‘‘حکومت، سماج اور سنت سماج سب مل کر کاشی کی بازبحالی کے لیے کام کر رہے ہیں’’
‘‘سُوَروید مہامندر ہندوستان کی سماجی اور روحانی طاقت کی ایک جدید علامت ہے’’
‘‘ہندوستان کا فن تعمیر، سائنس، یوگا، روحانی تعمیرات کے ارد گرد ناقابل تصور بلندیوں پر پہنچ گیا’’
‘‘وقت کے پہیے آج پھر گھوم گئے ہیں اور ہندوستان اپنے ورثے پر فخر کر رہا ہے اور غلامی کی ذہنیت سے آزادی کا اعلان کر رہا ہے’’
‘‘اب بنارس کا مطلب ہے - ترقی،عقیدہ ، صفائی اور تبدیلی کے ساتھ جدید سہولیات’’
نو عزائم پیش کیے

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج اتر پردیش کے وارانسی کے اُمراہا میں سُوَروید مہامندر کا افتتاح کیا۔ وزیر اعظم نے مہارشی سدافل دیو جی مہاراج کی مورتی کو خراج عقیدت پیش کیا اور مندر کے احاطے کا چکر بھی لگایا۔

حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ آج ان کے دورہ کاشی کا دوسرا دن ہے اور کاشی میں گزرا ہر لمحہ بے مثال تجربات سے لبریز ہے۔ دو سال قبل اکھل بھارتیہ وہنگم یوگ سنستھان کی سالانہ تقریبات کو یاد کرتے ہوئے، وزیر اعظم نے اس سال کی صد سالہ تقریبات کا حصہ بننے کا موقع ملنے پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ وہنگم یوگ سادھنا نے سو سال پر مشتمل  ناقابل فراموش سفر کو پورا کیا ہے۔ انہوں نے پچھلی صدی میں علم اور یوگ کے تئیں مہارشی سدافل دیو جی کے تعاون پر روشنی ڈالی اور کہا کہ اس کی روحانی  روشنی نے دنیا بھر کے لاکھوں لوگوں کی زندگیوں کو بدل دیا ہے۔ اس مبارک موقع پر وزیر اعظم نے 25,000 کنڈیا سُوَوید گیان مہایگیہ کے انعقاد کا ذکر کیا۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ مہایگیہ کی ہر پیشکش وِکست بھارت کے عزم کو مضبوط کرے گی۔ انہوں نے مہارشی سدافل دیو جی کے سامنے  سر جھکایا اور ان تمام سنتوں کو بھی خراج عقیدت پیش کیا جنہوں نے ان کے وژن کو آگے بڑھایا ہے۔

 

وزیر اعظم نے کاشی کی تبدیلی میں حکومت، سماج اور سنت سماج کی اجتماعی کوششوں کا ذکر کیا۔ وزیر اعظم نے سُوَروید مہامندر کو اس اجتماعی جذبے کا مظہر قرار دیا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ مندر روحانیت کے ساتھ ساتھ شان و شوکت کی ایک دلکش مثال ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ‘‘سُوَروید مہامندر ہندوستان کی سماجی اور روحانی طاقت کی ایک جدید علامت ہے’’۔ مندر کی خوبصورتی اور روحانی قدر وقیمت کو بیان کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اسے ‘یوگ اور گیان کاتیرتھ’ بھی قرار دیا۔

ہندوستان کی معاشی، مادی اور روحانی شان کو یاد کرتے ہوئے وزیراعظم مودی نے کہا کہ ہندوستان نے کبھی بھی مادی ترقی کو جغرافیائی توسیع یا استحصال کا ذریعہ نہیں بننے دیا۔ انہوں نے کہا ‘‘ہم نے روحانی اور انسانی علامتوں کے ذریعے مادی ترقی کی کوشش کی’’۔ انہوں نے وائبرینٹ  کاشی، کونارک مندر، سارناتھ، گیا استوپس، اور نالندہ اور تکشیلا جیسی یونیورسٹیوں کی مثالیں دیں۔ پی ایم مودی نے کہا کہ‘‘ان روحانی تعمیرات کے ارد گرد ہندوستان کا فن تعمیر ناقابل تصور بلندیوں تک پہنچ گیا’’۔

