Share
 
Comments
Our focus is to make our education system the most advanced and modern for students of our country: PM
21st century is the era of knowledge. This is the time for increased focus on learning, research, innovation: PM Modi
Youngsters should not stop doing three things: Learning, Questioning, Solving: PM Modi

نئی دہلی،   یکم اگست 2020، وزیراعظم جناب نریندر مودی نے آج  ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ  اسمارٹ انڈیا ہیکاتھان 2020کے گرانڈ فینالے سے خطاب کیا۔

اسمارٹ انڈیا ہیکاتھن

اسمارٹ انڈیا ہیکاتھن کے گرانڈ فینالے میں خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ  طلبا  ملک کو درپیش چیلنجوں کے متعدد حلوں پر کام کررہے ہیں۔ مسائل کے حل فراہم کرانے کے ساتھ ساتھ  اس سے ڈاٹا، ڈیجیٹائزیشن اور  ہائی ٹیک مستقبل  کے بارے میں بھارت کی خواہشات کو بھی تقویت ملتی ہے۔ اس بات کا اعتراف کرتے ہوئے کہ  اکیسویں ویں صدی کی تیز رفتار میں بھارت کو  ایک موثر رول ادا کرتے رہنے کے لئے اپنے آپ کو تیزی سے بدلنے کی ضرورت ہے، وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں  اختراع ، تحقیق، ڈیزائن ڈیولپمنٹ  اور صنعت کاری کے لئے  ضروری ایکو سسٹم تیار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ  اس کا مقصد بھارت کی تعلیم کو زیادہ جدید بنانا اور اہلیت کے  لئے مواقع پیدا کرنا ہے۔

 

نئی تعلیمی پالیسی

نئی تعلیمی پالیسی کا تذکرہ کرتے ہوئے  وزیراعظم نے کہا کہ  اس کا مسودہ  21 ویں صدی کے نوجوان کے خیالات ، ضرورتوں، امیدوں اور خواہشات کو ذہن میں رکھتے ہوئے تیار کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ محض پالیسی دستاویز ہی نہیں ہے بلکہ  اس سے 130 کروڑ سے زیادہ  ہندوستانیوں کی خواہشات کا بھی اظہار ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا ‘‘آج بھی بہت سے بچے یہ محسوس کرتے ہیں کہ  ان کے بارے میں اس مضمون کی بنیاد پر فیصلہ کیا جاتا ہے، جس میں انہیں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔والدین، رشتے داروں، دوستوں وغیرہ کے دباؤ کی وجہ سے  بچوں کو دوسروں کے ذریعہ منتخب کئے ہوئے مضامین  کی تعلیم  حاصل کرنے کے لئے مجبور ہونا پڑتا ہے۔  اس کے نتیجے میں ایک بہت بڑی آبادی ایسی سامنے آئی ہے جو تعلیم یافتہ تو ہے لیکن  انہوں نے  زیادہ تر جو پڑھا ہے، وہ ان کے کسی کام کا نہیں’’۔ انہوں نے بتایا کہ نئی تعلیمی پالیسی کا مقصد  بھارت کے تعلیمی نظام میں  منظم طریقے سے اصلاح کرتے ہوئے  اس نظریئے کو تبدیل کرنا اور تعلیم کی منشا اور  مواد  دونوں کی کایا پلٹ کرنے کی کوشش کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئی تعلیمی پالیسی (این  ای پی) میں  اسکول، کالج اور یونیورسٹی کے تجربے کو  کامیاب ، وسیع بنیاد والا اور  طلبا کے فطری  جذبات   کی رہنمائی کرنے والا بنانے کے لئے  آموزش، تحقیق اور اختراع پر توجہ مرکوز کی گئی ہے۔

طلبا سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا ‘‘یہ ہیکاتھن  ایسا پہلا مسئلہ نہیں ہے جسے آپ نے حل کرنے کی کوشش کی ہے، نہ ہی یہ آخری ہے’’۔ انہوں نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ نوجوان تین کام  مسلسل کرتے رہیں یعنی  آموزش، سوال اٹھانا اور حل کرنا۔ انہوں نے کہا  جب کوئی سیکھتا ہے تو اسے سوال کرنے کی دانش مندی حاصل ہوتی ہے اور  بھارت کی نئی تعلیمی پالیسی سے  اس جذبے کی جھلک ملتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسکولی بستہ جو کہ  اسکول کی حدوں سے باہر نہیں جاتا، کے بوجھ سے  اب توجہ ایسی آموزش کا فائدہ اٹھانے پر مرکوز کی جارہی ہے جو  تنقیدی  سوچ  کو ذہن نشیں کرنے کے بجائے  زندگی گزارنے میں  معاون ہو۔

