Share
 
Comments
خوش قسمت ہوں کہ میں ، ملک کی خدمت کے لئے وقف، بھارتیہ جنتا پارٹی کا رکن ہوں : وزیر اعظم مودی
یہ ایک فخر کی بات ہے کہ 19 ریاستوں میں ہماری حکومت ہے اور اس سے بھی بڑی فخر کی بات یہ ہے کہ ہم دنیا کی سب سے بڑی پارٹی ہیں : وزیر اعظم مودی
شیوراج جی کی زیر قیات،شیوراج جی کی زیر قیات، مدھیہ پردیش میں بی جے پی حکومت، ریاست کے عوام کی خدمت میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہی ہے: وزیر اعظم مودی
ہمارے لئے، ملک کے 125 کروڑ ہندوستانی ہمارا کنبہ ہیں، ہمارے لئے ملک ہمیشہ سب سے پہلے آتا ہے: وزیر اعظم نریندر مودی
پنڈت دین دیال اپادھیائے کے خیال سے ترغیب حاصل کرکے، ہم نے اپنے آپ کو ملک کی خدمت کرنے کے لئے وقف کر دیا ہے: وزیر اعظم
ہم خوش قسمت ہیں ۔ ہماری شناخت گاندھی جی، لوہیا جی اور پنڈت دین دیال اپادھیائے جی سے ہے کیونکہ ہم اشتراک میں یقین رکھتے ہیں : وزیراعظم
10 سال کانگریس نے لوگوں کو دھوکہ دیا۔ اب وقت آ گیا ہے کہ انہیں منھ توڑ جواب دیا جائے: وزیر اعظم مودی بھوپال میں
ہمارا تصور صاف ہے ۔ ’میرا بوتھ، سب سے مضبوط‘ : وزیر اعظم
مدھیہ پردیش کے عوام کو ترقی کی سیاست اور ووٹ کے لئے سیاست میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہے : وزیر اعظم مودی
ہمارا عزم مسلم خواتین کو خودمختار بنانا ہے۔ ایک طرف ہم ’طلاق ثلاثہ‘ کو ختم کرنے کے لئے کوششیں کر رہے ہیں، لیکن کانگریس اسے ووٹ بینک کا مسئلہ بنا رہی ہے : وزیر اعظم مودی
وزیر اعظم مودی نے مدھیہ پردیش کی ترقی کے لئے کشابھاؤ ٹھاکرے، راج ماتا سندیاکے تعاون کو یاد کیا۔
حزب مخالف جتنی کیچڑ پھینکے گا، کمل (بی جے پی کا نشان) اتنا زیادہ کھلے گا : وزیر اعظم مودی

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج بھوپال، مدھیہ پردیش میں ’کاریہ کرتا مہاکنبھ‘ سے خطاب کیا۔ 5 لاکھ سے زائد پارٹی کارکنان کے مجمع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے پنڈت دین دیال اپادھیائے کو ان کے یوم پیدائش کے موقع پر اور سابق وزیر اعظم آنجہانی جناب اٹل بہاری واجپئی کو یاد کرتے ہوئے اپنی تقریر کا آغاز کیا۔ انہوں نے کہا کہ، ’’ہمیں فخر ہے کہ ہم کارکن کے طور پر بھارتی جنتا پارٹی کی خدمت کرنے کے لئے پیدا ہوئے۔‘‘

’’ یہ ایک فخر کی بات ہے کہ ملک کی 19 ریاستوں میں ہماری حکومت ہے ، تاہم اس سے بھی بڑی فخر کی بات یہ ہے کہ ہم دنیا کی سب سے بڑی پارٹی ہیں : وزیر اعظم مودی ‘‘

وزیر اعظم نے کشابھاؤ ٹھاکرے اور راج ماتا وجے راجے سندیا جی جیسے رہنمایان کے، مدھیہ پردیش میں پارٹی کی موجودہ مضبوط پوزیشن کے لئے پارٹی کی تنظیمی بنیاد کو مضبوط بنانے کے لئے کیے گئے تعاون کو بھی تسلیم کیا ۔ وزیر اعظم نے وزیر اعلیٰ جناب شیوراج سنگھ چوہان کی زیر قیادت مدھیہ پردیش حکومت کی بھی یہ کہتے ہوئے ستائش کی کہ ان کی حکومت مدھیہ پردیش کے عوام کی سماجی خودمختاری کے لئے مسلسل کام کرتی رہی ہے۔

ملک کے لئے اپنے تصور کو بیان کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے ایک مرتبہ پھر اپنی حکومت کے اصول ’’سب کا ساتھ، سب کا وِکاس‘‘ کو دوہرایا۔وزیر اعظم نے یہ کہتے ہوئے بھی اپنے نقطہ نظر اور عزم پر زور دیا کہ، ’’ہم ہندوستان کے 125 کروڑ عوام کو ایک کنبہ مانتے ہیں اور ہمارے لئے ملک ہمیشہ سب سے پہلے آتا ہے۔‘‘

وزیر اعظم نے پارٹی کارکنان سے بی جے پی کے تصور، پیغام اور اس کی حصولیابیوں کو مدھیہ پردیش کے عوام تک پہنچا کر پارٹی کو مضبوط کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے پارٹی کے ہر ایک رکن کو اس کے بوتھ پر بی جے پی کی جیت کو یقینی بنانے کی تلقین کی اور انہیں بوتھ کی سطح پر بی جے پی کی ریاستی تنظیم کو مضبوط بنانے کے لئے ’’میرا بوتھ، سب سے مضبوط‘‘ کا نعرہ دیا۔

