Share
 
Comments
Budget belied the apprehensions of experts regarding new taxes: PM
Earlier, Budget was just bahi-khata of the vote-bank calculations, now the nation has changed approach: PM
Budget has taken many steps for the empowerment of the farmers: PM
Transformation for AtmaNirbharta is a tribute to all the freedom fighters: PM

نئی دہلی، 04 فروری 2021: وزیراعظم جناب نریندر مودی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ آج اترپردیش کے گورکھپور میں چوری چورا صد سالہ تقریبات کا افتتاح کیا۔ آج کا دن چوری چورا واقعہ کے سو سال پورے ہونے کا دن ہے، جو کہ آزادی کے لیے ملک کی جد وجہد میں ایک کلیدی اور یادگاری واقعہ ہے۔ وزیراعظم نے چوری چورا صد سالہ تقریبات کے اعزاز میں ایک ڈاک ٹکٹ بھی جاری کیا ۔ اترپردیش کی گورنر آنندی بین پٹیل اور وزیر اعلیٰ جناب یوگی آدتیہ ناتھ بھی اس موقع پر موجود تھے۔ بہادر شہیدوں کو سلام پیش کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ چوری چورا میں دی گئی قربانیوں نے ملک کی جد وجہد آزادی کی تحریک کو ایک نئی سمت فراہم کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ یہ واقعہ جو چوری چورا میں سو سال قبل  پیش آیا تھا، صرف لوٹ مار کا وا۱قعہ نہیں تھا بلکہ چوری چورا کا پیغام اس سے کہیں زیادہ بڑا تھا۔ لوٹ مار کن وجوہات کے تحت ہوئی، اس واقعہ کی کیا وجوہات  تھیں، یہ دونوں باتیں یکساں طور پر اہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک نے چوری چورا کی تاریخی جد وجہد آزادی کو ضروری اہمیت دی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج سو سے شروعات ہو کر، چوری چورا کے ساتھ ساتھ ہر گاؤں پورے سال ہونے والے پروگراموں میں نمایاں قربانیوں کو یاد کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسے وقت میں اس طرح کی تقریبات کرنا جب ملک اپنی آزادی کی 75ویں برس میں داخل ہو رہا ہے ، یہ اس سے اور زیادہ نمایاں اور اہم بنائے گا۔ انہوں نے چوری چورا کے شہیدوں کے بارے میں تبادلۂ خیال کی کمی پر اظہار افسوس کیا۔ انہوں نے کہا کہ چاہے شہید تاریخ کے صفحوں میں نمایاں طور پر نہ شامل کیے جائیں، لیکن یہ یاد رکھنے کی بات ہے کہ ان کا خون آزادی کے لیے یقینی طور پر ملک کی مٹی میں ہی جذب ہوا ہے۔

وزیراعظم نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ بابا راگھو داس اور مہامنا مدن موہن مالویہ کی کاوشوں کو یاد کریں ، جن کے باعث آج کے اس خصوصی دن تقریباً 150 مجاہدین آزاد ی کو پھانسی پر لٹکنے سے بچا لیا گیا تھا۔ انہوں نے مسرت ظاہر کی کہ اس مہم میں طلبہ بھی شامل ہیں، جو جد وجہد آزادی کے بہت سے غیر معروف پہلوؤں کے بارے میں  اپنی بیداری میں اضافہ کرسکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت تعلیم نے آزادی کے 75سال کی تکمیل کے موقع پر نوجوان مصنف کو مدعو کیا ہے، جو مجاہدین آزادی پر ایک کتاب تحریر کریں گے، تاکہ جدو جہد آزادی کے غیر معروف ہیرو کی کہانیاں لوگوں کے سامنے آئیں۔ انہوں نے ہمارے مجاہدین آزادی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے طور پر مقامی آرٹس اور ثقافت کو منسلک کرنے کی غرض سے پروگرام منعقدکرنے کے لیے اترپردیش سرکار کی کاوشوں کی ستائش کی۔

وزیراعظم نے کہا کہ غلامی کی زنجیروں کو توڑنے والی اجتماعی قوت بھی ہندوستان کو دنیا کے عظیم ترین طاقت بنائے گی۔ اجتماعیت کی یہ قوت آتم نربھربھارت مہم کی بنیاد ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کے اس دور میں ہندوستان نے 150 سے زیادہ ممالک کے شہریوں کی مدد کے لیے لازمی ادویہ بھیجی ہیں۔ ہندوستان انسانی زندگی کو بچانے کے مد نظر مختلف ممالک کو ویکسین فراہم کر رہا ہے، تاکہ ہمارے مجاہدین آزادی فخر محسوس کریں۔

