Share
 
Comments
2014 میں ملک کے محض 55 فیصد کنبوں میں رسوئی گیس کے کنکشن تھے لیکن اب یہ تعداد بڑھ کر 90 فیصد ہوگئی ہے: وزیر اعظم
گذشتہ ساڑھے چار برسوں کے دوران مرکز کی قومی جمہوری اتحاد سرکار نے ہندوستان میں حکمرانی اور انتظامیہ کے طریقوں میں زبردست تبدیلی پیدا کر دی ہے: وزیر اعظم مودی
خواہ کانگریس ہو یا کمیونسٹ، یہ لوگ کسی ادارے کا احترام نہیں کرتے۔ ان کے لئے، مسلح افواج ہو، پولیس ہو سی بی آئی ہو یا سی اے جی، یہ سب غلط ہیں، بس یہی صحیح ہیں: وزیر اعظم

وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے دورۂ کیرلا کے موقع پر ریاست کے شہر تھریسور میں ایک زبردست عوامی جلسے سے خطاب کیا۔ اپنے اس سفر کیرل کے دوران وزیر اعظم نے حال ہی میں توسیع شدہ کوچی ریفائنری اور پیٹرو کیمکلس شعبے کے متعدد دیگر بنیادی پروجیکٹس ملک کی عوام کے نام وقف کیے۔

ملک میں توانائی کی بڑھتی ہوئی مانگ اور ان چیلنجوں کے سدباب کے لئے سرکار کے ذریعہ کیے جانے والے اقدامات بیان کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اجوولا یوجنا جیسی اسکیمیں بیان کیں، جن کے تحت زبردست پیمانے پر عوام کو گیس سلینڈر تقسیم کیے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’ہندوستان میں توانائی کی ضرورت میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔یہی وجہ ہے کہ ہم نے ملک میں تیل و گیس ڈھانچہ جاتی سہولیات کے فروغ کے کام تیز رفتاری سے کرنے شروع کر دیے ہیں۔‘‘

اس موقع پر وزیر اعظم نے مختلف شعبوں میں ہندوستان کی نمو کے امکانات میں اضافہ کرنے والی اپنی سرکار کی حکمرانی پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا، ’’گذشتہ ساڑھے چار برس کی مدت کے دوران مرکز کی این ڈی اے حکومت نے ہندوستان میں حکمرانی اور انتظام کے طریقے اور طرز تبدیل کر دیے ہیں۔ آج ہندوستان دنیا میں سب سے تیزی سے ترقی کرنے والا ملک بن گیا ہے۔ پانچ برس قبل دنیا ہندوستان سے دستبردار ہوگئی تھی، لیکن آج پوری دنیا یہاں آنا چاہتی ہے اور یہاں سرمایہ کرنا چاہتی ہے۔ ہمارے تصورت میں بہتر تبدیلی پیدا ہوئی ہے جس کے نتیجے میں ہماری کارگزاری میں بہتری پیدا ہو گئی ہے۔‘‘

کیر ل میں برسراقتدار کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (ایم) کی سرکار پر طنز کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ کیرل کی سرکار عوام کی ثقافتی اقدار کا قطعی احترام نہیں کرتی۔ انہوں نے کہا’’سبری مالا مندر کے معاملے پر پورے ملک کی توجہ مرکوز ہو گئی ہے۔ ملک کے لوگ دیکھ رہے ہیں کہ کس طرح کیرل کی کمیونسٹ سرکار کیرل کی ثقافت کی بے حرمتی کر رہی ہے۔ میری سمجھ میں نہیں آتا کہ آخر کمیونسٹ کیوں صدیو کے وقت کی کسوٹی پر کھری اترنے والی ہماری ثقافت اور ہماری تہذیب کی بے وقعتی کر رہے ہیں۔ ‘‘