 

وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ یہ،ہندوستان کے عقیدے کی علامتیں تھیں جنہیں غیر ملکی حملہ آوروں نے نشانہ بنایا اور آزادی کے بعد انہیں دوبارہ زندہ کرنے کی ضرورت کا اعادہ کیا۔ وراثت پر فخر نہ کرنے کے پیچھے کارفرما فکری عمل پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ اس طرح کی علامتوں کے احیاء سے ملک کے اتحاد کو تقویت ملے گی۔ انہوں نے سومناتھ مندر کی مثال دی جسے آزادی کے بعد کئی دہائیوں تک نظر انداز کیا گیا۔ جناب مودی نے کہا کہ اس سے ملک احساس کمتری میں چلا گیا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ‘‘وقت کے پہیے آج پھر سے گھوم رہے ہیں اور ہندوستان اپنے ورثے پر فخر کر رہا ہے اور غلامی کی ذہنیت سے آزادی کا اعلان کر رہا ہے’’۔ انہوں نے کہا کہ سومناتھ میں شروع ہونے والا کام اب ایک مکمل مہم میں تبدیل ہو گیا ہے اور انہوں نے کاشی وشوناتھ مندر، مہاکال مہالوک، کیدارناتھ دھام اور بدھا سرکٹ کی مثال دی۔ وزیراعظم مودی نے رام سرکٹ پر جاری کام اور جلد ہی ایودھیا میں رام مندر کے افتتاح کا بھی ذکر کیا۔

 

وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ جب کوئی قوم اپنی سماجی حقیقتوں اور ثقافتی شناخت کو شامل کرتی ہے تو ہمہ گیر ترقی ممکن ہے۔ وزیر اعظم نے کہا، ‘‘اسی وجہ سے، آج ہمارے ‘تیرتھوں’ کی تجدید ہو رہی ہے اور ہندوستان جدید انفرااسٹرکچر کی تخلیق کے نئے ریکارڈ بنا رہا ہے۔ اس نکتے کو واضح کرنے کے لیے انھوں نے کاشی کی مثال لی۔ نیو کاشی وشوناتھ دھام احاطے، جس نے گزشتہ ہفتے دو سال مکمل کیے، نے شہر میں معیشت اور ملازمتوں کو نئی رفتار دی ہے۔ وزیر اعظم نے بہتر کنیکٹیویٹی کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا‘‘اب بنارس کا مطلب ہے - ترقی، عقیدہ ، صفائی اور تبدیلی کے جدید سہولیات ’’۔ انہوں نے سڑکوں کی 4سے6 لیننگ، رنگ روڈ، ریلوے اسٹیشن کے اپ گریڈیشن، نئی ٹرینوں، وقف مال بردار راہداری، گنگا گھاٹوں کی تزئین و آرائش، گنگا کروز، جدید اسپتال، نئی اور جدید ڈیری، گنگا کے کنارے قدرتی کھیتی، تربیتی اداروں اور سانسد روزگار میلوں کے ذریعے نوجوانوں کے لیے نوکریوں کا ذکر کیا۔

 

روحانی اسفار کو مزید قابل رسائی بنانے میں جدید ترقی کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے وزیر اعظم نے سُوَروید مندر سے بہترین رابطے کا ذکر کیا جو وارانسی شہر کے باہر واقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بنارس آنے والے عقیدت مندوں کے لیے ایک بڑے مرکز کے طور پر ابھرے گا، اس طرح آس پاس کے دیہاتوں میں کاروبار اور روزگار کے مواقع کی راہیں کھلیں گی۔