حالیہ بجٹ کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ بجٹ وبا کے باعث درپیش چیلنجوں کا سامنا کرنے کے لیے کاوشوں کو ایک نئی جلا فراہم کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ نے بہت سے ماہرین کے ان خدشات کو غلط ثابت کردیا ہے کہ عام شہریوں پر نئے ٹیکسوں کا ایک بڑا بوجھ ہوگا۔ حکومت نے ملک کی تیز طر نمو کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ یہ اخراجات سڑکوں، پلوں، ریلوے لائنوں، نئی ریلوں اور بسوں اور مارکیٹ اور منڈیوں کے ساتھ رابطہ جیسے بنیادی ڈھانچے ہوں گے۔ بجٹ نے بہتر تعلیم اور ہمارے نوجوانوں کے لیے بہتر مواقع کی راہ ہموار کی ہے۔ یہ سرگرمیاں لاکھوں نوجوانوں کو روزگار فراہم کریں گی۔ اس سے قبل بجٹ صرف بجٹ اسکیموں کے اعلانوں کے لیے ہوتا تھا، جنہیں کبھی پورا نہیں کیا جاتا تھا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ‘‘بجٹ کو ووٹ بینک گٹھ جوڑ کا بہی کھاتہ(لیجر)’بنادیا گیا تھا البتہ اب قوم نے ایک نیا ورک پلٹا ہے اور اپنی رسائی بدل دی ہے۔’’

وزیراعظم نے کہا کہ عالمی پیمانے پر پھیلی اس وبا کے لیے ہندوستان کے نمٹنے کے بعد ملک اب گاؤں اور چھوٹے شہروں طبی سہولیات کو مستحکم کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ صحت کے شعبہ کے لیے بجٹ میں وسیع پیمانے پر اضافہ کرتے ہوئے رقم مختص کی گئی ہے۔ ضلعی سطح پر بذات خود ٹیسٹنگ کی ایڈوانسڈ سہولیات قائم کی جارہی ہیں۔

کسانوں کو قومی ترقی کی بنیاد قرار دیتے ہوئے جناب مودی نے گزشتہ 6 برسوں میں ان کی بہبود کے لیے کی گئی کوششوں کو اجاگر کیا۔ وبا کی مشکلات کے باوجود کسانوں نے ریکارڈ پیداوار حاصل کی ہے۔ بجٹ میں کسانوں کو بااختیار بنانے کے بہت سے اقدامات کیے گئے ہیں۔ کسانوں کے ذریعہ فصلوں کو فروخت کرنے میں آسانی کی غرض سے ایک ہزار منڈیوں کو ای-نیم کے ساتھ منسلک کیا جارہا ہے۔

دیہی بنیادی ڈھانچے کے فنڈ میں اضافہ کرکے اسے 40 ہزار کروڑ روپے کردیا گیا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ ان اقدامات سے کسان آتم نربھر ہوگا اور زراعت فائدہ مند بن جائے گی۔ سوامتراسکیم اراضی اور رہائشی جائداد کی ملکیت کی دستاویز گاؤں کے لوگوں کو فراہم کرے گی۔ باقاعدہ دستاویزات  سے جائداد کی بہتر قیمت کی راہ ہموار ہوگی اور اس سے خاندانوں کو بینک کے قرضے میں بھی مدد ملے گی  نیز زمین ناجائز قبضہ کرنے والوں سے محفوظ رہے گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ ان تمام اقدامات سے گورکھپور کو بھی فائدہ پہنچے گا۔ جسے ملوں کے بند ہونے، خراب سڑکوں اور خراب اسپتالوں کے مشکلات کا سامنا ہے۔ اب ایک کھاد کی ایک مقامی فیکٹری کو دوبارہ شروع کیا گیا  ہے، جس سے کسانوں اور نوجوانوں کو فائدہ حاصل ہوگا۔ اس شہر میں ایک ایمس بھی بنایا جائے گا۔ طبی کالج ہزارہا بچوں کی جانوں کا تحفظ فراہم کر رہا ہے۔ دیوریا ، کشی نگر، بستی، مہاراج نگر اور سدھارتھ نگر میں نئے میڈیکل کالج ہوں گے۔ وزیراعظم نے یہ بھی واضح کیا کہ اس خطے میں بہتر رابطہ کی صورتحال سامنے آئی ہے، کیونکہ چار لین، چھ لین کی سڑکوں کی تعمیر کی جارہی ہے اور گورکھپور سے چھ شہروں کے لیے پروازیں شروع ہوچکی ہیں۔ کشی نگر میں بننے والا بین الاقوامی ہوائی اڈہ سیاحت میں اضافہ کرے گا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ‘‘آتم نربھر بھارت کی تکمیل کا یہ عمل تمام  مجاہدین آزادی کے لیے خراج عقیدت ہے۔

