Share
 
Comments
8500جن اوشدھی کیندر محض سرکاری اسٹورس نہیں ہیں ،بلکہ وہ تیزی کے ساتھ ایک ایسی جگہ بنتے جارہے ہیں جہاں سے عام آدمی کو سہولتیں فراہم ہوتی ہیں
حکومت نے کینسر ، تپ دق ، ذیابیطس اور امراض قلب جیسی بیماریو ں کے علاج کے لئے ضروری 800سے زیادہ دواؤں کی قیمتو ں کو کنٹرول میں رکھاہے
‘‘ہم نے فیصلہ کیاہے کہ نجی میڈیکل کالجوں میں آدھی سیٹوں کے لئے سرکاری میڈیکل کالجوں کے برابرہی فیس لی جائیگی

وزیراعظم جناب نریندرمودی نے آج ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعہ  جن اوشدھی کیندروں کے مالکان اور اسکیم سے مستفید ہونے والے  افراد کے ساتھ بات چیت کی ۔ جن اوشدھی ہفتہ  یکم مارچ سے ملک بھرمیں منایاجارہاہے تاکہ جینرک دواؤں کے استعمال  اور جن اوشدھی پری یوجنا کے فائدوں کے بارے میں بیداری پیداکی جاسکے ۔ اس تقریب کا موضوع ہے :‘‘ جن اوشدھی –جن اپیوگی ’’۔مرکزی وزیرجناب منسکھ مانڈویا اس موقع پر موجود ہونے والوں میں شامل تھے ۔

پٹنہ سے اس اسکیم سے مستفید ہونے والی محترمہ ہلدا اینتھنی سے بات کرتے ہوئے ، وزیراعظم نے پوچھا کہ انھیں جن اوشدھی دواؤں کے بارے میں کیسے معلوم ہوا۔ انھوں نے ان سے دواؤں کے معیارکے بارے میں بھی دریافت کیا۔ محترمہ ہلدا نے جواب دیا کہ انھیں ان دواؤں سے بہت زیادہ فائدہ ہواہے ۔ کیونکہ  انھیں  1500-1200روپے کے بجائے اب   ماہانہ 250روپے کی دوائیں  ہی خریدنی پڑتی ہیں ۔ انھوں نے کہاکہ وہ اس بچت کوسماجی بھلائی کے کاموں میں خرچ کرتی ہیں ۔ وزیراعظم نے ان کے اس جذبے کی ستائش کی اورامید ظاہرکی کہ جن اوشدھی میں  ان کی ہی طرح عام لوگوں کے  اعتماد  بھی اضافہ میں ہوگا۔ انھوں نے کہاکہ متوسط طبقہ  اس اسکیم کے لئے ایک سرگرم حامی اورمبلغ  ہوسکتاہے ۔ انھوں نے متوسط اور ذیلی متوسط طبقے  اور سماج کے غریب طبقات کی مالی حالت پر پڑنے والے  بیماری کے اثرات کے بارے میں بھی بات کی ۔ انھوں نے سماج کے تعلیم یافتہ طبقے پرزوردیاکہ وہ جن اوشدھی کی فائدوں کے بارے میں بات کریں ۔

بھوبنیشورسے ایک دیویانگ مستفید جناب سریش چندبہیرا سے بات کرتے ہوئے وزیراعظم نے  جن اوشدھی پری یوجنا سے متعلق ان کے تجربات کے بارے میں دریافت کیا۔ وزیراعظم نے یہ بھی معلوم کیاکہ آیا انھیں جن دواؤں کی ضرورت ہے وہ جن اوشدھی اسٹورپردستیاب ہیں ۔ جناب بہیرا نے کہا انھیں تمام دوائیں اسٹورسے مل جاتی ہیں اور انھیں ماہانہ 2500-2000روپے کی بچت ہوجاتی ہے ۔ کیونکہ ان کے والدین کو بھی ان دواؤں کی ضرورت ہوتی ہے ۔ وزیراعظم نے بھگوان جگناتھ سے ان کے اہل خانہ کی شفایابی  اور خیروعافیت کے لئے دعاکی ۔ انھوں نے  جناب بہیرا کے جذبے کی ستائش کی جوکہ ایک دیویانگ ہے اوربہادری کے ساتھ  اپنی لڑائی سے مقابلہ کررہے ہیں ۔

میسورکی محترمہ ببیتاراوسے بات کرتے ہوئے ، وزیراعظم نے ان پرزوردیاکہ وہ سوشل میڈیا کے ذریعہ اس پیغام کو عام کریں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس اسکیم سے مستفید ہوسکیں ۔

سورت کی محترمہ اروشی نیرونے وزیراعظم کو اپنے علاقے میں جن اوشدھی  کو فروغ دینے سے متعلق اپنی کوششوں کے بارے میں بتایا ۔ اور یہ بھی بتایاکہ  کس طرح جن اوشدھی کیندرکے کم قیمت پردستیاب   سنیٹری پیڈس کو وہ انھیں زیادہ سے زیادہ لوگوں کو عطیہ کرسکیں ۔ وزیراعظم نے ایک سرگرم سیاسی کارکن کی حیثیت سے   ان کے  خدمت کے جذبے کی ستائش کی ۔اس کی بدولت عوامی زندگی میں خدمت کے رول کو بڑھاواملے گی ۔ انھوں نے یہ بھی تجویز کیاکہ عالمی وباء کے دوران پی ایم آواس یوجنا کے مستفیدین اور مفت راشن کے مستفیدین  سے رابطہ قائم کیاجاناچاہیئے ۔ تاکہ صحت اورصفائی  ستھرائی کے بارے میں  ان کی بیداری میں اضافہ کیاجاسکے ۔