وزیر اعظم نے کہا‘‘وہنگم یوگ سنستھان روحانی بہبود کے لیے اتنا ہی وقف ہے جتنا کہ یہ سماج کی خدمت کے لیے ہے’’۔ مہارشی سدافل دیو جی ایک یوگ بھکت سنت ہونے کے ساتھ ساتھ آزادی کے لیے لڑنے والے جنگجو بھی تھے۔ انہوں نے آزادی کے امرت کال میں اپنے عزائم کو آگے بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا۔ وزیر اعظم نے 9 عزائم/ قررادادیں پیش کیں اور ان پر عمل کرنے پر زور دیا۔ سب سے پہلے، وزیر اعظم نے پانی کی بچت اور پانی کے تحفظ کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کا ذکر کیا، دوسرا - ڈیجیٹل لین دین کے بارے میں بیداری پیدا کرنا، تیسرا - دیہاتوں، علاقوں اور شہروں میں صفائی کی کوششوں کو بڑھانا، چوتھا – ہندوستان میں تیار مصنوعات کو فروغ دینا اور استعمال کرنا، پانچواں - ہندوستان کا سفر کرنا اور  اس کی تلاش کرنا، چھٹا - کسانوں میں قدرتی کھیتی کے بارے میں بیداری میں اضافہ، ساتواں - روزمرہ کی زندگی میں  موٹے اناج یا شری انّیہ کو شامل کرنا، آٹھواں - کھیلوں، فٹنس یا یوگا کو زندگی کا لازمی حصہ بنانا، اور آخر میں ہندوستان سے غربت کو جڑ سے اکھاڑ  پھینکنے کے لیے کم از کم ایک غریب خاندان کی مدد کرنا۔

 

وِکست بھارت سنکلپ یاترا پر روشنی ڈالتے ہوئے، جس میں کل شام اور بعد میں وزیر اعظم کی شرکت دیکھی گئی، وزیر اعظم نے ہر مذہبی رہنما سے اس یاترا کے بارے میں بیداری پھیلانے کی اپیل کی۔ وزیر اعظم نے کہا ‘‘یہ ہمارا ذاتی عزم ہونا چاہیے’’۔

اس موقع پر اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ، مرکزی وزیر جناب نریندر ناتھ پانڈے، سدگرو آچاریہ شری سوتنتردیو جی مہاراج اور سنت پرور شری وگیاندیو جی مہاراج موجود تھے۔

 

 

 

 

 

 

 

تقریر کا مکمل متن پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

Explore More
لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن

Popular Speeches

لال قلعہ کی فصیل سے 77ویں یوم آزادی کے موقع پر وزیراعظم جناب نریندر مودی کے خطاب کا متن
A Leader for a New Era: Modi and the Resurgence of the Indian Dream

Media Coverage

A Leader for a New Era: Modi and the Resurgence of the Indian Dream
NM on the go

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
Srinagar Viksit Bharat Ambassadors Unite for 'Viksit Bharat, Viksit Kashmir'
April 20, 2024

Srinagar hosted a momentous gathering under the banner of the Viksit Bharat Ambassador or VBA 2024. Held at the prestigious Radisson Collection, the event served as a unique platform, bringing together diverse voices and perspectives to foster the nation's collective advancement towards development.

Graced by the esteemed presence of Union Minister Shri Hardeep Singh Puri as the Chief Guest, the event saw the attendance of over 400 distinguished members of society, representing influencers, industry stalwarts, environmentalists, and young minds, including first-time voters. Presidents of Chambers of Commerce, Federation of Kashmir Industrial Corporation, House Boat Owners Association, and members of the writers' association were also present.

The VBA 2024 meetup began with an interesting panel discussion on Viksit Kashmir, which focused on the symbiotic relationship between industry growth and sustainable development. This was followed by an interactive session by Minister Puri, who engaged with the attendees through an engaging presentation. Another event highlight was the live doodle capture by a local artist of the discussions.