Click here to read PM's speech

 

20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
Strong GDP growth expected in coming quarters: PHDCCI

Media Coverage

Strong GDP growth expected in coming quarters: PHDCCI
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
Share
 
Comments
Siddharthnagar, Etah, Hardoi, Pratapgarh, Fatehpur, Deoria, Ghazipur, Mirzapur and Jaunpur get new Medical Colleges
“Double Engine Government of Uttar Pradesh is the result of decades of hard work of many Karma Yogis”
“The name of Madhav Prasad Tripathi will continue to give inspiration for public service to the young doctors coming out of the medical college”
“Purvanchal, Uttar Pradesh previously maligned for meningitis will give a new light of health to Eastern India”
“When the government is sensitive, there is a sense of compassion in the mind to understand the pain of the poor, then such accomplishments happen”
“The dedication of so many medical colleges is unprecedented in the state. This did not happen earlier and why it is happening now, there is only one reason - political will and political priority”
“Till 2017 there were only 1900 medical seats in government medical colleges in Uttar Pradesh. The Double Engine government has added more than 1900 seats in just the last four years”

Prime Minister Shri Narendra Modi inaugurated 9 Medical Colleges in Siddharth Nagar, UP. These nine medical colleges are in the districts of Siddharthnagar, Etah, Hardoi, Pratapgarh, Fatehpur, Deoria, Ghazipur, Mirzapur and Jaunpur. Governor and Chief Minister of Uttar Pradesh

Addressing the event, the Prime Minister said the Union Government and the Government of Uttar Pradesh is the result of decades of hard work of many Karma Yogis. He said that Siddharthnagar has also given such a dedicated public representative in the form of Late Madhav Prasad Tripathi ji to the country, whose tireless hard work is helping the nation today. He added that to name the new medical college of Siddharthnagar after Madhav Babu is a true tribute to his service. The name of Madhav Babu will continue to give inspiration for public service to the young doctors coming out of the college, the Prime Minister said.

The Prime Minister remarked that with the creation of 9 new medical colleges, about two and a half thousand new beds have been created, new employment opportunities have been created for more than 5 thousand doctors and paramedics. “With this, a new path of medical education has been opened for hundreds of youth every year”, he said.

The Prime Minister said Purvanchal’s image was spoiled by the previous governments because of the tragic deaths due to meningitis. The same Purvanchal, the same Uttar Pradesh is going to give a new light of health to eastern India, Shri Modi remarked.

The Prime Minister recalled the episode in Parliament where current Uttar Pradesh Chief Minister Yogi Adityanath ji, as the Member of Parliament, had narrated the agony of the poor medical system of the state in the Parliament. The Prime Minister said today, the people of Uttar Pradesh are seeing that Yogi ji, given a chance to serve by the people, has stopped the progress of encephalitis and saved the lives of thousands of children of this area. “When the government is sensitive, there is a sense of compassion in the mind to understand the pain of the poor, then such accomplishments happen”, the Prime Minister remarked.

The Prime Minister said that the dedication of so many medical colleges is unprecedented in the state. “This did not happen earlier and why it is happening now, there is only one reason - political will and political priority” emphasized the Prime Minister. The Prime Minister explained that previous governments in Delhi 7 years ago and the government in Uttar Pradesh 4 years ago, used to work for votes and used to get satisfied just by announcing some dispensary or some small hospital for votes consideration. The Prime Minister said for a long time, either the building was not built, if there was a building, there were no machines, if both were done, there would be no doctors and other staff. The cycle of corruption, which looted thousands of crores of rupees from the poor, used to relentlessly run round the clock.

The Prime Minister said before 2014, the medical seats in our country were less than 90,000. In the last 7 years, 60,000 new medical seats have been added in the country. Here in Uttar Pradesh too, till 2017 there were only 1900 medical seats in government medical colleges. Whereas in the government of double engine, more than 1900 seats have been increased in just the last four years.