رائے پورکے جناب شیلیش کھنڈیلوال  نے جن اوشدھی پری یوجنا کے ساتھ اپنے سفرکے بارے میں بات کی ۔ انھوں نے کہاکہ انھیں یہ دیکھ کر اچھالگا کہ دوائیں  بہت کم قیمت پردستیاب ہیں اورانھوں نے اپنے تمام مریضوں تک  یہ بات پہنچادی ہے ۔وزیراعظم نے دوسرے ڈاکٹروں سے بھی کہا کہ وہ عوام کے مابین جن اوشدھی کو فروغ دیں ۔

 اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ جن اوشدھی کیندرجسم کے لئے دواؤں کے مراکز ہیں ، اوروہ  دماغ کی تشویش بھی کم کرتے ہیں اور  عوام کے پیسوں کی بچت کرکے انھیں راحت فراہم کرنے والے مراکز بھی ہیں ۔ وزیراعظم نے اس بات پراطمینان کااظہارکیاکہ یہ فائدے  ملک کے سبھی حصوں اور سماج کے سبھی طبقوں تک پہنچ رہے ہیں ۔انھوں نے ایک روپے قیمت کے سینیٹری نیپکن کی کامیابی کو بھی اجاگرکیا۔ 21کروڑسینیٹری نیپکن کی فروخت سے ظاہرہوتاہے کہ جن اوشدھی کیندروں نے پورے ملک میں خواتین کی زندگی میں آسانی پیداکی ہے ۔

وزیراعظم نے کہاکہ اس وقت ملک میں 8500سے زیادہ جن اوشدھی کیندر کھلے ہوئے ہیں ۔یہ کیندر محض ایک  اورسرکاری اسٹورنہیں بلکہ  عام آدمی کے لئے سہولتیں فراہم کرنے والے کیندربنتے جارہے ہیں ۔انھوں نے کہاکہ حکومت نے کینسر ، تپ دق ، ذیابیطس اورامراض قلب جیسی بیماریوں کے علاج کے لئے ضروری 800سے زیادہ دواؤں کی قیمتوں کو بھی کنٹرول میں رکھا ہے ۔ حکومت نے اس بات کو بھی یقینی بنایاہے کہ جسمانی نشوونماء رک جانے کی بیماری  کے علاج اور گھٹنے کی پیوندکاری  پرآنے والی  لاگت بھی کنٹرول میں رہے ۔ انھوں نے شہریوں کے  طبی دیکھ بھال  کوکفایتی بنانے کے  بارے میں اعداد وشمارپیش کئے ۔ انھوں نے مطلع کیا کہ 50کروڑسے زیادہ لوگ آیوشمان بھارت یوجنا کے دائرے میں ہیں۔تین کروڑسے زیادہ لوگوں نے اس اسکیم سے فائدہ حاصل کیاہے ۔ جس سے غریب اورمتوسط طبقے کے لوگوں  کو 70ہزارکروڑروپے کی بچت ہوئی ہے ۔ پی ایم نیشنل ڈائلیسز پروگرام کی بدولت  550کروڑروپے کی بچت ہوئی ہے ۔گھٹنے کی پیوندکاری اورضروری دواؤں کی قیمت پر کنٹرول کی وجہ سے  13ہزارکروڑروپے کی بچت ہوئی ہے ۔

وزیراعظم نے مطلع کیاکہ چند روزپہلے ہی حکومت نے ایک اوربڑا فیصلہ کیاہے ، جس سے غریب اورمتوسط طبقے کے بچوں کو فائدہ ہوگا۔ انھوں نے بتایا:‘‘ ہم نے فیصلہ کیاہے کہ نجی میڈیکل کالجوں میں  آدھی سیٹوں کے لئے سرکاری میڈیکل کالجوں کے برابرفیس لی جائیگی ۔

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
وزیر اعظم کی پریکشا پہ چرچا پی  ایم مودی کے ساتھ کا متن

Popular Speeches

وزیر اعظم کی پریکشا پہ چرچا پی ایم مودی کے ساتھ کا متن
Agnipath Scheme is a game changer for rural women

Media Coverage

Agnipath Scheme is a game changer for rural women
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
ممبئی میں ایک عمارت کے گرنے سے ہونے والی اموات پر ،وزیراعظم غمزدہ
June 28, 2022
Share
 
Comments
پی ایم این آر ایف سے امداد کا اعلان کیا

وزیراعظم جناب نریندر مودی نے ممبئی میں ایک عمارت  کے گرنے سے ہونے والی اموات پر اپنی تعزیت  کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے  پی ایم این آر ایف سے متاثرین کے لئے امداد کا اعلان کیا۔

 وزیراعظم کے دفتر کی طرف سے ایک ٹوئیٹ میں کہا گیا؛

‘‘ممبئی میں عمارت کے گرنے سے انتہائی  غمزدہ ہوں۔ دکھ کی اس گھڑی میں،  میں  متاثرہ خاندانوں  کے ساتھ ہوں اور  زخمی ہونے والوں  کی  صحت یابی کے لئے دعا گو ہوں۔ مرنے والوں کے لواحقین کو پی ایم این آر ایف  سے  فی کس   2  لاکھ روپے معاوضہ دیا جائے گا۔ زخمیوں کو  50  ہزار روپے  دیئے جائیں گے: وزیراعظم مودی۔’’