Share
 
Comments

وزیراعظم جناب نریندر مودی نے آج  نے دفاع کے شعبہ میں  مرکزی بجٹ کے التزامات  کے موثر نفاذ سے متعلق ویبنار سے خطاب کیا۔ اپنے خطاب میں وزیراعظم نے کہاکہ اس ویبنار کی اہمیت  میں اس وجہ سے  مزید اضافہ ہوجاتا ہے کہ یہ  بھارت کو دفاع کے شعبہ میں خود کفیل بنانے کے اہم موضوع پر توجہ مرکوز کررہاہے۔

 وزیراعظم نے کہاکہ  ا ٓزادی سے پہلے  سیکڑوں آرڈیننس فیکٹریاں ہوا کرتی تھیں، دونوں عالمی جنگوں میں  بھارت سے بڑے پیمانے پرا سلحہ برآمد کیا گیا لیکن بہت سی وجوہات سے آزادی کے بعد  اس نظام کو جس قدر مضبوط کیا جانا تھا اتنا مضبوط نہیں کیا گیا۔

جناب نریندر مودی نے کہاکہ ان کی حکومت نے  تیجس جنگی طیارہ تیار کرنے کے سلسلے میں  ملک کے انجینئروں اور سائنسدانوں کی صلاحیتوں پر اعتماد کیا اور آج  تیجس آسمان میں شان کے ساتھ پرواز کررہا ہے۔ چند ہفتوں قبل  تیجس کے لئے  18 ہزار کروڑ روپے کا ایک آرڈر کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ 2014 سے حکومت کی کوشش رہی ہے کہ اس شعبہ میں  شفافیت ،اعتماد سازی اور کاروبار کرنےمیں آسانی فراہم کرانے کے ساتھ آگے بڑھیں۔ جناب مودی نے کہاکہ ان کی حکومت نے  لائسنسنگ  کو ختم کرنے، ضابطہ بندی کو ختم کرنے، برامدات کو فروغ دینے، غیر ملکی سرمایہ کاری کے لئے کھلی پالیسی اختیارکرنے وغیرہ کے واسطے اقدامات کئے ہیں۔

 

وزیراعظم نے مزید کہاکہ بھارت  میں دفاع سے متعلق 100 اہم آئٹموں کی ایک فہرست تیار کی ہے جن کو  مقامی صنعتوں کی مدد سے  ملک کے اندر تیار کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ایک ٹائم لائن مقرر کی گئی ہے تاکہ ہماری صنعتیں ان ضرورتوں کو پورا کرنے کے لئے منصوبہ تیار کرسکیں۔

انہوں نے کہاکہ  سرکاری زبان میں یہ ایک منفی فہرست ہے لیکن  خود کفیلی کی زبان میں  یہ ایک مثبت  فہرست ہے۔  یہ ایسی مثبت فہرست ہے جس کی وجہ سے ملک کی مینوفیکچرنگ صلاحیت میں اضافہ ہوگا، یہ ایسی مثبت فہرست ہے جس کی وجہ سے بھارت میں روزگارپیدا ہوں گے، یہ ایسی مثبت فہرست ہے جس کی وجہ سے بھارت کا ا پنی دفاعی ضرورتوں کے لئے بیرونی ممالک پر انحصار کم ہوگا۔

 وزیراعظم نے کہاکہ  دفاع کے  کیپٹل بجٹ میں بھی   گھریلوحصولیابی کے لئے ایک حصہ محفوظ کیا گیا ہے۔ انہوں نے پرائیویٹ سیکٹر سے اپیل کی کہ وہ آگے آئیں اور  دفاعی  ساز وسامان کی ڈیزائننگ اورمینوفیکچرنگ دونوں کی ذمہ داری سنبھالیں تاکہ  عالمی سطح پر  ہندوستان کاجھنڈا بلندی پر لہراتا رہے۔

انہوں نے کہاکہ ایم ایس ایم ای کاکام  پورے مینوفیکچرنگ کے شعبے کے لئے ریڑھ کی ہڈی ہے۔  آج جو اصلاحات کی جارہی ہیں ان سے ایم ایس ایم پی کو زیادہ آزادی ملے گی اور  وسعت کے لئے ان کی حوصلہ افزائی ہوگی۔

وزیراعظم نے کہاکہ آج ملک میں جو دفاعی کوریڈور تیار کئے جارہے ہیں ان سے مقامی صنعت کاروں اور مقامی  مینوفیکچرنگ کو بھی مدد ملے گی۔ آج یہ صورتحال ہے کہ  اپنے دفاعی شعبے میں خود کفیلی کو  ہمیں اپنے’جوانوں اور نوجوانوں‘ دونوں کوبااختیار بنانے کے ذریعہ کے طور پر  دیکھنا ہوگا۔

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن
Core sector growth at three-month high of 7.4% in December: Govt data

Media Coverage

Core sector growth at three-month high of 7.4% in December: Govt data
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to participate in the Krishnaguru Eknaam Akhanda Kirtan for World Peace on 3rd February
February 01, 2023
Share
 
Comments

Prime Minister Shri Narendra Modi will participate in the Krishnaguru Eknaam Akhanda Kirtan for World Peace, being held at Krishnaguru Sevashram at Barpeta, Assam, on 3rd February 2023 at 4:30 PM via video conferencing. Prime Minister will also address the devotees of Krishnaguru Sevashram.

Paramguru Krishnaguru Ishwar established the Krishnaguru Sevashram in the year 1974, at village Nasatra, Barpeta Assam. He is the ninth descendant of Mahavaishnab Manohardeva, who was the follower of the great Vaishnavite saint Shri Shankardeva. Krishnaguru Eknaam Akhanda Kirtan for World Peace is a month-long kirtan being held from 6th January at Krishnaguru Sevashram.