Union Minister Hardeep Singh Puri discussed how India has changed in the last decade. He said India is on track to become one of the world's top three economies, surpassing Germany and Japan soon.

 

"The country is set to surpass Germany and Japan and will become the world's third-largest economy by 2027-28," he said.

 

According to official estimates, India's economy is projected to reach a remarkable $40 trillion by 2040. Presently, the economy stands at approximately $3.5 trillion.

He also stressed that India's progress is incomplete without a developed Kashmir.

 

"Bharat cannot be Viksit without a Viksit Kashmir," he said.

Hardeep Puri reflected on India's economic journey, noting that in the 1700s, India contributed a significant 25% to the global GDP. However, as experts documented, this figure gradually dwindled to a mere 2% by 1947.

 

He highlighted how India, once renowned as the 'sone ki chidiya' (golden bird), lost its economic strength during British colonial rule and continued to struggle even after gaining independence, remaining categorized under the 'Fragile Five' until 2014.

 

Puri emphasized that the true shift in India's economic trajectory commenced under the Modi government. Over the past decade, the nation has ascended from among the top 11 economies to ranking among the top 5 globally.

The Union Minister also encouraged everyone to participate in the Viksit Bharat 2047 mission, emphasizing that achieving this dream requires the active engagement and coordination of all "ambassadors" of change.

He highlighted India's rapid progress in metro network development, stating that the operational metro network spans approximately 950 kilometres. He expressed confidence that within the next 2-3 years, India's metro network will expand to become the second-largest globally, surpassing that of the United States.

 

Regarding Jammu and Kashmir, he mentioned that through the Smart project, over 68 projects totalling Rs 6,800 crores were conceptualized, with Rs 3,200 crores worth of projects already completed.

 

He further stated that Jammu and Kashmir possesses more potential than Switzerland but has faced setbacks due to man-made crises. He emphasized the Modi government's dedication to the comprehensive development of the region.

The minister highlighted a significant government policy shift from women-centred to women-led development. Drawing from his extensive experience as a diplomat spanning 39 years, he shared that when a country transitions to women-led development, there is typically a substantial GDP increase of 20-30%. 

He mentioned that the government is actively pursuing this objective, citing examples such as the Awas Yojana, where houses are registered in the names of women household members, and the implementation of 33% reservation for women in elected bodies as part of this broader mission. 

He also provided insight into the transformative impact of the Modi government's welfare policies on people's lives. He highlighted the Ujjwala Yojana, noting that 32 crore individuals have received LPG cylinders, a significant increase from the 14 crore connections in 2014. Additionally, he mentioned the expansion of the gas pipeline network, which has grown from 14,000 km to over 20,000 km over the past ten years.

The Vision of Viksit Bharat: 140 crore dreams, 1 purpose 

The Viksit Bharat Ambassador movement aims to encourage citizens to take responsibility for contributing to India's development. VBA meet-ups and events are being organized in various parts of the country to achieve this goal. These events provide a platform for participants to engage in constructive discussions, exchange ideas, and explore practical strategies for contributing to the movement.

Join the movement on the NaMo App: https://www.narendramodi.in/ViksitBharatAmbassador

The NaMo App: Bridging the Gap

Prime Minister Narendra Modi's app, the NaMo App, is a digital bridge that empowers citizens to participate in the Viksit Bharat Ambassador movement. The NaMo App serves as a one-stop platform for individuals to:

Join the cause: Sign up and become a Viksit Bharat Ambassador and make 10 other people

Amplify Development Stories: Access updates, news, and resources related to the movement.

Create/Join Events: Create and discover local events, meet-ups, and volunteer opportunities.

Connect/Network: Find and interact with like-minded individuals who share the vision of a developed India.

The 'VBA Event' section in the 'Onground Tasks' tab of the 'Volunteer Module' of the NaMo App allows users to stay updated with the ongoing VBA events.