Share
 
Comments
At every level of education, gross enrolment ratio of girls are higher than boys across the country: PM Modi
Lauding the University of Mysore, PM Modi says several Indian greats such as Bharat Ratna Dr. Sarvapalli Radhakrisnan has been provided new inspiration by this esteemed University
PM Modi says, today, in higher education, and in relation to innovation and technology, the participation of girls has increased
In last 5-6 years, we've continuously tried to help our students to go forward in the 21st century by changing our education system: PM Modi on NEP

وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے آج میسور یونیورسٹی کے صد سالہ کانوکیشن 2020 سے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے خطاب کیا۔

اس موقع پر وزیر اعظم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میسور یونیورسٹی ، قدیم ہندوستان کے عظیم نظام تعلیم ، آئندہ ہندوستان کی امنگوں اور صلاحیتوں کا مرکز ہے اور اس نے "راج رشی" نلوادی کرشناراجا وڈیار اور ایم ویس واریا جی کے وژن کو سمجھا ہے۔

انہوں نے  بھارت  رتن ڈاکٹر سروپلی رادھا کرشنن جی جیسے  عظیم  شخص کا حوالہ دیا ۔جو  اس  یونیورسٹی میں پڑھاتے تھے۔

وزیر اعظم نے طلباء کو تعلیم کے ذریعے حاصل کردہ اپنے علم کو ان کی حقیقی زندگی کے مختلف مراحل پر استعمال کرنے کی تاکید کی۔ انہوں نے حقیقی زندگی کو ایک عظیم یونیورسٹی قرار دیا جو  مختلف طریقوں سے تعلیم دیتی ہے۔

وزیر اعظم نے عظیم کنڑ مصنف اور مفکر گورو رو راماسوامی آئینگر جی کے یہ  الفاظ نقل کئے کہ "تعلیم زندگی کے مشکل اوقات میں روشنی ڈالتی ہے"۔

انہوں نے کہا کہ مستقل کوششیں کی جارہی ہیں تاکہ ہندوستان کا تعلیمی نظام 21 ویں صدی کی ضروریات کو پورا کرے جہاں  بنیادی ڈھانچہ تخلیق اور ساختی اصلاحات پر خصوصی توجہ دی  جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو  اعلی تعلیم کا  عالمی مرکز بنانے اور اپنے نوجوانوں کو مسابقتی بنانے کے لئے ، معیار اور مقدار کی سطح پر کوششیں کی گئیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ  آزادی کے اتنے سال گزرنے کے بعد بھی ، 2014 میں ملک میں صرف 16 آئی آئی ٹی تھے۔ پچھلے 6 سالوں میں ، اوسطاً ہر سال ایک نیاآئی آئی ٹی  کھولا گیا ہے۔ ان میں سے ایک کرناٹک ، دھارواڈ میں بھی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 2014 تک ملک میں صرف 9 آئی  آئی ٹی ، 13 آئی آئی ایم اور 7 ایمس تھے۔ جبکہ اس کے بعد کے 5 سالوں میں ، 16 آئی آئی  ٹی ، 7 آئی آئی ایم اور 8 ایمس یا تو قائم ہوچکے ہیں یا  ان کے قیام کا عمل جاری ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پچھلے 5 – 6 سالوں میں اعلی تعلیم میں کوششیں صرف نئے ادارے کھولنے تک ہی محدود نہیں ہیں بلکہ ان اداروں میں گورننس اصلاحات پر بھی کام کیا گیا ہے تاکہ صنفی مساوات اور معاشرتی شمولیت کو یقینی بنایا جاسکے۔ ایسے اداروں کو بھی زیادہ خودمختاری دی جارہی ہے تاکہ وہ اپنی ضروریات کے مطابق فیصلے کرسکیں۔

انہوں نے کہا کہ پہلے آئی آئی ایم ایکٹ نے ملک بھر میں آئی آئی ایم کو زیادہ سے زیادہ حقوق دیئے۔ نیشنل میڈیکل کمیشن میڈیکل ایجوکیشن میں مزید شفافیت لانے کے لئے تشکیل دیا گیا ہے۔ ہومیوپیتھی اور دیگر ہندوستانی طبی طریقوں میں اصلاحات لانے کے لئے دو نئے قوانین بھی بنائے جارہے ہیں۔وزیر اعظم نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ ملک میں تعلیم کی ہر سطح پر ، لڑکیوں کا مجموعی اندراج کا تناسب لڑکوں کے مقابلے میں زیادہ ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ نئی قومی تعلیمی پالیسی پورے تعلیم کے شعبے میں بنیادی تبدیلیاں لانے کے تعلق سے ایک نئی راہ ہموار کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ قومی تعلیم پالیسی کی توجہ کثیر جہتی ہے تاکہ نوجوانوں کو لچکدار اور قابل تطہیر نظام تعلیم کے ذریعے مسابقتی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ اسکلنگ ، ریسلنگ اور اپسکلنگ وقت کی سب سے بڑی ضرورت ہے۔

وزیر اعظم نے ملک کے بہترین تعلیمی اداروں میں سے ایک ہونے کے ناطے ، میسور یونیورسٹی سے نئی ابھرتی ہوئی صورتحال کے مطابق جدت طرازی کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے  ادارے پر زور دیا کہ وہ انکیوبیشن سینٹرز ، ٹکنالوجی ڈویلپمنٹ مراکز ، 'انڈسٹری اکیڈمیا  لنکیکیج' اور ' بین انضباطی تحقیق' پر توجہ دیں۔ انہوں نے یونیورسٹی سے درخواست کی کہ وہ عالمی اور عصری امور کے ساتھ مقامی ثقافت ، مقامی آرٹ اور دیگر معاشرتی امور پر تحقیق کو فروغ دیں۔ انہوں نے طلباء پر زور دیا کہ وہ اپنی انفرادی طاقت کی بنیاد پر صلاحیت حاصل کرنے کی کوشش کریں۔

 

 

 

 

 

 

 

Click here to read full text speech

Pariksha Pe Charcha with PM Modi
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
April retail inflation eases to 4.29%; March IIP grows 22.4%: Govt data

Media Coverage

April retail inflation eases to 4.29%; March IIP grows 22.4%: Govt data
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM to release 8th instalment of financial benefit under PM-KISAN on 14th May
May 13, 2021
Share
 
Comments

Prime Minister Shri Narendra Modi will release the 8th instalment of financial benefit under Pradhan Mantri Kisan Samman Nidhi (PM-KISAN) scheme on 14th May at 11 AM via video conferencing. This will enable the transfer of more than Rs. 19,000 crores to more than 9.5 crores beneficiary farmer families. Prime Minister will also interact with farmer beneficiaries during the event. Union Agriculture Minister will also be present on the occasion.

About PM-KISAN

Under the PM-KISAN scheme, a financial benefit of Rs. 6000/- per year is provided to the eligible beneficiary farmer families, payable in three equal 4-monthly installments of Rs.2000/- each. The fund is transferred directly to the bank accounts of the beneficiaries. In this scheme, Samman Rashi of over Rs. 1.15 lakh crores has been transferred to farmer families so far.