 

 

بین مظامین مطالعہ پر زور

وزیراعظم نے کہا کہ  بین مضامین مطالعہ پر زور  نئی تعلیمی پالیسی کی  ایک بہت ہی اہم  خصوصیت ہے۔ اس نظریئے کو  اس وجہ سے بھی مقبولیت حاصل ہورہی ہے کہ  ایک  ہی چیز سب کے لئے موزوں نہیں ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ  بین مضامین مطالعہ پر  زور دیئے جانے سے  اس بات  پر توجہ مرکوز  کئےجانے کو یقینی بنایا جاسکے گا کہ  طلبا کیا سیکھنا چاہتے ہیں بجائے اس کے کہ  معاشرہ طلبا سے کیا توقع کرتا ہے۔

تعلیم تک رسائی

بابا صاحب امبیڈکر کے اس قول کا حوالہ دیتے ہوئے کہ تعلیم  تک سبھی کی رسائی ہونی چاہیے، وزیراعظم نے کہا کہ  یہ تعلیمی پالیسی قابل رسائی تعلیم کے  ان کے نظریئے کے لئے بھی وقف ہے۔ نئی تعلیمی پالیسی  پرائمری تعلیم سے شروع کرتے ہوئے  تعلیم  تک رسائی پر  بہت زیادہ توجہ دیتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کا مقصد  2035 تک  اعلی تعلیم میں  مجموعی  داخلے کا تناسب بڑھاکر  50 فیصد تک کرنا ہے۔  انہوں نے مزید کہا کہ یہ تعلیمی پالیسی  نوجوانوں کو  نوکری تلاش کرنے والا بنانے کے بجائے، انہیں روزگار پیدا کرنے والا بنانے پر زور دیتی ہے۔ یہ  ایک طرح سے ہماری ذہنیت اور  ہمارے نظریئے کی اصلاح کرنے کی ایک کوشش ہے۔

 

مقامی زبان پر زور

وزیراعظم نے کہا کہ نئی تعلیمی پالیسی  آگے بڑھے اور  مزید ترقی کرنے میں ہندوستانی زبانوں کے لئے مددگار ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ  طلبا  کواپنے ابتدائی برسوں میں  اپنی ہی زبان میں  آموزش کا فائدہ ملے گا۔ انہوں نے مزید کہا  نئی تعلیمی پالیسی  دنیا کو  مالا مال  ہندوستانی زبانوں سے متعارف بھی کرائے گی۔

عالمی یکجہتی پر زور

وزیراعظم نے کہا کہ  یہ پالیسی مقامی معاملات پر توجہ مرکوز  کرنے کے ساتھ ساتھ عالمی یکجہتی پر اتنا ہی زور دیتی ہے۔ اعلی سطحی عالمی اداروں کی  بھارت میں اپنے کیمپس کھولنے کےلئے حوصلہ افزائی کی گئی ہے۔اس سے  بھارت کے نوجوانوں کو  عالمی سطح کے علم اور مواقع حاصل کرنے کا  فائدہ حاصل ہوگا اور انہیں عالمی مسابقت کے لئے  تیاری کرنے میں بھی مدد ملے گی۔اس سے بھارت میں  عالمی سطح کے انسٹی ٹیوشن  تیار کرنے میں  اور بھارت کو عالمی تعلیم کا ایک مرکز بنانے میں بھی مدد ملے گی۔

 

Click here to read PM's speech

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
Indian startups raise $10 billion in a quarter for the first time, report says

Media Coverage

Indian startups raise $10 billion in a quarter for the first time, report says
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to interact with CEOs and Experts of Global Oil and Gas Sector on 20th October
October 19, 2021
Share
 
Comments

Prime Minister Shri Narendra Modi will interact with CEOs and Experts of Global Oil and Gas Sector on 20th October, 2021 at 6 PM via video conferencing. This is sixth such annual interaction which began in 2016 and marks the participation of global leaders in the oil and gas sector, who deliberate upon key issues of the sector and explore potential areas of collaboration and investment with India.

The broad theme of the upcoming interaction is promotion of clean growth and sustainability. The interaction will focus on areas like encouraging exploration and production in hydrocarbon sector in India, energy independence, gas based economy, emissions reduction – through clean and energy efficient solutions, green hydrogen economy, enhancement of biofuels production and waste to wealth creation. CEOs and Experts from leading multinational corporations and top international organizations will be participating in this exchange of ideas.

Union Minister of Petroleum and Natural Gas will be present on the occasion.