Share
 
Comments
بی جے پی نے ہمیشہ اٹل جی کے دکھائے ہوئے راستے پر چلنے کی کوشش کی ہے۔ ایک مضبوط این ڈی اے ہم پر عوام کے اعتماد کا ثبوت ہے: وزیر اعظم مودی
تامل ناڈو کے لئے آج تک کسی سرکار نے اتنا کام نہیں کیا جتنا ہم کر رہے ہیں۔ ہم سماج کے مختلف شعبوں کے غریب لوگوں کی زندگیوں میں مثبت تبدیلیاں پیدا کرنے کے لئے مسلسل کام کر رہے ہیں:وزیر اعظم
2014 سے قبل، بدعنوانی نے ادارہ کی شکل اختیار کر لی تھی۔ آج ایمانداری ادارہ بن گئی ہے: وزیر اعظم مودی

وزیر اعظم نریندر مودی نے آج تامل ناڈو کے اراکولم، کوڈالور، دھرم پوری ایروڈ اور کرشنا گری کے پانچ پارلیمانی حلقوں کے بوتھ کی سطح کے پارٹی کاریہ کرتاؤں سے گفتگو کی۔ وزیر اعظم کی گفتگو کا آغاز پونگل کے تیوہار کے موقع پر تامل ناڈو کے عوام کی صحت، خوشیوں اور خوشحالی کی دعاؤں کے ساتھ ہوا۔

تامل ناڈو میں علاقائی پارٹیوں کے ساتھ بی جے پی کے اتحاد کی افواہوں کا جواب دیتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے کہا کہ بی جے پی ہمیشہ آنجہانی اٹل بہاری واجپئی جی کے تصورات سے حوصلہ افزائی حاصل کرتی رہی ہے۔اس لئے انہوں نے ہمیشہ اپنے اتحادیوں کو عزیز رکھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک مضبوط قومی اتحاد ہم پر اعتماد کا ثبوت ہے۔

پارٹی کی حیثیت میں اضافے کے لئے سوشل میڈیا کی حمایت اور مختلف سوشل میڈیا پلیٹ فارموں پر سنگین مسائل پر پارٹی کے موقف کی حمایت کے لئے سوشل میڈیا کی ستائش کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے اس کی بڑھتی ہوئی مقبولیت اور اہمیت کا اعتراف کیا۔ انہوں نے کہا کہ’’ہم آج سوشل میڈیا کے زمانے میں جی رہے ہیں۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ کس طرح احباب جھوٹی باتوں کی مسلسل تردید کر رہے ہیں اور ہمارا زاویۂ نظر صراحت کے ساتھ پیش کر رہے ہیں۔ میں ان کے اس عظیم کام کے لئے انہیں مبارکباد دیتا ہوں۔‘‘

تامل ناڈو کے لئے، ڈھانچہ جاتی سہولیات سے سرمایہ کاری تک اور سماجی شعبے سے لے کر ہنر مندی کے فروغ تک تمام شعبوں میں کیے جانے والے فلاحی اقدامات کی تفصیل بیان کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے کہا کہ کس طرح ان پروجیکٹس سے تامل ناڈوکے عوام کی زندگیوں میں مثبت تبدیلیاں پیدا ہوں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ، ’’آج تک کسی سرکار نے تامل ناڈو کے لئے اتنا کام نہیں کیا جتنا کام ہم نے کیا ہے۔ ہم سماج کے مختف شعبے کے غریب کی زندگیوں میں مثبت تبدیلیاں پیدا کرنے کے لئے مسلسل کام کر رہے ہیں۔‘‘

بدعنوانی کے سودوں اور بداتنظامی سے ہماری مسلح افواج کی دفاعی اہلیتوں سے سنگین سمجھوتہ کرنے کے لئے کانگریس پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے کہا کہ، ’’بہت کم لوگ جانتے ہوں گے کہ کانگریس کے کلچر نے ہمارے دفاع کے شعبے کو کس قدر سنگین نقصان پہنچایا ہے۔ انہوں نے کئی دہائیوں تک دفاع کے شعبے کو دلالوں اور بچولیوں کا اڈا بنائے رکھا۔ ہماری دفاعی خریداریوں پر تنقید کرنے والے اکثر وہی لوگ ہیں جو کانگریس کے دور بچولیے وہ بین الاقوامی طاقتیں ہیں جو کسی قیمت پر یہ نہیں چاہتیں کہ ہندوستانی فوج مضبوط ہو سکے۔‘‘