اس موقع پر وزیر اعظم نے آئندہ لوک سبھا انتخابات کے لئے بی جے پی کی زیر قیادت سرکار کے خلاف اپوزیشن پارٹیوں کے ’مہا گٹھ بندھن‘ پر بھی اظہار خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ میری سمجھ میں نہیں آتا کہ جب ملک کی ترقی ترقی کا مثبت اور تعمیری ایجنڈا سامنے آتا ہے تو میرے اپوزیشن کے دوست دیوالیہ ہو جاتے ہیں۔ وہ تو بس مودی سے نفرت کرتے ہیں۔ ان کا دن برا بھلا کہنے سے شروع ہوتا ہے اور مودی کو برا بھلا کہنے کے ساتھ ہی ان کا دن تمام ہوتا ہے۔ میں ان سے کہنا چاہتا ہوں کہ آپ مجھے جس قدر بھی گالیاں دینا چاہیں، دے لیں لیکن ہندوستان کی ترقی کے راستے نہ روکیں۔مجھے جتنی بھی گالیاں دے لیں لیکن ہمارے ملک کو برا نہ کہیں۔‘‘

وزیر اعظم نے حال ہی میں اپوزیشن پارٹیوں بالخصوص کانگریس کے ذریعہ الیکشن کمیشن آف انڈیا پر کیے جانے والے شکوک و شبہات پر تنقید کرتے ہوئے جناب مودی نے کہا ’’پورے ملک نے دیکھا کہ کس طرح لندن کی ایک پریس کانفرنس میں ہندوستان کی جمہوری قدروں پر سوالات کھڑے کیے گئے، اور اس پریس کانفرنس میں کسے دیکھا گیا، وہ ایک کانگریس کے بڑے لیڈر تھے۔ کیا یہی ہمارے اداروں اور جمہوریت کے لئے آپ کا عزت و احترام ہے؟ کیا ہماری سیاست یہاں تک آ چکی ہے کہ آپ ہندوستانی عوام کے فیصلے کی بے حرمتی کرنے کے لئے بیرونی ملکوں کی سرزمین کو استعمال کرنے سے گریز نہیں کریں گے؟‘‘

اس زبردست عوامی جلسے میں وزیر اعظم کی طویل تقریر اسرو کے سابق سائنسداں نمبی نرائن کو حال ہی میں سرکار کے ذریعہ پدم اعزاز سے نوازے جانے پر تمام ہوئی۔ انہوں نے کہا ’’ہمارے لئے یہ بات انتہائی باعث افتخار ہے کہ ہمیں جناب نمبی نرائنن کو پدم ایوارڈ پیش کرنے کا موقع حاصل ہوا۔ ہم ہندوستان کو طاقت ور بنانے والے ہر شخص کی اہمیت تسلیم کرتے ہیں۔‘‘

وزیر اعظم نے اس موقع پر اپنے حامیوں اور ملک کے عوام کو یہ یقین دہانی بھی کرائی کہ وہ جب تک برسراقتدار رہیں گے، بدعنوانی کی قطعی اجازت نہیں دی گے، انہوں نے کیرل کے اپنے حامیوں سے زور دے کر کہا کہ وہ مل جل کر ایک نئے اور مثبت ہندوستان کی تعمیر کے لئے کیرل کی ثقافت کی حفاظت کریں۔

 

20 تصاویر سیوا اور سمرپن کے 20 برسوں کو بیاں کر رہی ہیں۔
Explore More
It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi

Popular Speeches

It is now time to leave the 'Chalta Hai' attitude & think of 'Badal Sakta Hai': PM Modi
Reading the letter from PM Modi para-swimmer and author of “Swimming Against the Tide” Madhavi Latha Prathigudupu, gets emotional

Media Coverage

Reading the letter from PM Modi para-swimmer and author of “Swimming Against the Tide” Madhavi Latha Prathigudupu, gets emotional
...

Nm on the go

Always be the first to hear from the PM. Get the App Now!
...
PM expresses grief over the tragedy due to fire in Kullu, Himachal Pradesh
October 27, 2021
Share
 
Comments

The Prime Minister, Shri Narendra Modi has expressed deep grief for the families affected due to the fire tragedy in Kullu, Himachal Pradesh. The Prime Minister has also said that the state government and local administration are engaged in relief and rescue work with full readiness.

In a tweet, the Prime Minister said;

"हिमाचल प्रदेश के कुल्लू में हुआ अग्निकांड अत्यंत दुखद है। ऐतिहासिक मलाणा गांव में हुई इस त्रासदी के सभी पीड़ित परिवारों के प्रति मैं अपनी संवेदना व्यक्त करता हूं। राज्य सरकार और स्थानीय प्रशासन राहत और बचाव के काम में पूरी तत्परता से जुटे हैं।"