وزیر اعظم نے حزب اختلاف، خصوصاً انڈین نیشنل کانگریس کی، ریاست مدھیہ پردیش میں ایک لمبے عرصے تک حکومت کرنے کے باوجود ریاست میں اقتصادی و سماجی ترقی لانے میں ناکامی کے لئے نکتہ چینی کی۔ موصوف نے مدھیہ پردیش کے عوام سے اپیل کی کہ وہ آنے والے ریاستی اور قومی انتخابات میں ’وِکاس (ترقی)‘ کی سیاست اور ووٹ بینک کی سیاست میں سے کسی ایک کا انتخاب کریں۔

وزیر اعظم مودی نے مزید وضاحت کرتےہوئے کہا کہ کس طرح ’طلاق ثلاثہ‘ کے چلن پر دنیا کے کئی مسلم ممالک میں پابندی لگی اور ہندوستان میں اس پر پابندی سے مسلم خواتین کے لئے مساوی حقوق اور وقار کی یقین دہانی میں بہت مدد ملے گی۔ انہوں نے کانگریس کے ذریعہ اس مسئلے پر کھیلی جانے والی خوش کرنے اور ووٹ بینک کی سیاست پر حیرت اور غصے کا اظہار کیا، اور اس بات پر زور دیا کہ ہندوستان جیسے جمہوری ملک میں، تمام خواتین کو، ان کے مذہب سے قطع نظر یکساں حقوق ملنے چاہئیں۔

وزیر اعظم مودی نے اختتامی سیشن میں ، اُن پر اور ان کی حکومت پر لگائے جانے والے بے بنیاد الزامات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ، ’’لوگ ہم پر جتنی چاہیں اتنی کیچڑ اچھال لیں، لیکن انہیں یہ نہیں بھولنا چاہئے کہ جتنا زیادہ وہ ہم پر کیچڑ پھینکیں گے، کمل (کمل کا پھول، جو بی جے پی کا نشان ہے) اتنا زیادہ کھلے گا۔‘‘

بی جےپی کے صدر جناب امت شاہ، مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ جناب شیوراج سنگھ چوہان اور دیگر پارٹی کاریہ کرتا اس تقریب میں موجود تھے۔

 

تقریر کا مکمّل متن پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں.

20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
India's forex kitty increases by $289 mln to $640.40 bln

Media Coverage

India's forex kitty increases by $289 mln to $640.40 bln
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM chairs a comprehensive high level meeting to review the situation relating to Covid-19 & vaccination
November 27, 2021
Share
 
Comments
PM briefed about the new Variant of Concern ‘Omicron’ along with its characteristics, impact in various countries & implications for India
Need to be proactive in light of the new variant: PM
Intensive containment and active surveillance should continue in clusters reporting higher cases: PM
People need to more cautious and take proper precautions like masking & social distancing: PM
PM asks officials to review plans for easing of international travel restrictions in light of the emerging new evidence
Need to increase the second dose coverage: PM
States should to be sensitised on the need to ensure that all those who have got the first dose are given the second dose timely: PM

Today morning PM Narendra Modi chaired a comprehensive meeting which lasted for almost 2 hours to review the public health preparedness & vaccination related situation for Covid-19.

PM was briefed about the global trends on Covid-19 infections and cases. Officials highlighted that countries across the world have experienced multiple COVID-19 surges since the onset of the pandemic. PM also reviewed the national situation relating to Covid-19 cases and test positivity rates.

PM was apprised of the progress in vaccination and the efforts being made under the ‘Har Ghar Dastak’ campaign. PM directed that there is a need to increase the second dose coverage and that states need to be sensitised on the need to ensure that all those who have got the first dose are given the second dose timely. PM was also given details about the sero-positivity in the country from time to time and its implications in public health response.

Officials briefed PM about the new Variant of Concern ‘Omicron’ along with its characteristics and the impact seen in various countries. Its implications for India were also discussed. PM spoke about the need to be proactive in light of the new variant. PM said that in light of the new threat, people need to more cautious and the need to take proper precautions like masking & social distancing. PM highlighted the need for monitoring all international arrivals, their testing as per guidelines, with a specific focus on countries identified ‘at risk’. PM also asked officials to review plans for easing of international travel restrictions in light of the emerging new evidence.

PM was given an overview of the sequencing efforts in the country and the variants circulating in the country. PM directed that genome sequencing samples be collected from international travellers and community as per norms, tested through the network of labs already established under INSACOG and early warning signal identified for Covid-19 management. PM spoke about the need to increase the sequencing efforts and make it more broad-based.

He also directed officials to work closely with state governments to ensure that there is proper awareness at the state and district level. He directed that intensive containment and active surveillance should continue in clusters reporting higher cases and required technical support be provided to states which are reporting higher cases presently. PM also asked that awareness needs to be created about ventilation and air-borne behaviour of the virus.

Officials briefed PM that they are following a facilitative approach to newer pharmaceutical products. PM instructed officials to coordinate with states to ensure that there is adequate buffer stocks of various medicines. He asked officials to work with the states to review the functioning of medical infrastructure including pediatric facilities.

PM asked officials to co-ordinate with states to endure proper functioning of PSA oxygen plants & ventilators.

The meeting was attended by Shri. Rajiv Gauba, Cabinet Secretary, Dr. V.K.Paul, Member (Health), NITI Aayog, Shri. A.K.Bhalla, Home Secretary, Shri. Rajesh Bhushan, Secretary (MoHFW), Secretary (Pharmaceuticals); Dr. Rajesh Gokhale, Secretary (Biotechnology); Dr. Balram Bhargava, DG ICMR; Shri. Vaidya Rajesh Kotecha, Secretary (AYUSH); Shri Durga Shankar Mishra, Secretary (Urban Development); Sh. R.S. Sharma CEO NHA; Prof. K. Vijay Raghavan (Principal Scientific Advisor to Govt. of India) along with other senior officials.