے لئے مل جل کر کام کر رہے ہیں۔ بنگلہ دیش، میانمار، قطر اور بھوٹان میں کلینکل ٹرائل کے لئے درخواست بھی کی گئی ہے۔ عالمی برادری کی مدد کرنے کی کوشش کے تحت، وزیر اعظم نے ہدایت دی کہ ہماری کوششیں محض ہمارے بہت ہی قریبی ہمسایوں تک ہی محدود نہیں رہنی چاہئیں بلکہ ہمیں ٹیکوں، ادویہ کی فراہمی اور ٹیکہ کی فراہمی نظام کے لئے آئی ٹی پلیٹ فارم تشکیل دینا ہوگا۔

ریاستی حکومتوں اور تمام متعلقہ شراکت داروں کے مشوروں سے، کووِڈ۔19 کے لئے ٹیکہ انتظام کاری کے نیشنل ایکسپرٹ گروپ (این ای جی وی اے سی) نے ویکسین کی ذخیرہ اندوزی، تقسیم کاری اور انتظام کاری کا تفصیلی خاکہ تیار کیا اور اسے پیش کیا۔ یہ ایکسپرٹ گروپ ریاستی کے مشوروں کے ساتھ ویکسین کی ترجیح اور تقسیم کاری کے لئے سرگرمی کے ساتھ کام کر رہا ہے۔

ملک کے تنوع اور جغرافیائی پھیلاؤ کو مدنظر رکھتے ہوئے وزیر اعظم نے مزید ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکہ کی تیز رفتار رسائی کو یقینی بنایا جانا چاہئے۔ وزیر اعظم نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ٹیکوں کے نقل و حمل، فراہمی، اور انتظام کاری کے ہر ایک مرحلے میں تیزی سے عمل آوری کی ضرورت ہے۔ اس میں کولڈ اسٹوریج چین، تقسیم کاری کے نیٹ ورک، نگرانی کے نظام کے میکانزم، بہتر جائزے، اور ویلس، سرنج وغیرہ جیسے معاون ساز و سامان کی تیاری کے لئے بہتر منصوبہ بندی بھی شامل ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں انتخابات کے کامیاب انعقاد اور تباہ کاری سے نمٹنے کے لئے بہتر انتظامات سے حاصل ہوئے تجربے کو بروئے کار لایا جانا چاہئے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اسی طرح سے ٹیکہ فراہمی اور ایڈمنسٹریشن نظام کو بھی نافذ کیا جانا چاہئے۔ اس میں ریاستوں/ مرکز کے زیر انتظام علاقوں / ضلع کی سطح کے اہلکاران، سول سوئیٹی تنظیمیں، رضاکاران، شہری، اور اہم شعبوں سے وابستہ ماہرین کی شراکت داری بھی ہونی چاہئے۔ اس پورے منصوبے کی مدد کے لئے، پس پشت ایک مضبوط آئی ٹی نظام ہونا چاہئے اور اس نظام کی تیاری اس طرح کی جانی چاہئے کہ ہمارے حفظانِ صحت کے نظام پر اس کے دور رس اثرات مرتب ہوں۔

آئی سی ایم آر اور ڈی / او بایو۔ٹکنالوجی (ڈی بی ٹی) کے ذریعہ ایس اے آر ایس سی او وی ۔ 2 (کووِڈ۔19 وائرس) کے جینوم کے موضوع پر ملک بھر میں کیے گئے دو مطالعے سے پتہ چلا ہے کہ وائرس جینیاتی طور پر پائیدار ہے اور اس میں مزید تغیر رونما نہیں ہو رہا ہے۔

آخر میں وزیر اعظم مودی نے لاپرواہی نہ برتنے اور وبائی مرض کو قابو میں رکھنے کی کوششوں کو جاری رکھنے کی اپیل کی۔ انہوں نے خصوصی طور پر آنے والے تیوہاروں کے موسم میں سماجی فاصلہ بنائے رکھنے، ماسک پہننے، باقاعدگی کے ساتھ ہاتھوں کو دھونے اور سینیٹائز کرنے جیسے کووِڈ کے لئے موزوں رویہ اپنانے کے عمل کو جاری رکھنے پر زور دیا۔

 

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
دیوالی کے موقع پر جموں و کشمیر کے نوشہرہ میں ہندوستانی مسلح افواج کے جوانوں کے ساتھ وزیر اعظم کی بات چیت کا متن

Popular Speeches

دیوالی کے موقع پر جموں و کشمیر کے نوشہرہ میں ہندوستانی مسلح افواج کے جوانوں کے ساتھ وزیر اعظم کی بات چیت کا متن
Capital expenditure of States more than doubles to ₹1.71-lakh crore as of Q2

Media Coverage

Capital expenditure of States more than doubles to ₹1.71-lakh crore as of Q2
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
21st India – Russia Annual Summit
December 07, 2021
Share
 
Comments

President of the Russian Federation, H.E. Mr. Vladimir Putin, paid a working visit to New Delhi on 06 December 2021 for the 21st India – Russia Annual summit with Prime Minister Shri Narendra Modi.

2. President Putin was accompanied by a high level delegation. Bilateral talks between Prime Minister Modi and President Putin were held in a warm and friendly atmosphere. The two leaders expressed satisfaction at the sustained progress in the ‘Special and Privileged Strategic Partnership’ between both countries despite the challenges posed by the Covid pandemic. They welcomed the holding of the first meeting of the 2+2 Dialogue of Foreign and Defence Ministers and the meeting of the Inter-Governmental Commission on Military & Military-Technical Cooperation in New Delhi on 6 December 2021.

3. The leaders underscored the need for greater economic cooperation and in this context, emphasized on new drivers of growth for long term predictable and sustained economic cooperation. They appreciated the success story of mutual investments and looked forward to greater investments in each others’ countries. The role of connectivity through the International North-South Transport Corridor (INSTC) and the proposed Chennai - Vladivostok Eastern Maritime Corridor figured in the discussions. The two leaders looked forward to greater inter-regional cooperation between various regions of Russia, in particular with the Russian Far-East, with the States of India. They appreciated the ongoing bilateral cooperation in the fight against the Covid pandemic, including humanitarian assistance extended by both countries to each other in critical times of need.

4. The leaders discussed regional and global developments, including the post-pandemic global economic recovery, and the situation in Afghanistan. They agreed that both countries share common perspectives and concerns on Afghanistan and appreciated the bilateral roadmap charted out at the NSA level for consultation and cooperation on Afghanistan. They noted that both sides shared common positions on many international issues and agreed to further strengthen cooperation at multilateral fora, including at the UN Security Council. President Putin congratulated Prime Minister Modi for India’s ongoing non-permanent membership of the UN Security Council and successful Presidency of BRICS in 2021. Prime Minister Modi congratulated Russia for its ongoing chairmanship of the Arctic Council.

5. The Joint Statement titled India-Russia: Partnership for Peace, Progress and Prosperity aptly covers the state and prospects of bilateral ties. Coinciding with the visit, several Government-to-Government Agreements and MoUs, as well as those between commercial and other organizations of both countries, were signed in different sectors such as trade, energy, science & technology, intellectual property, outer space, geological exploration, cultural exchange, education, etc. This is a reflection of the multifaceted nature of our bilateral partnership.

6. President Putin extended an invitation to Prime Minister Modi to visit Russia for the 22nd India-Russia Annual Summit in 2022.