بوتھ کی سطح کے بی جے پی ورکروں سے اپنی گفتگو کے آخر میں وزیر اعظم جناب مودی نے پارٹی کو عوام کے لئے کام کرنے والی ناقابل شکست حیثیت کو یقینی بنانے کے لئے بی جے پی کے کاریہ کرتاؤں کی ستائش کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ آج بی جے پی جن بلندیوں پر پہنچ چکی ہے، وہ ہمارے کاریہ کرتاؤں کی کوششوں اور قربانیوں کی دین ہے۔ ہمارا کل کاریہ کرتاؤں کی وجہ سے تھا، ہمارا آج بھی ہمارے کاریہ کرتاؤں کی مرحون منت ہے اور ہمارا آنے والا کل بھی کاریہ کرتاؤں کی مرحون منت ہوگا۔

عطیات
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
PM Modi hails Isro for successful entry of Chandrayaan-2 into lunar orbit

Media Coverage

PM Modi hails Isro for successful entry of Chandrayaan-2 into lunar orbit
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM's departure statement ahead of his visit to France, UAE and Bahrain
August 21, 2019
Share
 
Comments

I will be visiting France, UAE and Bahrain during 22-26 August 2019.  

My visit to France reflects the strong strategic partnership, which our two countries deeply value, and share. On 22-23 August 2019, I would have bilateral meetings in France, including a summit interaction with President Macron and a meeting with Prime Minister Philippe. I would also interact with the Indian community and dedicate a memorial to the Indian victims of the two Air India crashes in France in the 1950s & 1960s.

Later, on 25-26 August, I will participate in the G7 Summit meetings as Biarritz Partner at the invitation of President Macron in the Sessions on Environment, Climate, Oceans and on Digital Transformation. 

India and France have excellent bilateral ties, which are reinforced by a shared vision to cooperate for further enhancing peace and prosperity for our two countries and the world at large. Our strong strategic and economic partnership is complemented by a shared perspective on major global concerns such as terrorism, climate change, etc.  I am confident that this visit will further promote our long-standing and valued friendship with France for mutual prosperity, peace and progress.

During the visit to the United Arab Emirates on 23-24 August, I look forward to discuss with His Highness the Crown Prince of Abu Dhabi, Sheikh Mohammed bin Zayed Al Nahyan, entire gamut of bilateral relations and regional and international issues of mutual interest.

I also look forward to jointly release the stamp to commemorate the 150th birth anniversary of Mahatma Gandhi along with His Highness the Crown Prince. It will be an honour to receive the ‘Order of Zayed’, the highest civilian decoration conferred by the UAE government, during this visit. I will also formally launch RuPay card to expand the network of cashless transactions abroad.

Frequent high-level interactions between India and UAE testify to our vibrant relations. UAE is our third-largest trade partner and fourth-largest exporter of crude oil for India. The qualitative enhancement of these ties is among one of our foremost foreign policy achievements. The visit would further strengthen our multifaceted bilateral ties with UAE.

I will also be visiting the Kingdom of Bahrain from 24-25, August 2019.  This would be the first ever Prime Ministerial visit from India to the Kingdom. I look forward to discussing with Prime Minister His Royal Highness Prince Shaikh Khalifa bin Salman Al Khalifa, the ways to further boost our bilateral  relations and share views on regional and international issues of mutual interest. I would also be meeting His Majesty the King of Bahrain Shaikh Hamad bin Isa Al Khalifa and other leaders.

I would also take the opportunity to interact with the Indian diaspora. I will be blessed to be present at the formal beginning of the re-development of  the temple of Shreenathji- the oldest in the Gulf region – in the wake of the auspicious festival of Janmashtami. I am confident that this visit would further deepen our relationship across the sectors.