Share
 
Comments
دس ہزاراٹل ٹنکرنگ لیبز؛ 101 اٹل انکیوبیشن مراکز؛ 50 اٹل کمیونٹی اختراعی مراکز قائم کیے جائیں گے
اٹل نیو انڈیا چیلنجز کے ذریعے، 200 اسٹارٹ اپس کی مدد کی جائے گی
مبلغ 2000 کروڑ روپے سے زیادہ کے اخراجات کیے جائیں گے

وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی زیر صدارت مرکزی کابینہ نے، اٹل اختراعی مشن (اے آئی ایم) کو، مارچ 2023 تک جاری رکھنے کی منظوری دے دی ہے۔ اے آئی ایم ملک میں اختراعی ثقافت اور کاروباری ماحولیاتی نظام کی تشکیل کے اپنے مطلوبہ ہدف پر کام کرے گا۔ اے آئی ایم یہ کام ،اپنے مختلف پروگراموں کے ذریعے کرے گا۔

مطلوبہ اہداف، جو اے آئی ایم کے ذریعے حاصل کیے جائیں گے وہ ہیں:

  • 10000 اٹل ٹنکرنگ لیبز (اے ٹی ایلز) کا قیام،
  • 101 اٹل انکیوبیشن سینٹرز (اے آئی سیز) کا قیام،
  • 50 اٹل کمیونٹی انوویشن سینٹرز (اے سی آئی سیز) کا قیام اور
  • اٹل نیو انڈیا چیلنجز کے ذریعے 200 اسٹارٹ اپس کی معاونت کرنا۔

مبلغ 2000+ کروڑ روپے کے بجٹ جاتی مجموعی اخراجات، قیام اور استفادہ کنندگان کی مدد کے عمل میں خرچ کیے جائیں گے۔
یہ مشن نیتی آیوگ کے تحت قائم کیا گیا ہے۔ 2015 کی بجٹ تقریر میں وزیر خزانہ کے اعلان کے مطابق، اے آئی ایم کے مقاصد اسکول، یونیورسٹی، تحقیقی اداروں، ایم ایس ایم ای اور صنعت کی سطحوں پر مداخلتوں کے ذریعے، ملک بھر میں اختراعی اور کاروباری شخصیت کے ایکو سسٹم کی تشکیل اور اسے فروغ دینا ہے۔ اے آئی ایم نے بنیادی ڈھانچے کی تخلیق اور ادارے کی تعمیر، دونوں پر توجہ مرکوز کی ہے۔ جیسا کہ ان مثالوں سے ظاہر ہے، اے آئی ایم نے قومی اور عالمی سطح پر جدت طرازی کے ایکو سسٹم کو مربوط کرنے پر کام کیا ہے:

  • اے آئی ایم نے مختلف بین الاقوامی ایجنسیوں کے ساتھ دو طرفہ تعلقات استوار کیے ہیں تاکہ جدت اور کاروبار پر ہم آہنگی کے ساتھ تعاون کو فروغ دیا جا سکے۔ ان میں روس کے ساتھ، اے آئی ایم – سیریس اسٹوڈنٹ انوویشن ایکسچینج پروگرام، ڈنمارک کے ساتھ، اے آئی ایم – آئی سی ڈی کے (انوویشن سینٹر ڈنمارک) واٹر چیلنج، اور آسٹریلیا کے ساتھ، آئی اے سی ای (انڈیا آسٹریلین سرکلر) اکانومی ہیکاتھون) شامل ہیں۔
  • اے آئی ایمز نے ان اسپرینیور کی کامیابی میں اہم رول ادا کیا، جو کہ ہندوستان اور سنگاپور کے درمیان منعقد ہونے والی انوویشن اسٹارٹ اپ سربراہ کانفرنس ہے۔
  • اے آئی ایم نے دفاعی اختراعی تنظیم قائم کرنے کے لیے، وزارت دفاع کے ساتھ شراکت کی ہے، جو دفاعی شعبے میں جدت کے ساتھ ساتھ خریداری کو فروغ دے رہی ہے۔

گزشتہ برسوں میں، اے آئی ایم نے ملک بھر میں اختراعی سرگرمیوں کو مربوط کرنے کے لیے ایک ادارہ جاتی طریقہ کار فراہم کرنے کے لیے کام کیا ہے۔ اپنے پروگراموں کے ذریعے، اس نے اسکول کے لاکھوں بچوں میں جدت کا جذبہ اجاگر کیاہے۔ اے آئی ایم کی حمایت یافتہ اسٹارٹ اپس نے سرکاری اور نجی ایکویٹی سرمایہ کاروں سے 2000+ کروڑ روپے اکٹھے کیے ہیں اور کئی ہزار ملازمتیں کے مواقع پیدا کئے ہیں۔ اے آئی ایم نے، قومی مفاد کے موضوعات پر کئی اختراعی چیلنجز کو بھی انجام دیا ہے۔ اے آئی ایم کے پروگرام، ایک ساتھ، 34 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کا احاطہ کرتے ہیں جس کا مقصد اختراعی ماحولیاتی نظام میں زیادہ سے زیادہ شرکت کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ہندوستان کے آبادیاتی ڈیویڈنڈ کا فائدہ اٹھانا ہے۔

مشن کوجاری رکھنے کے لیے کابینہ کی منظوری کے ساتھ ہی، اے آئی ایم ایک جامع اختراعی ماحولیاتی نظام کی تشکیل کے لیے ایک اور ایسی بڑی ذمہ داری بھی قبول کرتا ہے جہاں جدت طرازی اور کاروبار میں مشغول ہونا زیادہ آسان ہو جاتا ہے۔

 

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے، 76ویں یوم آزادی کے موقع پر، وزیراعظم کے خطاب کا متن
India a shining star of global economy: S&P Chief Economist

Media Coverage

India a shining star of global economy: S&P Chief Economist
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
سوشل میڈیا کارنر، 25 اگست 2022
September 25, 2022
Share
 
Comments

Nation tunes in to PM Modi’s Mann Ki Baat.