Share
 
Comments
مہا گٹھ بندھن در اصل ذاتی بقا کا اتحاد ہے نہ کہ نظریات پر مبنی حمایت؛ یہ ذاتی مفادات اور خواہشوں کے لئے ہے، عوامی امنگوں اور تمناؤں کے لئے نہیں : وزیر اعظم مودی
ہمارے کاریہ کرتاؤں میں مادر وطن کے لئے جتنا زیادہ سے زیادہ احترام اور وقار ہوگا، وہ اتنے ہی زیادہ عوام الناس کے ساتھ جڑ سکیں گے، اور اتنا ہی غریبوں کے مسائل کو محسوس کرسیں گے۔ اس سے ہماری جیت آسان ہو جائے گی: وزیر اعظم
کانگریس عوام میں جھوٹ پھیلانے کی کوشش کرتی ہے۔ وہ ہمارے ملک کی ہونے والی ترقی کے بارے میں لوگوں کو گمراہ کرنے کا کوئی موقع نہیں چھوڑتی: وزیر اعظم مودی

وزیر اعظم نریندر مودی نے چنئی سینٹرل، چنئی نارتھ، مدورائی، تری چرا پلی اور تری ولور کے بی جے پی کے بوتھ کی سطح کے کارکنان سے ویڈیو کانفرنسگ کے توسط سے گفتگو کی۔ یاد رہے کہ وزیر اعظم مودی اپنی رابطہ کاری کے جزو کی حیثیت سے وقتاً فوقتاً اس قسم کے مذاکرات کرتے رہتے ہیں۔

چنئی سینٹرل کے کاریہ کرتاؤں نے اس موقع پر زیر اعظم مودی سے اپوزیشن پارٹیوں کے ’مہاگٹھ بندھن‘ کے بارے میں سوال کیا تو وزیر اعظم مودی نے جواب دیا کہ ’’متعدد سیاسی لیڈر آج عظیم اتحاد مہا گٹھ بندھن ‘‘ کی باتیں کر ر ہےہیں ۔ اور میں آپ کو بتا دوں کہ یہ اتحاد صرف اور صرف اپنی ذاتی بقا کے لئے ہے نہ کہ نظریاتی حمایت کے لئے۔ یہ اتحاد دراصل طاقت کےلئے ہے، عوام الناس کے لئے نہیں۔ یہ اتحاد ذاتی خواہشات کی تکمیل کے لئے ہے نہ کہ عوامی امنگوں اور آرزؤں کے لئے۔‘‘

وزیر اعظم مودی نے اپنی طویل تقریر میں متعدد ایسے واقعات گنوائے جب کانگریس نے مختلف سیاسی پارٹیوں کے ان کلیدی لیڈروں کو دھوکے دیے جو میری سرکار کے خلاف ناپاک اتحاد کے بارے میں بات نہیں کرنا چاہتے۔

کاریہ کرتاؤں کے ایک اور سوال کے جواب میں وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ انتخابات لیڈروں کے ذریعہ نہیں جیتے جاتےبلکہ ان پارٹی کاریہ کرتاؤں کی مسلسل کوششوں کے ذریعہ جیتے جاتے ہیں جو بی جے پی کی سیاسی تنظیم کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے کاریہ کرتاؤں کو مادرِ وطن کے تئیں جتنا زیادہ سے زیادہ احترام اور افتخار ہوگا، اتناہی وہ عوام الناس سے جڑ جائیں گے؛ ہمارے کاریہ کرتاہماری غریب عوام کے مسائل کے تئیں جتنا زیادہ سے زیادہ حساس ہوں گے، ہماری جیت اتنی یہ آسان ہو جائے گی۔

اس گفتگو کے اختتام پر وزیر اعظم مودی نے مستقبل میں ہندوستان کے شہروں کی نمو اور درپیش چیلنجوں و دستیاب مواقع کا بھی تذکرہ کیا۔ اس سلسلے میں انہوں نے بتایا کہ بی جے پی کی سرکار نے آیوشمان بھارت، سوبھاگیہ یوجنا اور سووَچھ بھارت ابھیان جیسی انقلابی اسکیموں کے ذریعہ کس طرح نئے ہندوستان کا خواب پورا کرنے کی کوشش کی ہے۔

'من کی بات ' کے لئے اپنے مشوروں سے نوازیں.
Modi Govt's #7YearsOfSeva
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
What Narendra Modi’s 20 uninterrupted years in office mean (By Prakash Javadekar)

Media Coverage

What Narendra Modi’s 20 uninterrupted years in office mean (By Prakash Javadekar)
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM Modi's message for SCO-CSTO Outreach Summit on Afghanistan
September 17, 2021
Share
 
Comments

The 21st meeting of the SCO Council of Heads of State was held on 17 September 2021 in Dushanbe in hybrid format.

The meeting was chaired by H.E. Emomali Rahmon, the President of Tajikistan.

Prime Minister Shri Narendra Modi addressed the Summit via video-link. At Dushanbe, India was represented by External Affairs Minister, Dr. S. Jaishankar.

In his address, Prime Minister highlighted the problems caused by growing radicalisation and extremism in the broader SCO region, which runs counter to the history of the region as a bastion of moderate and progressive cultures and values.

He noted that recent developments in Afghanistan could further exacerbate this trend towards extremism.

He suggested that SCO could work on an agenda to promote moderation and scientific and rational thought, which would be especially relevant for the youth of the region.

He also spoke about India's experience of using digital technologies in its development programmes, and offered to share these open-source solutions with other SCO members.

While speaking about the importance of building connectivity in the region, Prime Minister stressed that connectivity projects should be transparent, participatory and consultative, in order to promote mutual trust.

The SCO Summit was followed by an Outreach session on Afghanistan between SCO and the Collective Security Treaty Organisation (CSTO). Prime Minister participated in the outreach session through a video-message.

In the video message, Prime Minister suggested that SCO could develop a code of conduct on 'zero tolerance' towards terrorism in the region, and highlighted the risks of drugs, arms and human traficking from Afghanistan. Noting the humaniatrian crisis in Afghanistan, he reiterated India's solidarity with the Afghan people.